ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

شاہ نواز حسین نے محبوبہ مفتی کے آبائی علاقے میں ترنگا لہرا کر سابق وزیر اعلیٰ کو کیا چیلنج

بھارتیہ جنتا پارٹی کے قومی ترجمان سید شاہ نواز حسین نے کہا کہ سابق وزیر اعلی و پی ڈی پی صدر محبوبہ مفتی کے آبائی علاقے بجبہاڑہ میں آج لوگوں نے ترنگا لہرا کر محبوبہ مفتی کے اس دعوے کو غلط ثابت کیا جس میں انہوں نے کہا تھا کہ دفعہ 370 کے خاتمے کے بعد کشمیر میں ترنگا لہرانے کے لئے کوئی ہاتھ نہیں اٹھے گا۔

  • Share this:
شاہ نواز حسین نے محبوبہ مفتی کے آبائی علاقے میں ترنگا لہرا کر سابق وزیر اعلیٰ کو کیا چیلنج
شاہ نواز حسین نے محبوبہ مفتی کے آبائی علاقے میں ترنگا لہرا کر سابق وزیر اعلیٰ کو کیا چلینج

جموں کشمیر۔ جنوبی کشمیر (South Kashmir) کے بجبہاڑہ اننت ناگ میں بھارتیہ جنتا پارٹی ( BJP) کے قومی ترجمان سید شاہ نواز حسین (Shahnawaz Hussain) نے اپنے حامیوں کے سنگ ترنگا لہرا کر کہا کہ انہوں نے پی ڈی پی صدر و جموں کشمیر کی سابق وزیراعلی محبوبہ مفتی( Mehbooba Mufti) کا چلینج بے بنیاد ثابت کر دیا۔


بھارتیہ جنتا پارٹی کے قومی ترجمان سید شاہ نواز حسین (Shahnawaz Hussain) نے کہا کہ سابق وزیر اعلی و پی ڈی پی صدر محبوبہ مفتی ( Mehbooba Mufti) کے آبائی علاقے بجبہاڑہ میں آج لوگوں نے ترنگا لہرا کر محبوبہ مفتی کے اس دعوے کو غلط ثابت کیا جس میں انہوں نے کہا تھا کہ دفعہ 370 کے خاتمے کے بعد کشمیر میں ترنگا لہرانے کے لئے کوئی ہاتھ نہیں اٹھے گا۔ شاہ نواز حسین نے ان باتوں کا اظہار اننت ناگ کے بجبہاڑہ علاقے میں پارٹی کارکنوں کی ایک ریلی سے خطاب کے دوران کیا۔ اس موقع پر انکے ہمراہ وبود گپتا، صوفی یوسف و دیگر لیڈران بھی موجود تھے۔


انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی(PM Narendra Modi) کا نیا کشمیر کا خواب اب شرمندہ تعبیر ہو رہا ہے اور ملک کے ساتھ ساتھ بی جے پی اب جموں کشمیر کی سب سے مقبول سیاسی جماعت بن گئی ہے۔ جلسے سے وبود گپتا اور صوفی یوسف نے بھی خطاب کیا اور کارکنوں کو بی جے پی کو بنیادی سطح پر مضبوط بنانے کی تلقین کی۔ انہوں نے کہا کہ محبوبہ مفتی کے اس چلینج کے بعد نہ صرف جموں کشمیر کے چپے چپے بلکہ آج ان کے گھر میں بھی ترنگا لہرانے کے لئے ایک نہیں بلکہ ہزاروں ہاتھ کھڑے ہوۓ ہیں۔سید شاہ نواز حسین نے کہا کہ جموں کشمیر کے 90 فیصد عوام امن پسند ہیں جبکہ چند نوجوانوں کو بہکا کر انکے ہاتھ میں بندوقیں تھما دی جاتی ہیں اور انہیں جہاد کا غلط مطلب بتا کر ان کے ذہنوں کو خراب کیا جاتا ہے۔ لیکن بھارتیہ جنتا پارٹی ایسے نوجوانوں کو بندوق کی راہ ترک کرکے وزیراعظم نریندر مودی کا قلم تھامنے کی صلاح دیتی ہے جس سے انکا مستقبل سنور سکتا ہے۔


انہوں نے مزید کہا کہ جہاد کا مطلب ہتھیار اٹھا کر مارنا اور مرنا نہیں بلکہ مفلسی کو ختم کرنا ، لوگوں کی فلاح و بہبود کرنا اور تعلیم کو عام کرنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اسامہ بن لادن اور ابو بکر البغدادی جیسے دہشت گردوں کی وجہ سے بھلے ہی اسلام کا نام بدنام ہوا ہو جبکہ ان دہشت گردوں کا انجام موت کے سوا کچھ نہیں ہوا۔ لیکن یہ بات صادق ہے اسلام امن ، محبت ، اخوت اور بھائی چارے کا دین ہے ۔

کسانوں کے احتجاج  کو لیکر شاہ نواز حسین (Shahnawaz Hussain) نے کہا کہ کسانوں کے جائز مسائل کے حل کے حوالے سے ہمیشہ دروازے کھلے ہیں اور سرکار کسانوں کی فلاح و بہبود کی خاطر ہر  طرح کا اقدام کر رہی ہے۔ جبکہ ہر مسئلے کا حل بات چیت ہے اور سرکار کسانوں کے ساتھ بات چیت کے لئے ہر دم تیار ہے۔ انہوں نے کہا کہ کسانوں کو یہاں کی عدلیہ اور میڈیا پر بھی بھروسہ قائم رکھنا چاہیے جبکہ میڈیا بھی ان کی آواز کی نمائندگی کر سکتا ہے۔
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Dec 18, 2020 12:46 PM IST