ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں و کشمیر : سیکورٹی فورسیز کے ساتھ انکاونٹر میں تین دہشت گرد ہلاک ، اسلحہ و گولہ بارود بھی برآمد

Jammu and Kashmir News : پولیس نے اس آپریشن کو ایک اہم کامیابی قرار دیا ہے اور کہا ہے کہ یہ ملی ٹینٹس کئی تخریب کار کاروائیوں میں ملوث تھے ۔ پولیس کی جانب سے جاری ایک بیان کے مطابق ملی ٹینٹوں کو ہتھیار ڈالنے کا موقع دیا گیا ۔ تاہم انہوں نے مشترکہ سرچ پارٹی پر اندھا دھند فائرنگ کردی ، جس کے جوابی فائرنگ سے انکاؤنٹر ہوا ۔

  • Share this:
جموں و کشمیر : سیکورٹی فورسیز کے ساتھ انکاونٹر میں تین دہشت گرد ہلاک ، اسلحہ و گولہ بارود بھی برآمد
جموں و کشمیر : سیکورٹی فورسیز کے ساتھ انکاونٹر میں تین دہشت گرد ہلاک ، اسلحہ و گولہ بارود بھی برآمد

جموں و کشمیر: جنوبی کشمیر کے ضلع اننت ناگ کے وائلو کوکرناگ علاقے میں پولیس اور فورسز کے ساتھ انکاؤنٹر میں 3 ملی ٹینٹ ہلاک ہوگئے ۔  پولیس کے مطابق انکاؤنٹر میں مارا گیا عبید نامی ملی ٹینٹ سرینگر نوگام میں یکم اپریل کو پولیس پر حملے اور اس حملے میں ایک پولیس کانسٹیبل کی شہادت میں ملوث تھا ۔ تفصیلات کے مطابق منگل کی صبح جموں و کشمیر پولیس اور فوج کی 19 راشٹریہ رایفلز نے وائلو کوکرناگ میں ملی ٹینٹوں کی موجودگی کی ایک مصدقہ اطلاع کی بنا پر کارڈن اینڈ سرچ آپریشن کا آغاز کیا ۔ اس دوران علاقہ میں موجود ملی ٹینٹوں نے سیکورٹی فورسز پر فائرنگ کی اور فورسز و پولیس کی جوابی کارروائی کے بعد انکاؤنٹر شروع ہوا ، جو کافی دیر تک چلا ۔ اس دوران پورے علاقہ کا محاصرہ کیا گیا اور ملی ٹینٹوں کے فرار ہونے کی تمام کوششوں کو بے سود بنا دیا گیا ۔ اس انکاؤنٹر میں لشکر طیبہ سے وابستہ 3 ملی ٹینٹوں کو مار گرایا گیا ۔


ادھر پولیس نے اس آپریشن کو ایک اہم کامیابی قرار دیا ہے اور کہا ہے کہ یہ ملی ٹینٹس کئی تخریب کار کاروائیوں میں ملوث تھے ۔ پولیس کی جانب سے جاری ایک بیان کے مطابق ملی ٹینٹوں کو ہتھیار ڈالنے کا موقع دیا گیا ۔ تاہم انہوں نے مشترکہ سرچ پارٹی پر اندھا دھند فائرنگ کردی ، جس کے جوابی فائرنگ سے انکاؤنٹر ہوا ۔ مشترکہ ٹیموں نے فائرنگ کے تبادلہ میں پھنسے تمام عام شہریوں کو بھی بچایا اور عام لوگوں کی حفاظت کو یقینی بنانے کیلئے اس آپریشن کو کچھ دیر کیلئے روک بھی دیا۔


تمام شہریوں کے تحفظ کو یقینی بنانے کے بعد آپریشن دوبارہ شروع کیا گیا اور ایک رہائشی مکان میں پناہ لئے تینوں ملی ٹینٹوں کو مار گرایا گیا ۔ مارے گئے ملی ٹینٹوں کی لاشیں انکاؤنٹر کے مقام سے برآمد کرلی گئی ہیں اور ان کی شناخت الیاس احمد ڈار عرف سمیر ساکن دنوٹھ پورہ کوکرنگ ، عبید شفیع عرف عبد اللہ ساکن بٹہ مالو سری نگر اور عاقب احمد لون عرف ساحل ساکنہ کولگام کے طور پر ہوئی ہے ۔


پولیس ریکارڈ کے مطابق مارے جانے والے تمام ملی ٹینٹوں کا تعلق  لشکر طیبہ سے ہے ، جو سیکورٹی فورسز اور سیکورٹی اداروں پر حملوں سمیت دہشت گردی کی متعدد واردات میں ملوث  تھے ۔ پولیس کے مطابق مارے گئے ملی ٹینٹوں میں سے عبید شفیع رواں برس یکم اپریل کو نوگام سرینگر کے علاقہ اریباغ پر حملہ کرنے میں ملوث ملی ٹینٹ گروہ کا حصہ تھا ، جس میں ایک کانسٹیبل رمیز احمد شہید ہوگئے تھے ۔

انکاؤنٹر کے مقام سے اسلحہ و گولہ بارود جن میں ایک ایک کے 47 رائفل ، 02 پستول اور دھمکی آمیز مواد بھی برآمد کیا گیا ہے ۔ برآمد ہونے والے تمام سامان کو مزید تفتیش اور دہشت گردی کے دیگر جرائم میں ملوث ہونے کی تحقیقات کے لئے کیس ریکارڈ میں لیا گیا ہے ۔

آئی جی پی کشمیر وجے کمار نے پولیس اور سیکورٹی فورسز کو بغیر کسی  نقصان کے کامیاب آپریشن کرنے پر مبارکباد پیش کی ہے ۔ آئی جی پی کشمیر نے گمراہ نوجوانوں کے والدین سے بھی اپیل کی ہے کہ وہ اپنے بچوں کو دوبارہ قومی دھارے میں لانے میں پولیس کی مدد کریں ۔ پولیس کے مطابق مارے جانے والے ملی ٹینٹوں  کی آخری رسومات قانونی کارروائیاں پوری کرنے کے بعد ادا کی جائیں گی اور مارے گئے ملی ٹینٹوں کے قریبی کنبہ کے افراد کو آخری رسوم میں شرکت کی اجازت ہوگی ۔

اس سلسلے میں پولیس نے قانون کی متعلقہ دفعات کے تحت مقدمہ درج کرلیا ہے اور تفتیش شروع کردی گئی ہے ۔ لوگوں سے درخواست کی گئی ہے کہ جب تک واردات والے علاقہ کو مکمل طور پر سینیٹائز نہیں کیا جاتا ہے اور تمام دھماکہ خیز مواد کو صاف نہیں کرلیا جاتا ہے ، تب تک علاقہ کی جانب رخ نہ کریں ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: May 11, 2021 09:14 PM IST