ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

کشمیر میں خواجہ سراؤں کو سخت مشکلات درپیش ، حکومت سے کیا یہ بڑا مطالبہ

Jammu and Kashmir News : خواجہ سراؤں نے اپنی حالت زار بیان کرتے ہوئے حکومت سے اپیل کی کہ ان کو درپیش مسائل و مشکلات ازالہ کیا جائے ۔ تاکہ ان کے یہاں بھی چولہا جل سکے۔

  • Share this:
کشمیر میں خواجہ سراؤں کو سخت مشکلات درپیش ، حکومت سے کیا یہ بڑا مطالبہ
کشمیر میں خواجہ سراؤں کو سخت مشکلات درپیش ، حکومت سے کیا یہ بڑا مطالبہ

سری نگر : کشمیر کے مختلف مقامات سے تعلق رکھنے والے خواجہ سراؤں کو معاشرے میں طرح طرح کی مشکلات درپیش ہیں ۔ ان خواجہ سراؤں کی ظاہری چمک دھمک، چہرے پر میک اپ کی تہہ اور اونچے قہقہے ان کی دکھ بھری زندگی کی اصل حقیقت کو چھپاتی ہے ۔ لیکن معاشرے میں سب سے زیادہ پریشانیاں ان ہی کو درپیش ہے۔ خواجہ سراؤں کی صدر مہک نے نیوز 18 اردو کو بتایا کہ اب تک کسی بھی حکومت نے ان کے حقوق پر کام نہیں کیا اور اگر کسی وقت تحفظات کے حوالے سے کوئی بات کہی بھی گئی تو وہ کاغذات اور اعلانات تک ہی محدود رہی ۔ ان کا مزید کہنا ہے کہ انہیں سماج سے اس طرح الگ تھلگ کردیا گیا ، جیسے وہ سماج کا حصہ ہی نہیں ۔


خواجہ سراؤں نے اپنی حالت زار بیان کرتے ہوئے حکومت سے اپیل کی کہ ان کو درپیش مسائل و مشکلات ازالہ کیا جائے ۔ تاکہ ان کے یہاں بھی چولہا جل سکے۔ خواجہ سراؤں نے سرکار پر الزام لگایا کہ ان کے ساتھ سوتیلا کا سلوک کیا جا رہا ہے۔ نہ کہیں مسائل کی سنوائی ہورہی ہے اور نہ ہی مشکلات کے حل کی خاطر ان کی طرف کوئی دھیان دیا جا رہا ہے ۔


ٹرانسجنڈرخوشی میر نے بھی نیوز 18 اردو کو بتایا کہ انہیں طرح طرح کی مشکلات پیش آرہی ہیں ۔ خواجہ سراؤں کی فلاح کے لیے وادی کی کئی غیر سرکاری تنظیمیں کام کررہی ہیں اور انہیں وقتاً فوقتاً ضروریات زندگی کے سامان فراہم کررہے ہیں ۔ آرفن ان نیڈ آرگنائزیشن بھی ان خواجہ سراؤں کو ضروریات زندگی کے مختلف اشیا تقسیم کرتی ہیں ۔


آرفن ان نیڈ آرگنائزیشن کے منیجنگ ڈائریکٹر ریاض احمد شیخ نے نیوز 18 اردو کے ساتھ بات کرتے ہوئے کہا کہ خواجہ سرا پیدائش سے لے کر موت تک جن مسائل و مشکلات سے گزرتے ہیں ، اس کا اندازہ لگانا ایک عام انسان کے لئے مشکل ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ آرفن ان نیڈ آرگنائزیشن ایسے لوگوں کو امداد پہنچانے کی کوشش کررہے ہیں ۔ کشمیری خواجہ سرا سڑکوں پر لوگوں سے پیسے مانگنے کی بجائے رشتے کروانے یا شادیوں میں ناچنے گانے سے اپنی روٹی کا بندوبست کرتے ہیں ، لیکن گزشتہ تین برس کے دوران اس برادری کا یہ کام بھی بری طرح متاثر ہوچکا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ضرورت اس امر کی ہے کہ خواجہ سراؤں کو درپیش مسائل و مشکلات کے حل کے لیے سرکار کو اقدامات اٹھانے چاہئیں ۔ تاکہ یہ طبقہ بھی اپنی زندگی بہتر طور پر گزار سکے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Jul 11, 2021 10:09 PM IST