ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں وکشمیر: باندی پورہ میں سیکورٹی اہلکاروں نے ہلاک کئے دو مبینہ دہشت گرد، تصادم جاری

Bandipora Encounter: پولیس کو جنگل علاقے میں دہشت گردوں کے چھپے ہونے کی اطلاع ملی تھی۔ تلاشی مہم کے دوران جیسے ہی فوج اور پولیس کی ٹیمیں ہفتہ کی صبح موقع پر پہنچی، تو مبینہ دہشت گردوں نے ان پر گولی باری شروع کردی تھی۔

  • Share this:
جموں وکشمیر: باندی پورہ میں سیکورٹی اہلکاروں نے ہلاک کئے دو مبینہ دہشت گرد، تصادم جاری
جموں وکشمیر: باندی پورہ میں سیکورٹی اہلکاروں نے ہلاک کئے دو مبینہ دہشت گرد

باندی پورہ: جموں وکشمیر کے باندی پورہ کے شوک بابا جنگل علاقے میں سیکورٹی اہلکاروں اور دہشت گردوں کےدرمیان تصادم جاری ہے۔ خبر ہے کہ اس دوران جوانوں نے دو نامعلوم مبینہ دہشت گردوں کو ہلاک کردیا ہے۔ فی الحال پولیس اور اہلکاروں کی کارروائی جاری ہے۔ بتایا جا رہا ہے کہ علاقے میں دو تین مبینہ دہشت گرد چھپے ہوئے ہیں۔


میڈیا رپورٹس میں پولیس ذرائع کے حوالے سے کہا جا رہا ہے کہ آپریشن جمعہ کی دوپہر میں شروع کیا گیا تھا۔ پولیس کو جنگل علاقے میں دہشت گردوں کے پوشیدہ ہونے کی اطلاع ملی تھی۔ تلاشی مہم کے دوران جیسے ہی فوج اور پولیس کی ٹیمیں ہفتہ کی صبح موقع پر پہنچی، تو دہشت گردوں نے ان پر گولہ باری شروع کردی تھی۔


سوپور سے ملی تھی بڑی کامیابی


گزشتہ جمعہ کو ہی سیکورٹی اہلکاروں اور پولیس کو سوپور میں بڑی کامیابی ملی تھی۔ یہاں جوانوں نے دہشت گردانہ تنظیم لشکر طیبہ کے دو دہشت گردوں کو ہلاک کر دیا تھا۔ ان مین سے ایک دہشت گرد کی شناخت فیاض وار کے طور پر ہوئی تھی۔ فیاض وار سیکورٹی اہلکاروں کے جوانوں اور عام لوگوں کے قتل اور حملے کی حادثہ میں شامل تھا۔ کارروائی کے دوران پولیس کو ہتھیار اور دھماکہ خیز مواد بھی برآمد ہوئے تھے۔

زبان کے مطابق، افسر نے کہا تھا کہ تصادم کے دوران ممنوعہ تنظیم لشکر طیبہ کے دو مبینہ دہشت گرد مارے گئے۔ تصادم مقام سے ان کی لاش برآمد ہوگئی ہیں۔ دہشت گردوں کی شناخت لشکر طیبہ کے ٹاپ کمانڈر وار پوڑا کے باشندہ فیاض احمد وار عرف رکنا عرف عمر اور چیرپورا بڈگام کے رہنے والے شاہین احمد میر عرف شاہین مولوی کے طور پر ہوئی ہے۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Jul 24, 2021 11:12 AM IST