ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

کشمیر: منشیات میں ملوث چار افراد گرفتار، پولیس نے کہا۔ سرحد پار سے منشیات کی ہو رہی اسمگلنگ

پولیس کا کہنا ہے کہ سرحد پار سے منشیات کی اسمگلنگ ہو رہی ہے جس کا مقصد کشمیر کے نوجوانوں کو تباہ کرنا ہے۔

  • Share this:
کشمیر: منشیات میں ملوث چار افراد گرفتار، پولیس نے کہا۔ سرحد پار سے منشیات کی ہو رہی اسمگلنگ
پولیس کا کہنا ہے کہ سرحد پار سے منشیات کی اسمگلنگ ہو رہی ہے جس کا مقصد کشمیر کے نوجوانوں کو تباہ کرنا ہے۔

ہندوارہ پولیس نے آج ایک اہم کارروائی کے تحت منشیات میں ملوث چار افراد کو گرفتار کیا ہے۔ گرفتار کئے گئے افراد سے منشیات کی بھاری کھیپ ضبط کی گئی ہے۔ پولس ترجمان کے مطابق سوپور کے مختلف علاقوں سے یہ چار افراد بدرہ پاین کراگنڈ میں مشکوک حالت میں گھومتے دیکھئے گئے جس کے بعد  علاقے میں تعینات پولس اہلکاروں نے چاروں افراد سے پوچھ گچھ کی اور تلاشی کاروائیکے دوران منشیات کی بھاری کھیپ ضبط کی۔ پولیس کا کہنا ہے کہ سرحد پار سے منشیات کی اسمگلنگ ہو رہی ہے جس کا مقصد کشمیر کے نوجوانوں کو تباہ کرنا ہے۔ لیکن پولس سرحد پار کی ہر کوشش کو ناکام بنا رہی ہے۔


واضح رہے کہ پھچلے ایک ہفتے کے دوران ہندوارہ پولس نے  50 کروڑ مالیت کی ہیروئن ضبط کی ہے اور دو افراد کی گرفتاری بھی عمل میں لائی گئی ۔ جبکہ کروڑوں کی غیر قانونی کرنسی بھی ضبط کی گئی۔ پولس ترجمان کےمطابق، سرحد پار سے  منشیات اور غیر قانونی کرنسی کو اس پار ملیٹنٹوں تک پہنچانے کی کوشش کی جاتی ہے۔ لیکن پولس سرحد پار کی ہر کوشش کو ناکام بنا رہی ہے۔


اس دوران کپواڑہ پولیس نے بھی لائن آف کنٹرول پر ایک ماہ قبل نصف درجن افراد کی گرفتاری عمل میں لاکر منشیات اور اسحلہ بارود کی بڑی مقدار ضبط کی تھی۔ پولس کا کہنا تھا کہ پاکستان کی جانب سے منشیات اور اسحلہ بارود بیچ کرکے نوجوانوں کو ملٹینسی سرگرمیوں میں دھکیلنے کی کوشش کی جا رہی ہے۔ تاہم پولس اور فوج کی بروقت کاروائی سے اس بڑے حادثہ کو ٹالا گیا ۔کیونکہ پولس کے مطابق اگر یہ اسحلہ بارود ملیٹنٹوں تک پہنچ جاتا تو اس سے تخریبی کارروائی انجام دی جاتی۔ پولس کا کہنا ہے کہ سرحد پر فوج اور پولس مشترکہ طور پر اس طرح کی کاروائیوں پر کڑی نگاہ بنائے ہوئے ہیں تاکہ پاکستان کی تمام تخریبی کوششوں کو ناکام بنایا جا سکے۔

Published by: Nadeem Ahmad
First published: Aug 07, 2020 01:01 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading