ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جنوبی کشمیر میں دو مسلح جھڑپوں میں 4 ملیٹنٹ ہلاک، ملیٹنٹوں کی تحویل سے اسلحہ اور قابل اعتراض مواد برآمد

جموں و کشمیر پولیس کے ایک ترجمان نے بتایا کہ کولگام کے ژنی گام اور پلوامہ کے ددورہ میں ہونے والی دو مسلح جھڑپوں میں چار ملیٹنٹ مارے گئے ہیں۔

  • UNI
  • Last Updated: Oct 10, 2020 06:35 PM IST
  • Share this:
جنوبی کشمیر میں دو مسلح جھڑپوں میں 4 ملیٹنٹ ہلاک،  ملیٹنٹوں کی تحویل سے اسلحہ اور قابل اعتراض مواد برآمد
علامتی تصویر

سری نگر:  جنوبی کشمیر کے کولگام اور پلوامہ اضلاع میں گذشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران ہونے والی دو مسلح جھڑپوں میں چار جنگجو مارے گئے ہیں۔ یہ مسلح جھڑپیں ضلع کولگام کے ژنی گام اور ضلع پلوامہ کے ددورہ  کی ہیں۔ جموں و کشمیر پولیس کے ایک ترجمان نے بتایا کہ کولگام کے ژنی گام اور پلوامہ کے ددورہ میں ہونے والی دو مسلح جھڑپوں میں چار ملیٹنٹ  مارے گئے ہیں۔ انہوں نے کولگام میں مارے گئے ملیٹنٹوں کی شناخت طارق احمد میر ولد عبدالرحمان میر ساکن زنگل پورہ دیوسر کولگام اور پاکستانی رہائشی سمیر بھائی عرف عثمان ساکن پنجاب پاکستان کے طور پر ظاہر کی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ دونوں ملیٹنٹوں کا تعلق دہشت گرد تنظیم جیش محمد سے تھا۔

سرکاری ذرائع نے تفصیلات فراہم کرتے ہوئے کہا کہ کولگام کے ژنی گام میں ملیٹنٹوں کی موجودگی سے متعلق خفیہ اطلاع ملنے پر پولیس فوج کی ایک راشٹریہ رائفلز اور سی آر پی ایف نے مذکورہ علاقے میں گذشتہ رات کارڈن اینڈ سرچ آپریشن شروع کیا۔ انہوں نے کہا کہ ایک مشتبہ جگہ کو محاصرے میں لینے کے دوران وہاں موجود ملیٹنٹوں نے فائرنگ کی جس کے بعد دونوں طرف سے مسلح تصادم چھڑ گیا جس میں دو ملیٹنٹ مارے گئے۔

سرکاری ذرائع نے بتایا کہ پلوامہ کے ددورہ میں ہفتے کو بعد از دوپہر شروع کئے گئے ایک ایسے ہی آپریشن میں دو ملیٹنٹ مارے گئے ہیں جن کی شناخت معلوم کی جا رہی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ مہلوک ملیٹنٹوں  کے قبضے سے دو اے کے رائفلز برآمد ہوئی ہیں۔ انتظامیہ نے احتیاط کے طور دونوں اضلاع کے بیشتر حصوں میں موبائل انٹرنیٹ خدمات منقطع کر دی ہیں۔ نیز سکیورٹی فورسز کو تعینات کردیا گیا ہے۔


دریں اثنا جموں و کشمیر پولیس نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ ملیٹنٹوں  کے چھپنے کی اطلاع موصول ہونے پر ایک آر آر، سی آر پی ایف کی 18 بٹالین اور پولیس کی ایک مشترکہ پارٹی نے کولگام کے ژنی گام علاقے کو محاصرے میں لے کر تلاشی آپریشن شروع کیا۔بیان میں کہا گیا کہ آپریشن کے دوران جب ایک مقام پر ملیٹنٹوں  کے چھپنے کی تصدیق ہوئی تو انہیں خود سپردگی کرنے کی پیشکش کی گئی لیکن انہوں نے (ملیٹنٹوں  نے) اس کے جواب میں تلاشی ٹیم پر اندھا دھند فائرنگ شروع کی جس کے نتیجے میں طرفین کے درمیان تصادم چھڑ گیا۔

بیان کے مطابق تصادم کے دوران دو ملیٹنٹ مارے گئے۔ مہلوک جنگجوؤں کی شناخت طارق احمد میر ولد عبدالرحمان میر ساکن زنگل پور دیوسر کولگام اور دوسرا پاکستانی سمیر بھائی عرف عثمان ساکن پنجاب پاکستان کے بطور ہوئی ہے۔ بیان میں کہا گیا کہ مہلوک ملیٹنٹوں  کی تحویل سے اسلحہ اور قابل اعتراض مواد بھی برآمد کیا گیا۔
Published by: sana Naeem
First published: Oct 10, 2020 06:35 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading