ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں۔کشمیر کے ان اضلاع میں کورونا کے بڑھتے خطرات کے پیش نظر Fast Vaccination پر دی جائے گی توجہ

کووڈ 19 (Covid-19 pandemic) کے معاملات میں حالیہ اضافے کے پس منظر میں کابینہ کے سکریٹری ، راجیو گوبا نے چیف سکریٹریوں کے ساتھ ایک اعلی سطحی میٹنگ میں تمام ریاستوں اور مرکزی علاقوں کو ٹیسٹنگ پر سختی سے عمل درآمد کی ہدایت کی۔ کووڈ معاملات کی تعداد میں تیزی سے اضافے کی چیلنجنگ صورتحال سے نمٹنے کے لئے مختلف اقدامات اٹھانے پر تبادلہ خیال ہوا۔

  • Share this:
جموں۔کشمیر کے ان اضلاع میں کورونا کے بڑھتے خطرات کے پیش نظر Fast Vaccination پر دی جائے گی توجہ
کورونا کے بڑھتے خطرات کے پس منظر میں فاسٹ ویکسینیشن پر دی جاۓ گی توجہ۔۔

جموں کشمیر: ملک بھر کے کووڈ 19 (Covid-19 pandemic) کے معاملات میں حالیہ اضافے کے پس منظر میں کابینہ کے سکریٹری ، راجیو گوبا نے چیف سکریٹریوں کے ساتھ ایک اعلی سطحی میٹنگ میں تمام ریاستوں اور مرکزی علاقوں کو ٹیسٹنگ پر سختی سے عمل درآمد کی ہدایت کی۔ کووڈ معاملات کی تعداد میں تیزی سے اضافے کی چیلنجنگ صورتحال سے نمٹنے کے لئے مختلف اقدامات اٹھانے پر تبادلہ خیال ہوا۔ چیف سکریٹری ، بی وی آر سبرامنیم ، فنانشل کمشنر ہیلتھ اینڈ میڈیکل ایجوکیشن اٹل ڈلو ، پرنسپل سکریٹری ہوم ، اے ڈی جی پی (کوآرڈینیشن) اور مشن ڈائریکٹر ، نیشنل ہیلتھ مشن نے اس میٹنگ میں شرکت کی۔ صورتحال کا جائزہ لیتے ہوئے کابینہ کے سکریٹری نے کہا کہ ملک میں گزشتہ چند ہفتوں کے دوران کورونا کیسوں میں تیزی سے اضافہ دیکھنے میں آیا ہے جبکہ رواں سال کے شروع میں فروری میں رپورٹ ہونے والے نئے کیسوں کی تعداد میں لگ بھگ دس گنا اضافہ ہوا ہے۔ منظر نامے میں بگاڑ پر غور کرتے ہوئے کابینہ کے سکریٹری نے اس بات پر زور دیا کہ اب وقت آگیا ہے کہ چیلنج سے نمٹنے کے لئے ریاستوں و یونین ٹریٹریز کی حکومتوں کا ایک جامع نقطہ نظر اپنایا جائے۔

کابینہ کے سکریٹری نے اس بات کا اعادہ کیا کہ محض ویکسینیشن  ( Covid 19 Vaccination) عمل سے ہی اس مسئلے کا کوئی علاج نہیں کیا جاسکتا ہے لیکن اسے جانچنا، کھوج لگانا، روک تھام اور کووڈ گائڈلائنز کے نفاذ کے ساتھ ساتھ پوری طرح سے ختم کرنے کی اشد ضرورت ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ایک واضح پیغام کو اعلی سطح سے پوری ریاستی مشینری تک جانے کی ضرورت ہے کہ اس مسئلے سے نمٹنے کے لئے تمام تدابیر کو ویکسینیشن کے ساتھ ساتھ استعمال کرنے کی بھی ضرورت ہے۔کابینہ کے سکریٹری نے ریاستوں و یونین ٹریٹریز پر زور دیا کہ فوری طور پر وائرس کے تناؤ کے وجود میں آنے کے بعد انفیکشن کی شدت کو روکنے کے ٹارگیٹ، زیادہ سے زیادہ آبادی کا احاطہ کرنے کے لۓ تیز رفتار ویکسینیشن مہم کے علاوہ کثیر الجہتی ردعمل کو یقینی بنائے۔


کورونا ویکسین
وزارت خارجہ کے ترجمان انورا سریواستو نے جمعہ کو ورچول ہفتہ وار ی بریفنگ میں کہاکہ گھریلو پیداوار اور قومی ٹیکہ مہم پروگرام کی ضرورتوں کو مدنظر رکھتے ہوئے دیگر ممالک کو ویکسین کی سپلائی کا فیصلہ کیا جائے گا۔


انہوں نے ریاستوں ، یونین ٹریٹریز کو مشورہ دیا کہ وہ کورونا کو روکنے کے مناسب طرز عمل کو پرجوش طریقے سے فروغ دیں۔ خاص طور پر ایسے اضلاع میں جو ٹارگٹ کوٹہ کی کمی کا شکار ہیں۔ ان میں جانچ کی شرح کو بہتر بنائیں ۔ آر ٹی پی سی آر ٹیسٹوں میں حصہ بڑھا دیں جیسے کہ RATs ، غیر منقولہ اور سخت حکمت عملی اپنائیں۔ کورونا معاملات میں اضافے کا مشاہدہ کرنے والے گروہوں میں جغرافیائی طور پر ہدف بنائے جانے والے ویکسینیشن ( Covid 19 Vaccination) کی دفعات کے ساتھ ترجیحی ویکسینیشن کا اہتمام کریں۔ سیکریٹری صحت نے اجلاس کے دوران ایک مختصر پریزنٹیشن میں بتایا کہ گذشتہ سال جون سے لے کر اب تک ملک بھر میں روزانہ کی اوسط اموات میں تیزی سے اضافہ ہوا ہے جبکہ مہاراشٹر ، گجرات ، دہلی ، پنجاب، چھتیس گڑھ وغیرہ سمیت دیگر ریاستوں میں کووڈ19 کی وجہ سے زیادہ سے زیادہ معاملات اور اموات رونما ہو رہے ہیں۔ وقت کے پابند منصوبے کی مدد سے اضلاع میں اضافے کی اطلاع دینے والے اضلاع میں ترجیحی عمر کے گروپوں کو سیر کرنے کی ویکسینیشن پر بھی روشنی ڈالی گئی۔ریاستوں، مرکز کے زیر انتظام علاقوں کو ضلعی ایکشن پلان تیار کرنے اور اسپتال سے متعلق کیس کی اموات کی شرح کا جائزہ لینے اور پھر اس مسئلے کو حل کرنے کے لئے لائحہ عمل تیار کرنے کا بھی مشورہ دیا گیا۔

اجلاس کے دوران آئی اینڈ بی سکریٹری نے کووڈ کو روکنے کے لیے احتیاطی تدابیر ، اعتماد کا غلط احساس ، ویکسین میں ہچکچاہٹ اور مواصلاتی تھکاوٹ کے عمل میں نرمی کو دور کرنے کے لئے ایک مواصلاتی حکمت عملی بھی پیش کی۔مختلف ریاستوں بشمول مہاراشٹر ، پنجاب ، کرناٹک ، چھتیس گڑھ وغیرہ نے بھی اجلاس کے دوران اپنی اپنی ریاستوں کی صورتحال کے جائزہ کے بارے میں ایک مختصر تفصیل دی۔چیف سکریٹری ، جموں و کشمیر نے بتایا کہ حکومت جموں وکشمیر کے چار اضلاع کے جموں ، سرینگر ، بڈگام اور بارہمولہ میں اہل عمر کے تمام افراد کو شامل کرنے کے لئے ایک تیز رفتار ویکسینیشن مہم چلائے گی۔انہوں نے مزید کہا کہ ٹھوس کوششوں کے ذریعہ حکومت اپنی مقامی آبادی کے مابین کووڈ کے راستہ کی نگرانی کر رہی ہے جس میں سیاحت کے بڑھتے ہوئے فٹ فال والے اضلاع پر خصوصی توجہ دی جائے گی۔
ادھر محکمہ تعلیم نے جموں کشمیر کے سبھی اضلاع کے ڈپٹی کمشنروں کو کووڈ کے بڑھتے خطرات کے پیش نظر اسکولوں میں جاری تعلیمی سرگرمیوں کا احاطہ کرنے کےلئے تحریری طور پر آگاہ کیا ہے۔ ضلع کمشنروں کو بتایا گیا ہے کہ وہ متعلقہ اضلاع میں آن لائن و آف لائن طرز کے درس و تدریس کے دوران ایس او پیز کے نفاذ و دیگر قواعد و ضوابط کے نفاذ کا جائزہ لیں اور اسکولوں میں جاری سرگرمیوں پر از سر نو غور کر کے ضروری فیصلہ لیں جسمیں متعلقہ چیف ایجوکیشن افسران و محکمہ تعلیم کے دیگر افسران بھی ان کی مدد کریں گے۔
Published by: Sana Naeem
First published: Apr 02, 2021 08:52 PM IST