உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    محبوبہ مفتی کا مرکز پر نشانہ ، سردار خالصتانی، ہم پاکستانی ، صرف بی جے پی والے ہندوستانی!

    محبوبہ مفتی مرکز پر نشانہ ، سردار خالصتانی، ہم پاکستانی ، صرف بی جے پی والے ہندوستانی! ۔ فائل فوٹو ۔

    محبوبہ مفتی مرکز پر نشانہ ، سردار خالصتانی، ہم پاکستانی ، صرف بی جے پی والے ہندوستانی! ۔ فائل فوٹو ۔

    محبوبہ مفتی نے کہا کہ دہلی میں بیٹھے ہوئے لوگوں نے جموں و کشمیر کو لیب بنا دیا ہے اور وہ یہاں پر مسلسل تجربے کررہے ہیں ۔ نہرو ، واجپئی جیسے لیڈروں کے پاس جموں و کشمیر کے لئے وزن تھا ، لیکن یہ سرکار صرف لوگوں کو ہندو اور مسلم میں تقسیم کررہی ہے ۔ سردار اب خالصتانی ہوگئے ہیں ، ہم لوگ پاکستانی ہیں اور صرف بی جے پی ہی ہندوستانی ہے ۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Share this:
      نئی دہلی : جموں و کشمیر کی سابق وزیر اعلی اور پی ڈی پی لیڈر محبوبہ مفتی ایک مرتبہ پھر مرکزی حکومت پر جم کر برسی ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ دہلی میں بیٹھے ہوئے لوگوں نے جموں و کشمیر کو لیب بنا دیا ہے اور وہ یہاں پر مسلسل تجربے کررہے ہیں ۔ نہرو ، واجپئی جیسے لیڈروں کے پاس جموں و کشمیر کے لئے وزن تھا ، لیکن یہ سرکار صرف لوگوں کو ہندو اور مسلم میں تقسیم کررہی ہے ۔ سردار اب خالصتانی ہوگئے ہیں ، ہم لوگ پاکستانی ہیں اور صرف بی جے پی ہی ہندوستانی ہے ۔

      انہوں نے کہا کہ حد بندی کا عمل جلد بازی میں کیا جارہا ہے ۔ وہ صرف نام بدل رہے ہیں ، لیکن صرف نام بدلنے سے بچوں کو روزگار نہیں ملے گا ۔ وہ ( مرکز) طالبان اور افغانستان کے بارے میں باتیں کرتے ہیں ، لیکن کسانوں اور بے روزگاری کے بارے میں نہیں سوچ رہے ہیں ۔

      اس سے پہلے پی ڈی پی سربراہ محبوبہ مفتی نے اعلان کیا تھا کہ ان کی پارٹی آنے والے جموں و کشمیر اسمبلی انتخابات میں میدان میں اترے گی ۔ ساتھ ہی انہوں نے سابق اتحادی بی جے پی سے کسی بھی طرح کے اتحاد کے امکان کو خارج کردیا ۔ سابق وزیر اعلی نے کہا تھا کہ جموں و کشمیر کے حالات نارمل سے کوسوں دور ہیں ، جس کا ثبوت جنوبی کشمیر کے کولگام ضلع میں جمعہ کو ہوئے دوہرے حملے ہیں ، جن میں ایک پولیس اہلکار اور بیرونی ریاست کے مزدور کی موت ہوگئی تھی ۔

      پارٹی کے ایک پروگرام میں محبوبہ مفتی نے کہا تھا کہ پی ڈی پی الیکشن لڑے گی ۔ جہاں تک اتحاد کا سوال ہے تو ابھی کچھ کہنا جلد بازی ہوگا ، لیکن ایک بات یقینی طور پر واضح ہے کہ ہم اس پارٹی ( بی جے پی ) کے ساتھ اتحاد نہیں کریں گے ۔

      غور طلب ہے کہ بی جے پی نے سال 2018 میں پی ڈی پی زیر قیادت اتحادی سرکار سے تین سال کے بعد حمایت واپس لے لی تھی ۔ محبوبہ مفتی نے ایک مرتبہ پھر واضح کیا کہ وہ الیکشن نہیں لڑیں گی ، کیونکہ ان کا مقصد آرٹیکل 370 کو بحال کرانا ہے ، جس کو پانچ اگست 2019 کو مرکزی حکومت نے ختم کردیا تھا ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: