உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    J&K News: سرینگر گرنیڈ حملہ میں عام شہریوں کی ہلاکت کے خلاف مشعل جلوس

    J&K News: سرینگر گرنیڈ حملہ میں عام شہریوں کی ہلاکت کے خلاف مشعل جلوس

    J&K News: سرینگر گرنیڈ حملہ میں عام شہریوں کی ہلاکت کے خلاف مشعل جلوس

    Jammu and Kashmir News : سرینگر میں کل کئے گئے گرنیڈ حملہ میں زخمی 19 سالہ طالبہ رافعہ بھی آج زخموں کہ تاب نہ لاکر چل بسی۔ اس طرح اس حملہ میں مارے گئے افراد کی تعداد 2 ہوگئی۔

    • Share this:
    Jammu and Kashmir News : سرینگر میں کل کئے گئے گرنیڈ حملہ میں زخمی 19 سالہ طالبہ رافعہ بھی آج زخموں کہ تاب نہ لاکر چل بسی۔ اس طرح اس حملہ میں مارے گئے افراد کی تعداد 2 ہوگئی۔ اس حملہ میں دو درجن افراد زخمی ہوئے تھے۔ رافعہ نے حال ہی بارہویں جماعت کا امتحاں اچھے نمبرات سے پاس کیا تھا۔ جب رافعہ کی لاش آج ان کے گھر واقع حضرت بل سرینگر پہنچائی گئی تو پورے علاقے میں صف ماتم بچھ گئی ۔ ہر شخص کی آنکھ نم تھی۔ رافعہ کے والد نذیر احمد آہ و زاری کرتے ہوئے کہہ رہے تھے کہ اب وہ رافعہ کی کتابوں اور ان کے ڈاکٹر بننے کے خواب کا کیا کریں گے۔ رافعہ کی لاش بعد میں امام باڑہ حسن آباد لائی گئی۔

     

    یہ بھی پڑھئے :  کشمیری طالبات کی سوشل میڈیا پر کردار کشی کا معاملہ، عدالت نے دو افراد کی ضمانت کو کیا مسترد


    ادھر گھنٹہ گھر لال چوک میں اس گرنیڈ حملہ کے خلاف مشعل جلوس نکالا گیا۔ احتجاجی افراد کا ایک گروپ پہلے شیر کشمیر پارک کے پاس جمع ہوا جو بعد میں گھنٹہ گھر سرینگر پہنچا اور وہاں مارے گئے افراد کی یاد میں شمعیں روشن کی گئیں۔

     

    یہ بھی پڑھئے : جموں و کشمیر میں ویلیج ڈیفنس کمیٹیوں کو دوبارہ فعال بنانے کا فیصلہ، سیاسی پارٹیوں کا ملاجلا ردعمل


    اس موقع پر کارپوریٹرراج باغ شاہینہ بٹ نے کہا کہ عام انسانوں کا قتل اب برداشت نہیں ہوگا۔ شاہینہ کا کہنا تھا کہ کشمیر میں عام انسانوں کا قتل پاکستان کی ایما پر ملی ٹنٹ کر رہے ہیں۔ احتجاجی افراد نے" آخر کب تک " کے بینر بھی ساتھ رکھے تھے۔

    ایک اور احتجاجی شخص نے بتایا کہ عام لوگوں کی بھیڑ میں گرنیڈ پھینکنے کا مطلب یہی ہے کہ حملہ آور عام لوگوں کا قتل کرنا چاہتے تھے۔
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: