உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    J&K News: پولیس نے سرینگر میں تین ملی ٹینٹوں کو مار گرایا، سرپنچ سمیر احمد کے قتل میں تھے ملوث

    Jammu and Kashmir : جموں و کشمیر کے سرینگر میں پولیس نے تین ملی ٹینٹوں کو مار گرایا ہے ۔ پولیس کے مطابق تینوں ملی ٹینٹوں کا تعلق لشکر طیبہ کی ونگ ٹی آر ایف سے بتایا گیا ہے۔ انکاونٹر کے مقام پر آخری اطلاعات ملنے تک تلاشی مہم جاری تھی۔

    Jammu and Kashmir : جموں و کشمیر کے سرینگر میں پولیس نے تین ملی ٹینٹوں کو مار گرایا ہے ۔ پولیس کے مطابق تینوں ملی ٹینٹوں کا تعلق لشکر طیبہ کی ونگ ٹی آر ایف سے بتایا گیا ہے۔ انکاونٹر کے مقام پر آخری اطلاعات ملنے تک تلاشی مہم جاری تھی۔

    Jammu and Kashmir : جموں و کشمیر کے سرینگر میں پولیس نے تین ملی ٹینٹوں کو مار گرایا ہے ۔ پولیس کے مطابق تینوں ملی ٹینٹوں کا تعلق لشکر طیبہ کی ونگ ٹی آر ایف سے بتایا گیا ہے۔ انکاونٹر کے مقام پر آخری اطلاعات ملنے تک تلاشی مہم جاری تھی۔

    • Share this:
    سری نگر : جموں و کشمیر کے سرینگر میں پولیس نے تین ملی ٹینٹوں کو مار گرایا ہے ۔ پولیس کے مطابق تینوں ملی ٹینٹوں کا تعلق لشکر طیبہ کی ونگ ٹی آر ایف سے بتایا گیا ہے۔ انکاونٹر کے مقام پر آخری اطلاعات ملنے تک تلاشی مہم جاری تھی۔ یہ انکاونٹر آج علی الصبح سرینگر کے مضافات میں واقع وانبل نوگام میں شروع ہوا۔ تقریبا دو گھنٹے کی گولی باری کے بعد پہلے ایک ملی ٹینٹ مارا گیا اور تھوڑی دیر بعد دو اور ملی ٹینٹس مارے گئے۔ آئی جی پی کشمیر نے تصدیق کی ہے اور کہا ہے کہ یہ ملی ٹینٹ 9 مارچ کو مارے گئے ایک سرپنچ سمیر احمد کے قتل میں ملوث تھے۔

     

    یہ بھی پڑھئے : بڈگام کی زرکا تنزیل نے شروع کی اپنی ڈیٹرجنٹ یونٹ، ہر طرف ہورہی تعریف


    انکاونٹر کی تفصیل بتاتے ہوئے آئی جی پی کشمیر نے کہا کہ تینوں ملی ٹینٹس مقامی تھے ۔ ان کی شناخت پمپور کے رہنے والے عادل نبی ، شوپیاں کے شاکر تانترے اور کلگام کے یاسر واگے کے طور پر ہوئی ہے ۔ آئی جی پی نے کہا کہ پاکستان کشمیر میں جمہوری عمل اور ترقیاتی کاموں کو غیر مستحکم کرنا چاہتا ہے ، مگر پولیس انہیں معقول جواب دے رہی ہے ۔

     

    یہ بھی پڑھئے : ترمیم کے ساتھ حدبندی کی مسودہ رپورٹ جاری، 21 تک دے سکتے ہیں اعتراضات و تجاویز


    پولیس نے کل رات ملی ٹینٹوں کے ایک مکان میں چھپے ہونے کی اطلاع ملنے کے بعد گھیرا ڈالا اور جوں ہی وہ اس مکان کے نزدیک پہنچے تو گولی باری شروع ہوگئی۔ یہ گولی باری وقفے وقفے سے ہوتی رہی اور بیچ میں بڑے دھماکے بھی سنائی دئے۔

    تاہم ساڑے نو بجے تک تین ملی ٹینٹوں کے مارے جانے کی اطلاع آئی ، جس کی پولیس نے بھی تصدیق کی۔
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: