ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں میں 45 سال سے زیادہ عمر کے لوگوں کے لئے ویکسینیشن کا عمل تیزی سے جاری

Jammu and Kashmir News : جموں و کشمیر انتظامیہ کی طرف سے جتنے بھی ویکسینیشن سنٹزز قائم کئے گئے تھے ، ان میں نوجوانوں کی ایک بڑی تعداد ان سینٹروں میں دیکھی گئی تھی ۔ لیکن 4 مئی کے بعد ویکسینیشن کا عمل رُک سا گیا ، جس کی وجہ کووین کی ویب پورٹل بتائی جا رہی ہے ۔

  • Share this:
جموں میں 45 سال سے زیادہ عمر کے لوگوں کے لئے ویکسینیشن کا عمل تیزی سے جاری
جموں میں 45 سال سے زیادہ عمر کے لوگوں کے لئے ویکسینیشن کا عمل تیزی سے جاری

جموں  : مرکزی سرکار کی طرف سے اعلان کئے گئے ویکسینیشن کے تیسرے مرحلے میں 18 سے 45 سال تک کی عمر کے لوگوں کو ویکسین لگائی جائے گی ۔ جموں و کشمیر یوٹی میں 1مئی سے 18 سے 45 سال کے اُوپر کے لوگوں کا اندراج کا عمل شروع کیا جائے گا ۔ اس کے بعد مرکزی سرکار کی طرف سے ایک پریس نوٹ جاری کیا گیا جس کے مطابق 1مئی سے ہی لوگوں کا اندراج بھی کیا جائے گا اور ویکسین بھی لگائی جائے گی۔ اسی کے تحت جموں و کشمیر میں کئی ویکسینیشن سنٹرز قائم کئے گئے ہیں ۔ جموں کے گاندھی نگر علاقہ میں لوگوں کو ویکسین لگانے کا عمل شروع کیا گیا ، جس میں ہدایت کے مطابق کووین ویب پورٹل پر لوگوں کو اپنا اندراج کرانا تھا لیکن یہ عمل کچھ ہی دنوں تک چل پایا۔


جموں و کشمیر انتظامیہ کی طرف سے جتنے بھی ویکسینیشن سنٹزز قائم کئے گئے تھے ، ان میں نوجوانوں کی ایک بڑی تعداد ان سینٹروں میں دیکھی گئی تھی ۔ لیکن 4 مئی کے بعد ویکسینیشن کا عمل رُک سا گیا ، جس کی وجہ کووین کی ویب پورٹل بتائی جا رہی ہے ۔ جو افراد اپنا اندراج کرانا چاہتے تھے ، اُن کا اندراج نہیں ہو پا رہا ہے۔ اندراج کی اس سائٹ پر ویکسینیشن کا کوئی بھی سینٹر دستیاب نہیں ہے۔ اس کی وجہ سے ویکسینیشن کا کام کافی سُست رفتاری سے چل رہا ہے۔


اعداد وشمار کے مطابق جموں و کشمیر میں ہر روز صرف 100 سے 150 افراد کو ہی ویکسین لگ رہی ہے ، جو کہ نہ ہونے کے برابر ہے۔ انتظامیہ کے مطابق جموں و کشمیر میں آنے والے دنوں میں ویکسین کی ایک اچھی کھپت آئے گی ، جس کے  بعد نئے 3000 سے زائد ویکسینیشن سنٹزز قائم کئے جائیں گے ۔ فی الحال 45 سال اور 45 سال کے اُوپر کے لوگوں کو ویکسین لگائی جا رہی ہے۔


جموں میں رہنے والی 20 سال کی دیکشا نے بتایا یکم مئی سے میں لگاتار کووین ویب سائٹ پر ویکسین لگانے کے لئے اپنا اندراج کرانے کی کوشش کر رہی ہوں لیکن میرا نام درج نہیں ہو رہا ہے ۔ ہمیں لگ رہا ہے کہ سرکار نے ہمارے ساتھ بڑا مزاق کیا ہے جو کہ ایک افسوس ناک بات ہے۔

جموں کے رہنے والے 25 سالہ آشیش نے بتایا کہ سرکار کی طرف سے جب یہ علان کیا گیا کہ 18 سال سے اوپر کے لوگوں کو بھی  تیسرے مرحلے میں ویکسین لگائی جائے گی ، ہم میں ایک خوشی کی لہر دور پڑی اور ہم انتظار کر نے لگے کہ کب یکم مئی آئے گا اور ہم اپنا اندراج کرائیں گے ، لیکن 1 مئی شام کے 4 بجے سے ہی میں اپنا اندراج کرانے کی کوشش کر رہا ہوں ، میرا نام رجسٹر تو ہو رہا ہے لیکن ویکسین کا کوئی بھی سلاٹ خالی نہیں ہے۔ اس بات سے ہم کافی مایوس ہو گئے ہیں ، لیکن ہمیں اُمید ہے کہ آنے والے دنوں میں ہمارا اندراج ہو جائے اور ہم بھی ویکسین لگا کر اپنے آپ کو محفوظ سمجھ سکیں۔

اس معاملہ کو لے کے جب  نیوز18 اُررو نے فائنانشیل کمشنر ہیلتھ اتُل ڈیلو سے رابطہ کیا تو اُن کا کہنا تھا کہ جموں و کشمیر میں ویکسین کی ایک کھیت آئے گی اُس کے بعد تمام لوگوں کو ویکسین لگانے کا عمل فوری طور پر شروع کیا جائے گا اس کے لئے نئے 3000 ویکسینیشن سنٹزز قائم کئے جائیں گے۔

اتُل ڈیلو نے یہ یقین دہانی کرائی کہ اگلے دو ہفتوں میں ویکسین کی کسی بھی طرح سے کوئی بھی کمی نہیں ہوگی ۔ 18 سے 45 سال کی عمر کے لوگوں کو پہلی اور دوسری ڈوز دی جائے گی ۔ ابھی فی الحال ہمارے پاس  اتنی ویکسین دستیاب نہیں ہیں کہ ہم 18 سے 45 سال کے لوگوں کو ویکسین لگا سکیں ۔ ابھی 45 سال اور 45 سال سے زیادہ عمر کے لوگوں کو ویکسین لگائی جا رہی ہے اس کا عمل تیزی سے جاری ہے۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: May 11, 2021 11:39 PM IST