உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Jammu Kashmir:سبھی خالی سرکاری آسامیوں پر اندرون 8ماہ ہوگی بھرتی، ایل جی نے کہا-شفاف ہوگا عمل، اشتہارات جلد

     لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے  کشمیر میں اندرون آٹھ ماہ خالی سرکاری آسامیوں پر بھرتی کا دلایا یقین۔

    لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے کشمیر میں اندرون آٹھ ماہ خالی سرکاری آسامیوں پر بھرتی کا دلایا یقین۔

    Jammu Kashmir: جموں و کشمیر میں اب تک جتنی بھی بھرتیاں ہوئی ہیں وہ پورے شفاف طریقے اور اہلیت کی بنیاد پر ہوئی ہیں۔ انتخاب کی اور کوئی بنیاد نہیں رہی،

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Jammu | Srinagar | Ladakh
    • Share this:
      Jammu Kashmir:لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے کہا ہے کہ جموں کشمیر میں سبھی خالی سرکاری آسامیوں پر آٹھ مہینوں میں بھرتی کا عمل مکمل کرلیا جائے گا۔ آج کی تاریخ میں خالی آسامیوں کو نامزد کیا جارہا ہے۔ ان کا اشتہار بھی جلد جاری کرنے کی کوشش ہوگی۔ کچھ لوگ چاہتے ہیںکہ پرانا زمانہ لوٹ آئے جس میں اہلیت کو درکنار کرکے گھر بیٹھے نوکری حاصل کرلیں، لیکن وہ زمانہ چلا گیا جب دکانوں پر نوکریاں دی جاتی تھیں۔

      ایل جی منوج سنہا نے یقین دلایا کہ بھرتی کا عمل شفافیت کے ساتھ مکمل کیا جائے گا اور صرف میرٹ کو بنیاد بنایا جائے گا۔ کل جمعرات کو کنونشن سنٹر میں منشیات سے پاک جموں و کشمیر مہم کے آغاز کے موقع پر وہ خطاب کر رہے تھے۔ انہوں نے مزید کہا کہ حکومت تمام محکموں میں خالی آسامیوں کی نشان دہی کر رہی ہے۔

      ان کا اشتہار دینے کی کوشش کی جائے گی کہ آٹھ مہینوں میں عمل مکمل کرلیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ بھرتی امتحان میں دھاندلی کرنے کی کچھ شرپسندوں نے سازش کی ہے۔ انہوں نے اس کام میں پیسے کا استعمال کیا جو اس پورے طریقہ کار کے پیچھے رہے انہوں نے ضرور نوجوانوں کو گمراہ کیا ہے۔

      انہوں نے بھروسہ دلایا کہ دنیا کی کوئی طاقت جموں کشمیر میں بے ایمانی نہیں کراسکتی ہے۔ اہلیت پر ہی نوکری ملے گی۔ انہوں نے کہا کہ گھر بیٹھے بنا پڑھے نوکری پانے کی چاہت رکھنے والوں کے منصوبوں پر پانی پھر گیا ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:

      J&K News: اودھمپور میں عدالت نے دو منشیات فروشوں کو سنائی 10 سال قید کی سزا

      یہ بھی پڑھیں:
      J&K News: ستمبر کے آخر میں جموں و کشمیر کا دورہ کرسکتے ہیں مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ

      حماقت کرنے والوں کو ملے گی سزا
      جموں و کشمیر میں اب تک جتنی بھی بھرتیاں ہوئی ہیں وہ پورے شفاف طریقے اور اہلیت کی بنیاد پر ہوئی ہیں۔ انتخاب کی اور کوئی بنیاد نہیں رہی، لیکن پچھلے دنوں دھاندلی کی وجہ سے تین امتحانات ایس آئی، فائنانس اسسٹنٹ اور جے ای کو منسوخ کرنا پڑا۔ شکایتیں ملنے کے بعد ہائی لیول کمیٹی تشکیل دے کر جانچ کرائی گئی، جس میں ثبوت ملے ہیں۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: