ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں۔کشمیر: ترال انکاؤنٹر میں تین ملی ٹنٹ ہلاک، مہلوکین میں حزب کمانڈر جہانگیر رفیق بھی شامل

جنوبی کشمیر کے ضلع پلوامہ کے کانجی بل ترال علاقے میں سیکورٹی فورسز اور ملیٹنٹوں کے درمیان تصادم میں تین جنگجو ہلاک ہوئے۔ ترال انکاؤنٹر میں حزب کے ایک کمانڈر سمیت تین مقامی ملی ٹنٹ ہلاک ہوگئے ہیں۔ بیتی شب ایک بجے کے قریب کچھ لمن ترال کے قریب سکیورٹی فورسز کے ناکے پر انکاؤنٹر ہوا ہے۔

  • Share this:

جنوبی کشمیر کے ضلع پلوامہ کے کانجی بل ترال علاقے میں سیکورٹی فورسز اور ملیٹنٹوں کے درمیان تصادم میں تین جنگجو ہلاک ہوئے۔ ترال انکاؤنٹر میں حزب کے ایک کمانڈر سمیت تین مقامی ملی ٹنٹ ہلاک ہوگئے ہیں۔ بیتی شب ایک بجے کے قریب کچھ لمن ترال کے قریب سکیورٹی فورسز کے ناکے پر انکاؤنٹر ہوا ہے۔ تفصیلات کے مطابق ملی ٹنٹ جب ناکے پر پہنچے تو فورسز نے انھیں روکنے کی کوشش کی۔ اسی وقت ملی ٹنٹوں نے فورسز پر اندھا دھند فائرنگ کردی ۔ فورسز کی جوابی کاروائی میں تینوں ملی ٹنٹوں کو ہلاک کردیاگیا۔ دو ملی ٹنٹوں کا تعلق حزب المجاہدین سے اور ایک کا انصار غزوۃ الہند سے بتایاگیا۔ ملی ٹنٹوں کے قبضہ سے اسلحہ وگولہ بارود بھی برآمد کیاگیا۔ مہلوکین کی شناخت حزب کمانڈر جہانگیر رفیق وانی ساکن امیر آباد ترال،راجہ عمر مقبول ساکن لرگام ترال اور سعادت فاروق ساکن واگہامہ بجبہاڑہ کے طور پر کی گئی ہے۔


سرکاری ذرائع کے مطابق ملیٹنٹوں کے چھپنے کی مصدقہ اطلاع موصول ہوتے ہی فوج کی راشٹریہ رائفلز، پولیس کے سپیشل آپریشنز گروپ اور سی آر پی ایف کے اہلکاروں نے پلوامہ کے کانجی ترال علاقے کو منگل کی شب محاصرے میں لے لیا اور علاقے کی طرف آ نے جانے والے تمام راستوں کو سیل کردیا۔

انہوں نے بتایا کہ فورسز کی طرف سے تلاشی کارروائی کے دوران طرفین کے درمیان جھڑپ چھڑ گئی جس کے نتیجے میں تین ملیٹنٹ ہلاک ہوئے۔ پولیس ذرائع نے مہلوک ملیٹنٹوں  کی شناخت جہانگیر رفیق وانی، عمر مقبول بٹ اور عزیر امین بٹ کے بطور کی ہے جو انصار غزوۃ الہند نامی عسکری تنظیم سے وابستہ تھے۔ ذرائع کے مطابق سیکورٹی فورسز نے جائے تصادم آرائی سے اسلحہ, جس میں اے کے 47 اور اے کے 56 رائیفلز بھی شامل ہیں، بر آمد کیا ہے۔

First published: Feb 19, 2020 02:58 PM IST