உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    J&K News : ماتا ویشنو دیوی میں پیش آئے المناک سانحہ کے بعد ایل جی نے جاری کی یہ بڑی ہدایت

    J&K News : ماتا ویشنو دیوی میں پیش آئے المناک سانحہ کے بعد ایل جی نے جاری کی یہ بڑی ہدایت

    J&K News : ماتا ویشنو دیوی میں پیش آئے المناک سانحہ کے بعد ایل جی نے جاری کی یہ بڑی ہدایت

    Jammu and Kashmir : لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا (Manoj Sinha) نے راج بھون میں شری ماتا ویشنو دیوی شرائن بورڈ (SMVDSB) کی ایک خصوصی میٹنگ کی صدارت کی، جس میں یاتریوں کی حفاظت کو یقینی بنانے کے لیے کئی اہم فیصلے لیے گئے۔ یہ میٹنگ 31 دسمبر 2021 اور یکم جنوری 2022 کی درمیانی رات میں شری ماتا ویشنو دیوی بھون میں پیش آنے والے بھگدڑ کے ایک واقعے کے پس منظر میں بلائی گئی تھی ۔

    • Share this:
    جموں و کشمیر : لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا (Manoj Sinha) نے راج بھون میں شری ماتا ویشنو دیوی شرائن بورڈ (SMVDSB)   کی ایک خصوصی میٹنگ کی صدارت کی، جس میں یاتریوں کی حفاظت کو یقینی بنانے کے لیے کئی اہم فیصلے لیے گئے۔ یہ میٹنگ 31 دسمبر 2021 اور یکم جنوری 2022 کی درمیانی رات میں شری ماتا ویشنو دیوی بھون میں پیش آنے والے بھگدڑ کے ایک واقعے کے پس منظر میں بلائی گئی تھی ۔ میٹنگ میں شری ماتا ویشنو دیوی شرائن بورڈ کے ممبران کے علاوہ دیگر اعلیٰ افسران نے شرکت کی۔ چیف سیکریٹری ڈاکٹر ارون کمار مہتا، اور  لیفٹیننٹ گورنر کے پرنسپل سکریٹری  نتیش ور کمارنے بھی میٹنگ میں حصہ لیا۔ لیفٹیننٹ گورنر، جو ایس ایم وی ڈی ایس بی کے چیئرمین بھی ہیں، نے بھگدڑ کے واقعہ کے سبب بننے والے عوامل اور شرائن بورڈ کی انتظامیہ کی طرف سے اس کے فوراً بعد اٹھائے گئے مختلف اقدامات کاجائزہ لیا۔ بورڈ نے واقعہ کے بعد شرائن بورڈ، ضلعی انتظامیہ اور پولیس عملہ کی جانب سے فوری بچاؤ اور زخمیوں کو ککریال میں شرائن بورڈ کے اسپتال میں بروقت منتقل کرنے کی قابل ستائش کوششوں کو سراہا۔  بورڈ نے محسوس کیا کہ ان کوششوں کے نتیجے میں کئی جانیں بچائی گئیں۔

    سی ای او شرائن بورڈ کے ذریعہ بورڈ کو بریفنگ دی گئی کہ 35,000 یاتریوں کو 31 دسمبر اور 01 جنوری کو یاترا کے لئے آگے بڑھنے کی اجازت دی گئی تھی ، جب کہ وبائی امراض کو مدنظر رکھتے ہوئے نیشنل گرین ٹریبونل کی ایک دن میں 50,000 کی حد مقرر کی گئی تھی۔ متاثرین کو معاوضے کی رقم جاری کرنے کی صورت حال کا جائزہ لیتے ہوئے بورڈ نے اس المناک واقعے میں اپنی جانیں گنوانے والے یاتریوں کے لواحقین کو 5-5 لاکھ روپے کی اضافی رقم بطور معاوضہ فراہم کرنے کا فیصلہ کیا۔  لیفٹیننٹ گورنر نے یکم جنوری کو 10 لاکھ روپے کے ایکس گریشیا کا پہلے ہی اعلان کیا تھا۔ بورڈ نے چیف ایگزیکٹیو آفیسر، شرائن بورڈ کو ہدایت دی کہ وہ جنگی پیمانے پر فوری کارروائی کریں ، جن میں یاتریوں کا مؤثرانتظام، انفراسٹرکچر کو بڑھانا، آن لائن موڈ کے ذریعے یاترا کی بکنگ کو 100 فیصد بنانا شامل ہے۔  پورے ٹریک، خاص طور پر بھون کے علاقے، بھون میں داخلی اور خارجی راستوں کو الگ کرنے کے منصوبوں پر کام کرناشامل ہے۔

    لیفٹیننٹ گورنر نے ٹکنالوجی کے مناسب استعمال پر زور دیا اور یاتریوں کو موثر انتظام کے لیے آر ایف آئی ڈی ٹریکنگ سسٹم قائم کرنے پر بھی زور دیا۔ لیفٹیننٹ گورنر نے تکنیکی ماہرین کو شامل کرنے اور انتظام کے بہترین طریقہ کار کو اپنانے کا مشورہ دیا۔ میٹنگ میں سی ای او کو ہدایت دی گئی کہ بھون کے علاقے کے ماسٹر پلان کو مرحلہ وار طریقے سے ٹائم لائن کے مطابق جلد از جلد لاگو کرنے کے لیے ٹھوس اقدامات اٹھائیں اور تعمیراتی کام میں تیزی لانے اور یاتریوں کے لیے یاترا بھون کی جلد تکمیل کا اعادہ کریں۔ تمام متوقع چیلنجوں سے نمٹنے کے لیے ماسٹر پلان کے دوسرے اور تیسرے مرحلے میں مطلوبہ اصلاحات کرنے کے لیے ہدایات جاری کی گئیں۔ میٹنگ میں یاترا کو احسن طریقے پر انجام دینے کے لئےمختلف تجاویز پر بھی غور کیا گیا تاکہ مستقبل میں اس طرح کے حادثات سے بچا جاسکے۔

    میٹنگ میں اس بات پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا کہ عمر رسیدہ اور کمزور یاتریوں کے لیے کٹرہ سے روپ وے کے امکانات تلاش کئیں جائیں۔ میٹنگ میں سی ای او سے کہا گیا کہ وہ ٹوکن گروپ نمبر سسٹم کو دوبارہ شروع کرنے پر غور کرے جو چھ سال پہلے بند کر دیا گیا تھا۔  بورڈ نے مین بھون، شاپنگ کمپلیکس اور دیگر اہم علاقوں میں فزیکل انفراسٹرکچر اور فائر سیفٹی کے آڈٹ کا جائزہ لینے کے لیے جلد مشق شروع کرنے کی بھی ہدایت دی۔  یہ بھی فیصلہ کیاگیا کہ شرائن بورڈ کے ممبران ہدایات کے نفاذ کئے جانے والے کاموں کی نگرانی کریں گے۔ اجلاس دو منٹ کی خاموشی کے ساتھ اختتام پذیر ہوا اور بھگدڑ میں جاں بحق ہونے والے یاتریوں کے لیے دعا کی گئی۔

    ادھر حکومت نے 01-01-2022 کو کٹرا، ریاسی میں شری ماتا ویشنو دیوی کی عبادت گاہ میں ہونے والے المناک واقعہ کے بارے میں حقائق، بیانات یا الیکٹرانک شواہد شیئر کرنے کے لیے لوگوں کو مدعو کیا ہے۔ اطلاع میں کہاگیا ہے کہ کوئی بھی شخص مذکورہ واقعہ کے بارے میں حقائق یا بیانات پیش کرنا چاہتا ہے ۔ وہ  ای میل آئی ڈی divcomjmu-jk@nic.in یا Whatsapp نمبر 09419202723 یا لینڈ لائن نمبر 0191-2478996 پر یا اس سے پہلے 05-01-2022 پر شیئر کر سکتے ہیں۔ کوئی بھی شخص جو ذاتی طور پر ملنا چاہتا ہے،وہ حاضر ہو سکتے ہیں۔  انکوائری کمیٹی 05-01-2022 کو صبح 11:00 AM سے 01:00 PM کے درمیان ڈویژنل کمشنر جموں کے دفتر، ریل ہیڈ کمپلیکس، پانامہ چوک میں کوئی بھی بیان،حقائق یا ثبوت پیش کرسکتے ہیں۔
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: