ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

کشمیر کے روشن ستارے: مارکی عادل نغمہ سرائی کے میدان میں اپنا لوہا منوا رہے ہیں

مارکی عادل کو بچپن سے ہی گانے بجانے کا شوق تھا۔ انہوں نے بتایا کہ وہ بچپن میں بزرگوں کی صحبت میں بیٹھ کر کشمیری گانے سنتے تھے پھر آہستہ آہستہ انہیں بھی بے حد شوق ہو گیا۔

  • Share this:
کشمیر کے روشن ستارے: مارکی عادل نغمہ سرائی کے میدان میں اپنا لوہا منوا رہے ہیں
مارکی عادل نغمہ سرائی کے میدان میں اپنا لوہا منوا رہے ہیں

زمانہ دیکھے گا اب کشمیر کے ستارے ۔ نیوز18 اردو کی جانب سے ٹیلنٹ ہنٹ شو شروع کئے جانے پر وادی کے نوجوان اب کافی خوش ہیں کہ وہ نیوز 18 اردو کے ذریعے اب دنیا کو اپنی صلاحیتوں سے روشناس کرائیں گے ۔ وادی کے نوجوان اب اپنے گانے بجانے کےخوب ویڈیو تیار کررہے  ہیں اورنیوز 18 اردو کو تیار کردہ یہ ویڈیو بھیج کر کشمیر کے روشن ستاروں کی فہرست میں اپنی صلاحیتوں کا مظاہرہ کرکے اپنا تعارف دنیاکو کرا رہے ہیں۔


ان ہی ستاروں میں شمالی کشمیر کے مارکی پورہ پٹن کے 23سالہ مارکی عادل ہیں جن کا اصل نام عادل احمد راتھر ہے اور مارکی ان کا  تخلص ہے ۔نغمہ سرائی کے میدان میں مارکی عادل نام سے ہی  مشہور ہیں۔ مارکی عادل نغمہ سرائی کے میدان میں ساز وآواز کے ساتھ اپنا لوہا منوا رہے ہیں ۔مارکی عادل کشمیر یونیورسٹی میں ماس کمیونیکیشن کے ساتھ ساتھ  انڈین کلاسکل میوزک اور انڈین کلاسکل سنتور کا کورس کررہے ہیں ۔مارکی عادل اپنی سازو آواز کا جادو بکھیر رہے ہیں۔ عادل نے نیوز 18اردو کو بتایا کہ انہیں کشمیر میں  بیشتر محفلوں میں نغمہ سرائی کے لئے دعوت دی جاتی ہے ۔وہ اپنی پُر تاثیر آواز سے لوگوں کو اپنی جانب متوجہ کرتے ہیں اور انہیں کافی محظوظ بھی  کرتے ہیں۔ انہوں نے اس  شعر سے  نغمہ سرائی کی تعریف کی۔ ہم نغمہ سرائی کیسے کریں بیدادگروں کی محفل میں ۔آنکھوں سے لہوکا راگ بہے تو جذب ہو کس پتھر دل میں.


مارکی عادل کو بچپن سے ہی گانے بجانے کا شوق تھا۔ انہوں نے بتایا کہ وہ بچپن میں بزرگوں کی صحبت میں بیٹھ کر  کشمیری گانے سنتے تھے پھر آہستہ آہستہ انہیں بھی بے حد شوق ہو گیا۔ مارکی کہتے ہیں کہ انہیں میوزک کے ساتھ نغمہ سرائی کا اتنا جنون طاری ہوا کہ وہ اس دور میں بازاروں سے سی ڈی خریدتے تھے اور پھر گھر میں نغمے سنتے تھے۔ انہوں نے مزید بتایا کہ ٹیکنالوجی اور یوٹیوب پر ہر طرح کے گانے دستیاب رہنے سے ان کا کام آسان ہو گیا۔ مارکی عادل کہتے ہیں کہ جب وہ گھر سے یونیورسٹی نکلتے ہیں تو کانوں میں ائیرفون لگاکر کئی نغموں کی اس دوران  مشق کرتے ہیں۔ مارکی کہتے ہیں کہ کشمیر کے نوجوانوں  میں نغمہ سرائی کے میدان میں کافی صلاحیتیں موجود ہیں۔ لیکن صرف ایک پلیٹ فارم کی کمی ہے ۔اب انہیں امید ہے کہ  نیوز 18اردو اس کمی کو پورا کرے گا۔

Published by: Nadeem Ahmad
First published: Aug 12, 2020 11:01 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading