ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں وکشمیر: کپواڑہ میں دراندازی کی کوشش ناکام، آپریشن میں تین جوان شہید

7-8 نومبر کی درمیانی شب تقریباً 169 ویں بٹالین نے گشت کے دوران ماچھل سیکٹر میں ایل او سی کے پاس دراندازوں کی کچھ ہلچل دیکھی۔ انہیں روکنے کے لئے کی گئی کارروائی میں سیکورٹی اہلکاروں نے دو دہشت گرد مار گرائے۔

  • Share this:
جموں وکشمیر: کپواڑہ میں دراندازی کی کوشش ناکام، آپریشن میں تین جوان شہید
جموں وکشمیر: کپواڑہ میں دراندازی کی کوشش ناکام، آپریشن میں تین جوان شہید

سری نگر: جموں وکشمیر کے کپواڑہ ضلع میں واقع ماچھل سیکٹر میں ہندوستان - پاکستان کے درمیان لائن آف کنٹرول (ایل او سی) پر آپریشن میں فوج کے دو اور بی ایس ایف کا ایک جوان شہید ہوگیا۔ دراصل یہاں سرحد پار سے کچھ دہشت گرد دراندازی کی کوشش کر رہے تھے۔ سیکورٹی اہلکاروں نے حالانکہ انہیں روک لیا۔ سیکورٹی اہلکاروں کے اس آپریشن میں دو درانداز بھی مارے گئے۔


بی ایس ایف کی طرف سے جاری بیان میں بتایا گیا کہ 7 اور 8 نومبر کی درمیانی شب تقریباً ای بجے 169 ویں بٹالین نے گشت کے دوران ماچھل سیکٹر میں ایل او سی کے پاس دراندازی کی کچھ ہلچل دیکھی۔ انہوں نے دراندازوں کو روکنے کی کوشش کی تو انہوں نے گولی باری شروع کردی۔ بی ایس ایف جوانوں نے اس کا منہ توڑ جواب دیا اور دو دہشت گردوں کو مار گرایا۔ بیان میں بتایا گیا کہ بی ایس ایف کی گولیوں سے ایک دہشت گرد تو موقع پر ہی ہلاک ہوگیا، جبکہ باقی دہشت گرد وہاں پہاڑیوں میں چھپنے میں کامیاب ہوگئے۔


ایسے میں دہشت گردوں کی مدد کے لئے اسی وقت پاکستانی چوکیوں کی طرف سے گولی باری شروع ہوگئی۔ اس گولی باری میں بی ایس ایف جوان سدیپ کمار کو گولی لگ گئی۔ سدیپ کی بہادری کا ذکر کرتے ہوئے بی ایس ایف نے بتایا کہ سدیپ نے زخمی ہونے کے باوجود اپنی جان کی پرواہ کئے بغیر لڑائی جاری رکھی اور اسی دوران شہید ہوگئے۔ اس درمیان مدد کے لئے فوج کےجوان بھی وہاں پہنچ گئے اور آس پاس کے علاقوں کی تلاشی شروع کردی۔ دہشت گردوں کے پاس سے ایک AK-47 رائفل، دو بیگ برآمد کئے گئے ہیں۔


 

 
Published by: Nisar Ahmad
First published: Nov 08, 2020 03:40 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading