اپنا ضلع منتخب کریں۔

    جموں کشمیر ہائی کورٹ نے JKSSB کی جے ای سول اور ایس آئی بھرتی امتحان پر لگی روک ہٹائی، نتائج جاری کرنے سے کیا منع

    جموں کشمیر ہائی کورٹ نے JKSSB کی جے ای سول اور ایس آئی بھرتی امتحان پر لگی روک ہٹائی، نتائج جاری کرنے سے کیا منع

    جموں کشمیر ہائی کورٹ نے JKSSB کی جے ای سول اور ایس آئی بھرتی امتحان پر لگی روک ہٹائی، نتائج جاری کرنے سے کیا منع

    بنچ نے مشاہدہ کیا کہ اس طرح کے تکنیکی اور خصوصی مہارتوں پر مشتمل معاملات میں الاٹمنٹ کے عمل کو دوسرے عام الاٹمنٹ کے عمل سے جوڑ کر نہیں دیکھا جا سکتا۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Jammu and Kashmir, India
    • Share this:
      جموں کشمیر سروس سلیکشن بورڈ( جے کے ایس ایس بی) جے ای سول اور پولیس سب انسپکٹر (ایس آئی) عہدوں کی بھرتی کا عمل جاری رکھے گا۔ ہائی کورٹ کے ڈویژن بنچ نے سنگل بنچ کے فیصلے پر روک لگاتے ہوئے جمعہ کو ایس ایس بی کو کارروائی جاری کرنے کی منظوری دے دی ہے۔

      حالانکہ عدالت کے اگلے حکم تک دونوں ہی بھرتیوں کے نتائج پر روک لگی رہے گی۔ ایک دن پہلے ہی ہائی کورٹ میں جسٹس وسیم صدیق نرگل کی رٹ کورٹ نے ایس ایس بی کو بھرتی عمل روکنے کا حکم دیا تھا۔ اس حکم کو ایس ایس بی نے ہائی کورٹ میں چیلنج کیا۔

      جسٹس سندھو شرما اور ونود چٹرجی کول کی ڈویژن بنچ نے درخواست پر سماعت کی۔ ایس ایس بی کی عرضی کو منظوری دیتے ہوئے اسے عمل جاری رکھنے کو کہا۔ اس سے پہلے ایس ایس بی کی جانب سے ایڈووکیٹ جنرل ڈی سی رینا نے کہا،موجودہ حالات میں انتہائی پیچیدہ تکنیکی مضامین کے لیے ٹینڈرز طلب کیے گئے ہیں۔

      اس کے لیے کام کی نوعیت اور اس کے مقصد کو سمجھنے کی ضرورت ہے۔ مسابقتی تجارتی شعبے میں یہ بات عام ہے کہ تکنیکی بولیوں کی جانچ تکنیکی ماہرین کرتے ہیں۔ بعض اوقات غیر متعلقہ لوگوں سے تھرڈ پارٹی کی مدد لی جاتی ہے۔

      بنچ نے مشاہدہ کیا کہ اس طرح کے تکنیکی اور خصوصی مہارتوں پر مشتمل معاملات میں الاٹمنٹ کے عمل کو دوسرے عام الاٹمنٹ کے عمل سے جوڑ کر نہیں دیکھا جا سکتا۔ بھرتی سے متعلق معاملہ تکنیکی مہارت سے متعلق ہے۔ اس کے مختلف معیار ہیں۔ ایسے تکنیکی معاملے کا عدالتی جائزہ مناسب نہیں ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      ایل جی سنہا کا حکم-امرناتھ یاتراکاموں کی تقسیم مارچ تک کردیں،زائرین کے لیے بڑھیں گے انتظام

      یہ بھی پڑھیں:
      کشمیری پنڈتوں کی سیکورٹی کا خاجہ تیار، دھمکی کے بعد پھر جموں لوٹنے لگے اہلکار

      یہ ضرور ہے کہ جو بھی فیصلہ لینا ہے، وہ ٹینڈر کے دستاویزات کے مطابق ہو۔ ایس ایس بی نے جس کو ٹینڈر دیا ہے، اسے دستاویزات کی بنیاد پر اور ٹینڈر کی تمام ضروریات کو پورا کرنے کے بعد دیا گیا ہے۔ عدالت کو تحمل کے اصول پر عمل کرنا چاہیے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: