ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

پہلگام میں تازہ برف باری کے بعد جنوبی کشمیر شدید سردی کی زد میں ، سیاحتی صنعت کو نئی امید

سیاحت سے منسلک افراد کا کہنا ہے کہ تازہ برف باری کے بعد آنے والے سیاحتی سیزن کیلئے نئی امیدیں پیدا ہوگئی ہیں کیونکہ بالائی مقامات پر سیاحوں کو کافی وقت تک برفیلے نظارے دیکھنے کو ملیں گے۔ جسے کشمیر میں سیاحوں کی زیادہ تعداد کے آنے کی توقعات ہیں ۔

  • Share this:
پہلگام میں تازہ برف باری کے بعد جنوبی کشمیر شدید سردی کی زد میں ، سیاحتی صنعت کو نئی امید
پہلگام میں تازہ برف باری کے بعد جنوبی کشمیر شدید سردی کی زد میں ، سیاحتی صنعت کو نئی امید

جموں و کشمیر: عالمی شہرت یافتہ سیاحتی مقام پہلگام پھر ایک بار برف کی سفید چادر تلے دلکش نظارے پیش کر رہا ہے ۔ گزشتہ کئی روز سے جہاں وادی کشمیر میں بارشوں کا سلسلہ جاری ہے وہیں پہلگام کے بالائی اور میدانی علاقوں میں آج تازہ برف باری ہوئی ، جس کی وجہ سے پورے جنوبی کشمیر میں سردی کی لہر میں مزید شدت پیدا ہو گئی ہے ۔ تازہ برف باری کے بعد جہاں پہلگام میں عام زندگی کافی متاثر ہوگی وہیں سیاحتی صنعت سے جڑے افراد اسے سیاحتی صنعت کےلئے کافی سود مند قرار دے رہے ہیں ۔


ٹورزم سے منسلک افراد کا کہنا ہے کہ تازہ برف باری کے بعد آنے والے سیاحتی سیزن کیلئے نئی امیدیں پیدا ہوگئی ہیں کیونکہ بالائی مقامات پر سیاحوں کو کافی وقت تک برفیلے نظارے دیکھنے کو ملیں گے۔ جسے کشمیر میں سیاحوں کی زیادہ تعداد کے آنے کی توقعات ہیں ۔ تازہ برف کے بعد پہلگام اور اسے متصل علاقوں میں درجہ حرارت پھر ایک بار کم ہو گیا ہے جبکہ رات کا درجہ حراث منفی میں چلا گیا ہے ، جس کی وجہ سے عام لوگوں کو شدید سردی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے اور سردی کے ان ایام میں مزید مشکلات پیدا ہو گئی ہیں۔


ادھر وادی کشمیر میں گزشتہ کئی روز سے مسلسل بارشوں کا سلسلہ جاری ہے۔ جس کے بعد پورے کشمیر میں سردی کی شدید لہر پیدا ہو گئی ہے۔ لگاتار بارشوں کی وجہ سے میوہ کاشتکاروں اور کسانوں کو بھی طرح طرح کے خدشات لاحق ہو گئے ہیں۔


کاشتکاروں اور کسانوں کے مطابق لگاتار بارشوں کی وجہ سے فصلوں کو نقصان پہنچنے کا خدشہ ہے ۔ جبکہ میوہ درختوں کے پھول بھی گرنے کا خطرہ لاحق ہے ، جس کی وجہ سے میوہ کی پیداوار پر مستقبل میں منفی اثرات مرتب ہونے کا خدشہ ہے۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Mar 12, 2021 11:37 PM IST