ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں و کشمیر : سرکاری اسکول کے ان دو ٹیچروں نے اٹھایا انوکھا قدم ، ہر طرف ہورہی جم کر تعریف

اسکول کے ٹیچر نظیر احمد نے نیوز 18 اردو کو بتایا کہ اس قدم کا فائدہ یہ ہوا کہ لوگوں نے اپنے بچوں کو سرکاری اسکول میں داخل کرانا شروع کردیا ۔

  • Share this:
جموں و کشمیر : سرکاری اسکول کے ان دو ٹیچروں نے اٹھایا انوکھا قدم ، ہر طرف ہورہی جم کر تعریف
جموں و کشمیر : سرکاری اسکول کے ان دو ٹیچروں نے اٹھایا انوکھا قدم ، ہر طرف ہورہی جم کر تعریف

بارہمولہ  : سرکاری اساتذہ کم سے کم وسائل میں بھی اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کرنے کی قابلیت رکھتے ہیں ۔ عوام کے ایک بہت بڑے طبقہ کی یہ شکایت ہے کہ سرکاری اساتذہ اپنے بچوں کا داخلہ سرکاری اسکولوں میں کیوں نہیں کرا رہے ہیں تو اسی شکایت کو ختم کرنے کی غرض سے ضلع بارہمولہ کے زون کنزر کے گورنمنٹ پرائمری اسکول پُہلی بنی میں تعینات دو اساتذہ نے ایک انوکھی پہل شروع کرتے ہوئے اپنے بچوں کا داخلہ سرکاری اسکول میں کرایا ۔ تاکہ دوسرے بچے اور ان کے والدین بھی متاثر ہوکر سرکاری اسکول میں ہی اپنے بچوں کو داخلہ کرائیں ۔


اس پہل سے گورنمنٹ پرائمری اسکول پُہلی بنی کے اساتذہ کو سود مند نتائج بھی ملنے لگے ہیں ۔ یعنی متعلقہ علاقہ کے بیشتر لوگوں نے اپنے بچوں کو اسی اسکول میں داخل کرایا ہے ۔ ساتھ ہی بہت سے والدین نے پرائیویٹ اسکولوں سے نکال کر اپنے بچوں کا سرکاری اسکول میں اندراج کراویا ۔ اس وقت اس اسکول میں پچاس سے زیاد بچے زیر تعلیم ہیں ۔


اسکول کے ٹیچر نظیر احمد نے نیوز 18 اردو کو بتایا کہ اس قدم کا فائدہ یہ ہوا کہ لوگوں نے اپنے بچوں کو سرکاری اسکول میں داخل کرانا شروع کردیا ۔ کسی بھی ملک کی کامیابی اور ترقی کا دارومدار اس ملک کے تعلیمی نظام پر منحصر ہوتا ہے۔ تعلیمی نظام جتنا مظبوط ہوگا ، ترقی کی راہیں اتنی ہی روشن ہوں گی ۔ جب ڈاکٹر، ٹیچر ، انجینئر، زونل ایجوکیشن افسر اور چیف ایجوکیشن افسر کے بچے بھی سرکاری اسکولوں کا حصہ بنیں گے ، تو ان تمام عہدیداروں کو سرکاری اسکولوں کی فکر ہو گی ۔ اس ضمن میں سرکار کو چاہئے کہ باضابطہ ایک حکم نامہ جاری کرے ، جس میں ہر سرکاری ملازم کے لئے یہ لازمی ہو کہ وہ اپنے بچوں کا داخلہ سرکاری اسکولوں میں کرائیں ۔


ادھر مختلف والدین کا کہنا ہے کہ جب انہوں نے دیکھا کہ یہاں کے اساتذہ نے اپنے بچوں کا سرکاری اسکول میں داخل کرایا تو انہوں نے بھی اپنے بچوں کا داخلہ سرکاری اسکول میں کرایا ۔ وہیں بچوں نے نیوز 18 اردو کو بتایا کہ وہ کافی خوش ہیں کہ انہیں ایسے ٹیچرس تعلیم سے آراستہ کرتے ہیں ۔ گورنمنٹ پرائمری اسکول پہلی بنی کے اساتذہ نے اس اسکول کو مثالی اسکول بنانے کی ٹھان لی ۔ اسکول ڈیکوریشن اور رنگ روغن سے سجا ہوا  ہے۔ اسکول کے سامنے پھولوں کے پودے اور جنگلی درخت بھی لگائے گئے ہیں ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Mar 21, 2021 10:16 PM IST