உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    جموں و کشمیرمیں 5 دسمبر کو snowfall و موسم میں تبدیلی کا امکان، محکمہ موسمیات نے جاری کی ایڈوائزری

    محکمہ موسمیات Meteorology Department کی پیشن گوئی کے ساتھ ہی ڈیویژنل انتظامیہ کی طرف سے سڑکوں سے برف ہٹائے جانے کے لئے تمام عملے کو متحرک کیا گیا ہے۔

    محکمہ موسمیات Meteorology Department کی پیشن گوئی کے ساتھ ہی ڈیویژنل انتظامیہ کی طرف سے سڑکوں سے برف ہٹائے جانے کے لئے تمام عملے کو متحرک کیا گیا ہے۔

    محکمہ موسمیات Meteorology Department کی پیشن گوئی کے ساتھ ہی ڈیویژنل انتظامیہ کی طرف سے سڑکوں سے برف ہٹائے جانے کے لئے تمام عملے کو متحرک کیا گیا ہے۔ چیف انجنئیر میکنکل ڈیویژن کشمیر راشد ڈار کے مطابق محکمے نے تام مشینری کو پندرہ نومبر سے ہی متحرک کر رکھا ہے۔

    • Share this:
    جموں و کشمیر:  جموں و کشمیر jammu and kashmir  میں ہفتے کے روز سے موسم میں تبدیلی آنے کا امکان ہے۔ محکمہ موسمیات کے مطابق چار دسمبر سے مغربی ہوائیں جموں و کشمیر کے موسم پر اثر انداز ہو جائیں گی۔ محکمہ موسمیات کے ڈائیریکٹر سونم لوٹس کا کہنا ہے کہ مغربی ہواؤں کا یہ اثر تین روز تک جاری رہے گا اور اس کا سب سے زیادہ اثر پانچ دسمبر کو دیکھنے کو ملے گا۔ نیوز ایٹین اردو کے ساتھ بات کرتے ہوئے سونم لوٹس نے کہا کہ چار دسمبر کو مطلع ابر آلود رہے گا جبکہ پانچ دسمبر کو یو ٹی میں بارش  Heavy Rain Fall اور برفباری snowfall  ہونے کا امکان ہے اور چھ تاریخ سے موسم میں دوبارہ تبدیلی آسکتی ہے ۔ سونم لوٹس کے مطابق پانچ دسمبر کو کشمیر کے پہاڑی علاقوں میں زیادہ تر مقامات پر رمیانہ درجے کی برفباری ہونے کا امکان ہے جبکہ وادی کے میدانی علاقوں میں ہلکی یعنی دو سے تین انچ تک برفباری ہوسکتی ہے۔
    جموں کے پہاڑی علاقوں مین درمیانہ درجے کی برفباری اور میدانی علاقوں میں پانچ دسمبر کو اوسط سے درمیانہ درجے کی بارش ہونے کا امکان ہے۔  پیش گوئی کے مطابق اگرچہ چار سے چھ دسمبر تک بھاری برفباری کا کوئی امکان نہیں ہے تاہم محکمہ موسمیات نے ایک ایڈوائیزری جاری کی ہے جس میں بتایا گیا ہے کہ برفباری کی وجہ سے سرینگر لہہ، سرینگر جموں اور مغل روڑ پر ٹریفک کی آمد و رفت متاثر ہوسکتی ہے لہذا مسافروں سے کہا گیا ہے کہ وہ ان شاہراوں پر سفر شروع کرنے سے قبل سڑک کی حالت اور موسم سے متعلق جانکاری ضرور حاصل کریں۔

    محکمہ موسمیات کی پیشن گوئی کے ساتھ ہی  ڈیویژنل انتظامیہ کی طرف سے سڑکوں سے برف ہٹائے جانے کے لئے تمام عملے کو متحرک کیا گیا ہے۔ چیف انجنئیر میکنکل ڈیویژن کشمیر  راشد ڈار کے مطابق محکمے نے  تام مشینری کو پندرہ نومبر سے ہی  متحرک کر رکھا ہے۔ نیوز ایٹین اردو کے ساتھ بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ محکمے  کی جانب سے کشمیر وادی  کو تین زوںوں میں بانٹ دیا ہے ۔ انہوں نے   کہا کہ دو سو دس مشینیں جن میں سنو کٹر، سنو ٹریکٹر اور سنو ٹرک شامل ہیں پہلے ہی تیاری کی حالت میں رکھی ہیں جن میں سے  80 مشینیں شمالی زون کے لئے  بارہمولہ میں  دستیاب رکھی گئی ہیں جبکہ وسطی زون کے لئے 56 مشینوں کو سرینگر میں رکھا گیا ہے۔ اسکے ساتھ ساتھ جنوبی زون میں 74 مشینیں  انننت ناگ میں دستیاب رکھی گئی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ  سڑکوں سے بروقت  برف ہٹائے جانے  کے لئے کئی مشینوں کو آج شام تک ہی  وادی کے مختلف علاقوں تک پہنچایا جائے گا ۔ راشد ڈار نے کہا کہ برف ہٹائے جانے سے متعلق کام کو احسن طریقے پر انجام دینے کے لئے پہلے سے قائیم کئے گے کنٹرول رومز کو متحرک کر دیا گیا ہے۔

    دریں اثنا کشمیر وادی میں سردی کی لہر جاری ہے اور کم سے کم درجہ حرارت میں بتدریج گراوٹ دیکھنے کو مل رہی ہے۔ دو اور تین دسمبر کی درمیانی شب اس موسم کی دوسری سرد ترین رات تھی۔ سرینگر میں رات کا کم سے کم درجہ حرارت مفنی دو اعشاریہ چار ڈگری سیلشیس ریکارڈ کیا گیا جو معمول کے درجہ حرارت سے منفی ایک اعشاریہ پانچ ڈگری سیلشیس کم ہے۔ درجہ حرارت میں لگاتار آرہی کمی کے بارے میں محکمہ موسمیات کے ڈائیریکٹر سونم لوٹس نے کہا کہ درجہ حرارت میں ریکارڈ کی جارہی یہ گراوٹ کسی غیر معمولی موسمی صورتحال کی طرف اشارہ نہیں کرتی کیونکہ ماضی میں بھی موسم سرما کے دوران جموں و کشمیر کے کم سے کم درجہ حرارت میں ایسی کمی دیکھنے کو ملی ہے۔
    Published by:Sana Naeem
    First published: