ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں و کشمیر : سری نگر میں سیکورٹی فورسیز کے قافلہ پر دہشت گردانہ حملہ ، دو جوان شہید

سرکاری ذرائع نے بتایا کہ حملے کے بعد پورے علاقے کو محاصرے میں لیکر تلاشی آپریشن چلایا گیا نیز سری نگر – بارہمولہ ہائی وے پر قائم سبھی سیکورٹی ناکوں کو الرٹ کردیا گیا۔

  • Share this:
جموں و کشمیر : سری نگر میں سیکورٹی فورسیز کے قافلہ پر دہشت گردانہ حملہ ، دو جوان شہید
جموں و کشمیر : سری نگر میں سیکورٹی فورسیز کے قافلہ پر دہشت گردانہ حملہ ، دو جوان شہید ۔ (File Image)

سری نگر کے مضافاتی علاقہ خوشی پورہ ایچ ایم ٹی میں جمعرات کو دہشت گردوں کے ایک حملے میں سکیورٹی فورسز کے دو اہلکار شہید ہو گئے۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ دہشت گردوں نے جمعرات کو دوپہر کے وقت ایچ ایم ٹی علاقہ میں خوشی پورہ کے نزدیک سیکورٹی فورسز کی ایک کیو آر ٹی ٹیم کو نشانہ بنا کر اندھا دھند فائرنگ کی ۔


انہوں نے کہا کہ دہشت گردوں کے حملے میں دو سیکورٹی اہلکار زخمی ہوگئے ، جنہیں فوری طور پر فوجی اسپتال منتقل کیا گیا ۔ تاہم وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گئے ۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ حملے کے بعد پورے علاقے کو محاصرے میں لیکر تلاشی آپریشن چلایا گیا نیز سری نگر – بارہمولہ ہائی وے پر قائم سبھی سیکورٹی ناکوں کو الرٹ کردیا گیا۔




انہوں نے مزید کہا کہ دہشت گردوں کے اس حملے کے سلسلے میں متعلقہ پولیس تھانے میں کیس درج کر کے تحقیقات شروع کر دی گئی ہیں ۔

خیال رہے کہ اس سے پہلے گزشتہ ہفتہ پاکستان کی جانب سے جنگ بندی کی خلاف ورزی کی گئی تھی ۔ پاکستان کی جانب سے راجوری کے نوشیرہ سیکٹر میں ہندوستانی پوسٹ کو نشانہ بناتے ہوئے فائرنگ کی گئی تھی ۔ اس گولہ باری میں ایک جوان شہید ہوگیا جبکہ دوسرا سنگین طور پر زخمی ہوگیا ۔

قابل ذکر ہے کہ دہشت گردوں کو دراندازی کرانے کے مقصد سے ابھی تک اس سال پاکستان نے 4137 مرتبہ جنگ بندی کی خلاف ورزی کی ہے ۔ اس سے پہلے جموں علاقہ میں کئی وارداتوں کو دہشت گردواں نے انجام دیا تھا ۔

نیوز ایجنسی یو این آئی کے ان پٹ کے ساتھ ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Nov 26, 2020 04:20 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading