உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    جموں وکشمیر: پلوامہ سیکٹر میں سیکورٹی اہلکاروں کے ساتھ تصادم میں دو دہشت گرد ہلاک، آپریشن جاری

    جموں وکشمیر: پلوامہ سیکٹر میں سیکورٹی اہلکاروں کے ساتھ تصادم میں دو دہشت گرد ہلاک

    جموں و کشمیر پولیس کے ایک ترجمان نے بتایا کہ ضلع پلوامہ کے داچھی گام جنگلی علاقے میں ہفتے کی صبح ہونے والے ایک مسلح تصادم کے دوران دو دہشت گردوں کو ہلاک کیا گیا ہے۔

    • Share this:
      سری نگر: جنوبی ضلع پلوامہ کے داچھی گام جنگلی علاقے میں ایک مسلح تصادم کے دوران سیکورٹی فورسز نے دو مبینہ دہشت گردوں کو ہلاک کیا ہے۔ جموں و کشمیر پولیس کے ایک ترجمان نے بتایا کہ ضلع پلوامہ کے داچھی گام جنگلی علاقے میں ہفتے کی صبح ہونے والے ایک مسلح تصادم کے دوران دو دہشت گردوں کو ہلاک کیا گیا ہے۔ ان کا مزید کہنا تھا: 'مہلوک  دہشت گرد کی شناخت معلوم کی جا رہی ہے نیز علاقے میں آپریشن جاری ہے'۔
      سرکاری ذرائع نے بتایا کہ ضلع پلوامہ کے داچھی گام جنگلی علاقے میں دہشت گردوں کی موجودگی سے متعلق خفیہ اطلاع ملنے پر جموں و کشمیر پولیس، فوج کی راشٹریہ رائفلز اور سی آر پی ایف نے ہفتہ کی علی الصبح مذکورہ علاقے کو محاصرے میں لے کر تلاشی آپریشن شروع کیا۔ انہوں نے بتایا کہ ایک مشتبہ جگہ کی جانب پیش قدمی کے دوران وہاں موجود دہشت گردوں نے سکیورٹی فورسز پر فائرنگ کی، جس کے بعد طرفین کے درمیان باضابطہ طور تصادم شروع ہوا۔
      سرکاری ذرائع نے بتایا کہ محاصرے میں پھنسنے والے جنگجوئوں کو خودسپردگی اختیار کرنے کی پیشکش کی گئی جو انہوں نے مسترد کی۔ انہوں نے مزید بتایا کہ آخری اطلاعات ملنے تک مسلح تصادم میں دو جنگجوئوں کو مارا جا چکا تھا جن کی لاشیں برآمد کی گئی ہیں۔

      سرحد پر کئی بار دیکھے جاچکے ہیں ڈرون

      اس سے قبل سانبا ضلع میں تین الگ الگ مقامات پر مشتبہ پاکستانی ڈرون منڈراتے ہوئے دیکھے گئے۔ بتایا جاتا ہے کہ یہ ڈرون رات تقریباً ساڑھے 8 بجے باری - براہان، چلادھا اور گگوال علاقوں میں ایک ہی وقت پر دیکھے گئے۔ یہ ڈرون ایسے وقت میں دیکھے گئے ہیں، جب تقریباً ایک ہفتے پہلے پولیس نے یہاں پاس کے سرحدی کنچک علاقے میں پانچ کلو گرام آئی ای ڈی اشیا لے جارہے ایک پاکستانی ڈرون کو مار گرایا تھا۔

      نیوز ایجنسی یواین آئی اردو اِن پُٹ کے ساتھ
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: