ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں و کشمیر میں اس سال جشن آزادی کی ہوگی دھوم ، ایل جی انتظامیہ نے منفرد انداز میں منانے کا بنایا منصوبہ 

جموں و کشمیر میں اس سال جشن آزادی کی دھوم بڑے پیمانے پر ہوگی ، جس کے لئے سرکار آج سے ہی تیاریوں میں جٹ گئی ہے۔ آزادی کا امرت کے نام سے منسوب یہ جشن جموں و کشمیر کی سرمائی راجدھانی سرینگر میں ایک منفرد انداز میں منانے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔

  • Share this:
جموں و کشمیر میں اس سال جشن آزادی کی ہوگی دھوم ، ایل جی انتظامیہ نے منفرد انداز میں منانے کا بنایا منصوبہ 
جموں و کشمیر میں اس سال جشن آزادی کی ہوگی دھوم ، ایل جی انتظامیہ نے منفرد انداز میں منانے کا بنایا منصوبہ 

سری نگر : جموں و کشمیر میں اس سال جشن آزادی کی دھوم بڑے پیمانے پر ہوگی ، جس کے لئے سرکار آج سے ہی تیاریوں میں جٹ گئی ہے۔  آزادی کا امرت کے نام سے منسوب یہ جشن جموں و کشمیر کی سرمائی راجدھانی سرینگر میں ایک منفرد انداز میں منانے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔ ڈویژنل کمشنر کشمیر پنڈورنگ پولے نے 12 مارچ سے شروع ہونے والے ، ہندوستان کی 75 سالہ آزادی کے جشن منانے کے لئے "آزادی کا امرت مہا اتسو" کی تیاریوں کا جائزہ لینے کے لئے افسران کے ایک اجلاس کی صدارتب بھی کی۔ اجلاس میں دیگر متعلقین کے علاوہ کمشنر ایس ایم سی ، ڈائریکٹر اسکول ایجوکیشن ، وی سی لاوڈا، پولیس، سیاحت ، ٹریفک محکموں کے افسران نے شرکت کی۔


میٹنگ کے دوران آگاہ کیا گیا کہ بارہمولہ اور سانبہ اضلاع میں دو بڑے پروگراموں کا انعقاد کیا جائے گا ، جس دوران  12 مارچ سے شروع ہونے والے جشن کے دوران آزادی پسندوں کو خراج عقیدت پیش کیا جاۓ گا۔ کیونکہ اس دن مہاتما گاندھی نے گجرات کے سابرمتی آشرم سے ڈانڈی مارچ کا آغاز 1930 میں کیا تھا۔ اس موقع پر ڈویژنل کمشنر نے کہا کہ اس جشن کے دوران ہفتہ بھر ایک پروگرام ہندوستان کے متعدد ثقافتی اور ثقافتی ورثہ سمیت اتحاد و تنوع ، آزادی کے بعد ہندوستان کی ترقی اور  ہندوستان کے عوام پر مشتمل ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ شکارہ ریلی میں 75 شکارہ شامل ہون گی ، جو چبوتر خانہ سے نہرو پارک ڈلگیٹ تک شروع ہونے والے بورڈ میں شامل کئی نمایاں چہروں کے ساتھ چلیں گی۔


انہوں نے متعلقہ افراد کو ہدایت کی کہ وہ ہفتہ وار پروگراموں کے آسان سے اور بنا خلل انعقاد کو یقینی بنانے کے لئے تمام مطلوبہ انتظامات کو یقینی بنائیں ۔ زیادہ سے زیادہ عوامی شرکت پر زور دیتے ہوئے  ڈویژنل کمشنر نے متعلقہ افراد کو ہدایت دی کہ وہ ایک مناسب ایکشن پلان کو یقینی بنائیں اور ہر محکمہ کے ساتھ 75 ہفتہ کی تقریبات کے دوران کم سے کم تین پروگراموں کا اہتمام کرے ۔ڈویژنل کمشنر نے ثقافتی پروگراموں ، پرچم کشائی ، دعوت کارڈ اور ٹورنامنٹ پیش کرنے کے حوالے سے تیاریوں کا بھی جائزہ لیا ، جس میں ہر تقریب کے دوران شرکا کو اپنی بہترین پرفارمنس اور دیگر پروگراموں کے انعقاد کے لئے 75 ہفتوں سے اگست میں ہندوستان کے 75 ویں سال آزادی کے موقع پر منعقد کیا جائے گا۔


قبل ازیں لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے  ہندوستان کی 75 سالہ آزادی کا جشن منانے کے لئے "ازادی کا امرت مہااتسو" - بھارت @ 75 کے ایک اعلی سطحی تیاری اجلاس کی صدارت کی تھی ۔  آزادی پسندوں اور شہداء کے پیدائشی مقامات یعنی بریگیڈیئر راجندر سنگھ (گاؤں باگونا ، سانبہ) ، مقبول شیروانی (بارہمولہ ٹاؤن) کا انتخاب 12 مارچ کو ہونے والے پروگراموں کے لئے کیا گیا تھا۔ جموں و کشمیر میں بڑے جوش و جذبے اور اعلی جوش و جذبے کے ساتھ عظیم الشان جشنوں کا اعلان کرتے ہوئے لیفٹیننٹ گورنر نے انتظامی سکریٹریوں کو ہدایت دی کہ وہ آزادی کا امرت مہا اتسو کے آغاز کے موقع پر مختلف یادگاری سرگرمیوں کا اہتمام کریں۔ ثقافتی نمائشیں اور پروگرام  ، ڈل جھیل سیمینار، سائیکل ریلیوں ، یوگا کیمپوں ، موٹر سائیکل ریلیاں اور مختلف سرگرمیوں کے انعقاد کے لئے بھی یوم آزادی سے 75 ہفتوں سے قبل ہدایت جاری کی گئیں ہیں ۔

لیفٹیننٹ گورنر نے آدھار پنچایتوں اور آدھار بلاکس کی شناخت کرنے پر بھی زور دیا۔ 75 سالہ آزادی کے عظیم الشان تقریبات کے اس قومی تہوار میں زیادہ سے زیادہ عوامی شرکت کو یقینی بنانے کے لئے منتخب عوامی نمائندوں ، نوجوانوں ، اسکول کے طلبہ ، سماجی اور ثقافتی تنظیموں ، این جی اوز ، سول سوسائٹی اور معاشرے کے تمام طبقات کو شامل کرنے پر بھی تبادلہ خیال ہوا۔  لیفٹیننٹ گورنر نے افسران سے کہا کہ میگا تقریبات کی بڑے پیمانے پر تشہیر کرنے پر خصوصی زور دیا جاۓ اور مختلف آن لائن اور آف لائن میڈیا پلیٹ فارمز کا زیادہ سے زیادہ استعمال کریں تاکہ 75 سالہ آزادی کا تہوار یوٹی کے ہر شہری تک پہنچ سکے۔

نیز تمام محکموں کو ہدایت دی گئی کہ وہ اپنے متعلقہ ایکشن پلان کو 75 ہفتوں تک یادداشت کی سرگرمیوں کے تفصیلی کیلینڈر کے ساتھ جمع کریں ۔ جس میں تمام اضلاع کا احاطہ کیا جائے اور تہوار کے شاندار جشن کے لئے متعلقہ محکموں کے ذریعہ پروگراموں کی مخصوص جگہ تیار کی جائے۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Mar 06, 2021 10:37 PM IST