ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں و کشمیر : تین روز سے جاری شوپیاں انکاؤنٹر ختم ، دو ملی ٹینٹوں کو مار گرایا گیا

جنوبی کشمیر کے شوپیاں ضلع میں تین روز سے جاری انکاونٹر ختم ہوگیا ہے ، جس میں مطلوب کمانڈر ولایت حسین سمیت دو ملی ٹینٹوں کو مار گرایا گیا ۔ جبکہ پر تشدد جھڑپوں میں ایک پولیس اہلکار سمیت 5 مظاہرین زخمی ہوگئے ۔

  • Share this:
جموں و کشمیر : تین روز سے جاری شوپیاں انکاؤنٹر ختم ، دو ملی ٹینٹوں کو مار گرایا گیا
جموں و کشمیر : تین روز سے جاری شوپیاں انکاؤنٹر ختم ، دو ملی ٹینٹوں کو مار گرایا گیا

جنوبی کشمیر کے شوپیاں ضلع میں تین روز سے جاری انکاونٹر ختم ہوگیا ہے ، جس میں مطلوب کمانڈر ولایت حسین سمیت دو ملی ٹینٹوں کو مار گرایا گیا ۔ جبکہ پر تشدد جھڑپوں میں ایک پولیس اہلکار سمیت 5 مظاہرین زخمی ہوگئے ۔ پولیس کے مطابق سیکورٹی اہلکاروں نے مشترکہ طور پر سنیچر کی صبح راولپورہ علاقہ کو ملی ٹینٹوں کی موجودگی کی اطلاع ملنے پر محاصرے میں لے کر تلاشی آپریشن شروع کیا اور انکاؤنٹر میں 2 ملی ٹینٹوں کو مار گرایا گیا ، جن میں جیش محمد تنظیم سے وابستہ مطلوب کمانڈر ولایت حسین شامل ہے ۔ اس دوران مقامی نوجوانوں اور پولیس اہلکاروں کے بیچ جھڑپیں بھی ہوئیں ، جن میں ایک پولیس اہلکار سمیت 5 مظاہرین زخمی ہوگئے ، جن میں تین کو سرینگر کے ایس ایم ایچ ایس اسپتال میں علاج معالجہ کے لیے منتقل کردیا گیا ہے ۔


ادھر مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ فوج کی 34 راشٹریہ رائفلز سی آر پی کی 14 بٹالین اور جموں و کشمیر پولیس نے ہفتہ کی صبح 6 بجے راولپورہ علاقے کو سخت ترین محاصرے میں لے کر تلاشی آپریشن شروع کیا ، جو رات تک جاری رہا اور رات کے 8 بجے یعنی 13 گھنٹوں کے محاصرے کے بعد مقامی لوگوں نے گولیوں کی آواز سنی ۔ مقامی لوگوں کے مطابق سنیچر اور اتوار کی درمیانی شب انہوں نے پھر سے گولیوں کی آواز سنی ، جس کے بعد مقامی لوگوں کو ایک مقامی ملی ٹینٹ جہانگیر لون ساکنہ نارہ پورہ شوپیان کی ہلاکت کی خبر ملی ۔ اتوار کے روز ہی ایک ملی ٹینٹ کی ہلاکت کے بعد گاوں میں محاصرہ مزید سخت کردیا گیا اور اس دوران شک کی بنیاد پر سیکورٹی فورسیز نے تین رہائشی مکانوں میں آگ لگادی ۔


اندھیرا شروع ہونے کے ساتھ ہی سیکورٹی اہلکاروں نے تلاشی آپریشن کو اگلی صبح یعنی پیر کے روز تک معطل رکھا اور پیر کی صبح تیسرے روز تلاشی آپریشن پھر سے شروع کیا گیا ۔ اس دوران تقریبا 9 بجے ملی ٹینٹوں اور سیکورٹی اہلکاروں کا ایک بار پھر سے آمنا سامنا ہوا اور تقریبا 10 منٹ تک طرفین میں گولیوں کا شدید تبادلہ جاری رہا ۔


10 منٹ تک جاری اس فائرنگ کے تبادلے کے بعد پھر سے خاموشی چھا گئی اور ملی ٹینٹ کمانڈر ولایت حسین جو اسی علاقہ یعنی راولپورہ کا رہنے والا ہے ، کے مارے جانے کی خبر آگ کی طرح پھیل گئی ۔ تاہم دو ملی ٹینٹوں کی ہلاکت کے بعد بھی تلاشی آپریشن کو جاری رکھا گیا تھا ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Mar 15, 2021 11:29 PM IST