உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Jammu and Kashmir: شوپیاں میں دہشت گردوں اور سیکورٹی اہلکاروں کے درمیان تصادم، 3 دہشت گرد ہلاک، جاری ہے انکاونٹر

    جموں وکشمیر: شوپیاں میں دہشت گردوں اور سیکورٹی اہلکاروں کے درمیان تصادم، 3 دہشت گرد ہلاک

    جموں وکشمیر: شوپیاں میں دہشت گردوں اور سیکورٹی اہلکاروں کے درمیان تصادم، 3 دہشت گرد ہلاک

    جموں وکشمیر کے شوپیاں ضلع میں منگل کو سیکورٹی اہلکاروں نے لشکر طیبہ کے تین دہشت گردوں کو ہلاک کر دیا۔ پولیس کے ایک افسر نے کہا کہ سیکورٹی اہلکاروں نے شوپیاں کے ناگبل علاقے میں دہشت گردوں کی موجودگی کی اطلاع ملنے کے بعد گھیرا بندی کرکے تلاشی مہم شروع کی۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Jammu and Kashmir | Srinagar
    • Share this:
      شوپیاں: جموں وکشمیر کے شوپیاں ضلع میں منگل کو سیکورٹی اہلکاروں نے لشکر طیبہ کے تین دہشت گردوں کو ہلاک کر دیا۔ پولیس کے ایک افسر نے کہا کہ سیکورٹی اہلکاروں نے شوپیاں کے ناگبل علاقے میں دہشت گردوں کی موجودگی کی اطلاع ملنے کے بعد گھیرا بندی کرکے تلاشی مہم شروع کی۔ مہم کے دوران تصادم شروع ہوگیا، جس میں سیکورٹی اہلکاروں نے دو دہشت گردوں کو مار گرایا۔

      پولیس ترجمان نے کہا، ’مارے گئے دہشت گرد ممنوعہ تنظیم لشکر طیبہ سے وابستہ تھے‘۔ اس وقت دونوں طرف سے رک رک کر گولہ باری ہو رہی ہے، جس میں اب تک تین دہشت گرد مارے جاچکے ہیں۔ واضح رہے کہ شوپیاں ضلع میں ہی کچھ دن قبل سیکورٹی اہلکاروں اور دہشت گردوں کے درمیان انکاونٹر ہوا تھا۔ اس دوران سیکورٹی اہلکاروں نے جیش محمد کے ایک دہشت گرد کو مار گرایا تھا۔ پولیس کے مطابق، سیکورٹی اہلکاروں نے بارہمولہ کے سوپور علاقے کے تلی بل گاوں میں دہشت گردوں کی موجودگی کی خبر پر گھیرا بندی کرکے تلاشی مہم چلائی تھی۔

      یہ بھی پڑھیں۔

      Kashmir: فوج کا بڑا سرچ آپریشن، علاقہ میں دیکھے گئے کئی مشتبہ افراد، پچھلی مرتبہ یہیں ہوا تھا بڑا انکاونٹر 

      وہیں جموں وکشمیر کے پولیس جنرل ڈائریکٹر (ڈی جی پی) دلباغ سنگھ نے بدھ کو کہا کہ شوپیاں میں کشمیری پنڈت سنیل کمار بھٹ کا قتل کرنے والے دہشت گردوں کی شناخت کرلی گئی ہے اور ان کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔ دلباغ سنگھ نے یہاں ایک پروگرام کے موقع پر نامہ نگاروں سے کہا، ’ہم نے اس کا (بھٹ کا) قتل کرنے والے دو دہشت گردوں کی پہچان کی ہے۔ آگے کی کارروائی کی جا رہی ہے۔ ہم اس پر کام کر رہے ہیں‘۔

      انہوں نے کہا کہ سنیل کمار کے قتل میں شامل لوگوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔ واضح رہے کہ شوپیاں ضلع میں منگل کو سیب کے باغ میں دہشت گردوں نے کشمیری پنڈت کمار کا گولی مار قتل کردیا تھا۔ حملے میں ان کا بھائی زخمی ہوگیا تھا۔ پولیس افسران کے مطابق، دو دہشت گرد صبح باغ میں آئے اور ان میں سے ایک نے دونوں بھائیوں پر اپنی اے کے-47 رائفل سے گولی باری شروع کردی۔ وہیں دوسرے نے اپنے موبائل فون سے اس حادثہ کو ریکارڈ کیا۔ انہوں نے بتایا کہ اس حملے میں سنیل کمار کی موقع پر ہی موت ہوگئی اور ان کے بھائی کو یہاں کے ایک فوجی اسپتال میں داخل کرایا گیا۔ سنیل کمار کی فیملی میں بیوی اور چار بیٹیاں ہیں۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: