ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں و کشمیر : ہند ۔ پاک کے درمیان جنگ بندی سمجھوتہ کو لے کر سرحدی علاقوں میں خوشی کی لہر

جنگ بندی معاہدہ کے بعد کے عام لوگ خاص کر سرحد پر رہنے والے لوگ کافی خوشی کا اظہار کر رہے ہیں ۔ جموں کے مختلف سرحدی علاقوں میں رہنے والے لوگوں کا کہنا تھا کہ یہ فیصلہ ان کے لئے کسی تحفہ سے کم نہیں ہے ۔

  • Share this:
جموں و کشمیر : ہند ۔ پاک کے درمیان جنگ بندی سمجھوتہ کو لے کر سرحدی علاقوں میں خوشی کی لہر
جموں و کشمیر : ہند ۔ پاک کے درمیان جنگ بندی سمجھوتہ کو لے کر سرحدی علاقوں میں خوشی کی لہر

طویل عرصہ کے بعد ہندوستان اور پاکستان کے حوالے سے لوگوں کو اس وقت ایک اچھی خبر سُننے کو ملی ۔ جب ہندوستان اور پاکستان نے سیز فائر معاہدے کی پاسداری کرنے کا فیصلہ کیا ۔ پاکستان اور ہندوستان کے ہاٹ لائن پر ڈی جی ایم او سطح کی بات چیت کے بعد ایک مشترکہ بیان جاری کرکے بتایا گیا کہ دونوں ملک سیز فائر معاہدے کی پاسداری کریں گے ۔ بتادیں کہ پاکستان ایک مقصد کے تحت لگاتار جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی کرتے آیا ہے ۔ تاکہ زیادہ سے زیادہ دہشت گردوں کو اس پار دھکیلا جاسکے ۔


اعداد و شمار کے مطابق پاکستان نے دوہزار انیس بیس میں جنگ بندی معاہدہ کی ریکارڈ توڑ خلاف ورزیاں کی تھیں ۔ ان واقعات میں جہاں متعدد فوجی جوان شہید ہوگئے وہیں سیز فائر معاہدے کی خلاف ورزی کی سب سے زیادہ مار سرحد پر رہنے والے لوگوں کو جھیلنی پڑی ۔ ان واقعات میں جہاں متعدد عام لوگوں کی جانیں چلی گئیں وہیں ان واقعات میں کافی مویشی بھی مارے گئے اور لوگوں کی فصلوں کے علاوہ ان کے گھروں کو نقصان پہنچا ۔


جنگ بندی معاہدہ کے بعد کے عام لوگ خاص کر سرحد پر رہنے والے لوگ کافی خوشی کا اظہار کر رہے ہیں ۔ جموں کے مختلف سرحدی علاقوں میں رہنے والے لوگوں کا کہنا تھا کہ یہ فیصلہ ان کے لئے کسی تحفہ سے کم نہیں ہے ۔ راکیش کمار نامی ایک مقامی شخص کا کہنا تھا کہ وہ ایک طویل عرصہ سے جنگ بندی معاہدہ کی خلاف ورزی کی مار جھیلتے آئے ہیں اور اس فیصلہ کے بعد انہیں امید ہے کہ پاکستان ضرور اس کی پاسداری کرے گا ۔


یہاں یہ بات قابل زکر ہے کہ کورونا وائرس جیسی وبا کے دوران بھی پاکستان اپنی حرکتوں سے باز نہیں آیا تھا اور جب ساری دنیا کورونا کی مار سے پریشان تھی ، پاکستان اس وقت بھی سرحدوں پر گولہ باری کرتا تھا ۔ ادھر اس فیصلے پر جموں و کشمیر یوٹی کی تمام سیاسی پارٹیوں نے بھی فیصلے کا خیر مقدم کیا ہے ۔ پی ڈی پی نیشنل کانفرنس کے علاوہ ریاستی کانگریس نے بھی اس فیصلہ کا خیر مقدم کرتے ہوئے امید ظاہر کی ہے کہ اس فیصلہ پر من و عن عمل کیا جائے گا ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Feb 27, 2021 11:01 AM IST