ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

سری نگر: محبوبہ کے بیان پر ہنگامہ، ترنگا لہرانے لال چوک پہنچے بی جے پی کارکنان، پولیس نے حراست میں لیا

پچھلے دنوں محبوبہ مفتی نے کہا تھا کہ جب تک کشمیر میں دوبارہ آرٹیکل 370 بحال نہیں ہو جاتا اور انہیں جموں وکشمیر کا جھنڈا واپس نہیں مل جاتا وہ ترنگا نہیں تھامیں گی۔

  • Share this:
سری نگر: محبوبہ کے بیان پر ہنگامہ، ترنگا لہرانے لال چوک پہنچے بی جے پی کارکنان، پولیس نے حراست میں لیا
فوٹو: پی ٹی آئی

سری نگر۔ جموں وکشمیر (Jammu Kashmir) کی سابق وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی (Mehbooba Mufti) کے ترنگے والے بیان پر ہنگامہ مچ گیا ہے۔ محبوبہ کے اس بیان پر بی جے پی جارحانہ رخ اختیار کئے ہوئے ہے۔ محبوبہ کے بیان کی مخالفت میں بی جے پی پیر کو سری نگر سے کپواڑہ تک ترنگا یاترا نکال رہی ہے۔ وہیں، کپواڑہ میں بی جے پی کارکن سری نگر کے مشہور لال چوک پہنچے اور ترنگا لہرانے کی کوشش کی۔


حالانکہ، اس دوران بی جے پی کارکنان کو پولیس نے پکڑ لیا اور 4 بی جے پی کارکنان کو حراست میں لیا گیا۔ پچھلے دنوں محبوبہ مفتی نے کہا تھا کہ جب تک کشمیر میں دوبارہ آرٹیکل 370 بحال نہیں ہو جاتا اور انہیں جموں وکشمیر کا جھنڈا واپس نہیں مل جاتا وہ ترنگا نہیں تھامیں گی۔


اے بی وی پی کارکنان نے کی پی ڈی پی دفتر کے باہر نعرے بازی


اس سے پہلے اتوار کو بی جے پی کی طلبہ تنظیم اے بی وی پی کے کارکنان نے قومی پرچم پر متنازعہ بیان کو لے کر محبوبہ مفتی کے خلاف جموں میں پی ڈی پی دفتر کے باہر مظاہرہ کیا۔ یہ مظاہرہ کا دوسرا دن تھا۔ جموں میں پی ڈی پی کے دفتر پر کچھ نوجوانوں نے ترنگا لہرایا تھا۔ اس دوران محبوبہ مفتی کے خلاف جم کر نعرے بازی ہوئی تھی۔ دیکھیں ویڈیو۔


کیا بولیں تھیں محبوبہ مفتی؟

دراصل، رہائی کے بعد محبوبہ مفتی نے اعلان کیا تھا کہ میں جموں وکشمیر کے علاوہ دوسرا کوئی جھنڈا نہیں اٹھاوں گی۔ محبوبہ مفتی نے کہا کہ جس وقت ہمارا یہ جھنڈا واپس آئے گا، ہم اس (ترنگے) جھنڈے کو بھی اٹھا لیں گے۔ مگر جب تک ہمارا اپنا جھنڈا جسے ڈاکووں نے ڈاکے میں لے لیا ہے، تب تک ہم کسی اور جھنڈے کو ہاتھ میں نہیں اٹھائیں گے۔ سابق وزیر اعلیٰ نے کہا کہ وہ جھنڈا ہمارے آئین کا حصہ ہے، ہمارا جھنڈا تو یہ ہے۔ اس جھنڈے سے ہمارا رشتہ اس جھنڈے نے بنایا ہے۔
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Oct 26, 2020 11:04 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading