உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    J&K News: ترمیم کے ساتھ حدبندی کی مسودہ رپورٹ جاری، 21 تک دے سکتے ہیں اعتراضات و تجاویز

    J&K News: ترمیم کے ساتھ حدبندی کی مسودہ رپورٹ جاری، 21 تک دے سکیں اعتراضات و تجاویز ۔ علامتی تصویر ۔

    J&K News: ترمیم کے ساتھ حدبندی کی مسودہ رپورٹ جاری، 21 تک دے سکیں اعتراضات و تجاویز ۔ علامتی تصویر ۔

    Jammu and Kashmir News: جموں وکشمیر میں اسمبلی حلقوں کی از سر نو حد بندی کردی گئی ہے ۔ حد بندی کمیشن کی جانب سے کچھ ترامیم کے ساتھ مسود کو عام کرنے کے ساتھ ہی عوام سے اعتراضات و تجاویز طلب کئے گئے ہیں ۔

    • Share this:
      Jammu and Kashmir News: جموں وکشمیر میں اسمبلی حلقوں کی از سر نو حد بندی کردی گئی ہے ۔ حد بندی کمیشن کی جانب سے کچھ ترامیم کے ساتھ مسود کو عام کرنے کے ساتھ ہی عوام سے اعتراضات و تجاویز طلب کئے گئے ہیں ۔ سات دنوں تک اعتراضات جمع کرائے جاسکتے ہیں ۔ 21 مارچ تک اعتراضات جمع کرائے جانے کے بعد کمیشن ان پر غور کرے گا ۔

       

      یہ بھی پڑھئے : کشمیری سائنسداں کا بڑا کارنامہ، تیار کیا میجک فوڈ ، پراسٹیٹ کینسر سے کرتا ہے بچاو


      اس کے ساتھ ہی اس مہینے کے آخر میں ریاست کا دورہ کرکے کمیشن لوگوں سے حدبندی اور اس سے وابستہ اعتراضات پر بات چیت کرسکتا ہے ۔ جموں کی سوچیت گڑھ سیٹ کو بحال کرکے آر ایس پورہ کو ختم کردیا گیا ہے ۔ اب آر ایس پورہ کا شہری علاقہ و تحصیل کا دسروپور ، آر ایس پورہ خاص و کوٹلی شاہدولا پٹوار سرکل کا حصہ جموں جنوب کے ساتھ جڑے گا ۔ جموں جنوب کا نام آر ایس پورہ ۔ جموں جنوب ہوگا ۔ سانبہ کا گوڑھا سلاتھیہ وجے پور کی بجائے سانبہ اسمبلی حلقہ کا حصہ ہوگا ۔

      ڈرافٹ رپورٹ کے مطابق نگرکوٹہ کا نام اب بھلوال ۔ نگرکوٹہ ہوگا ۔ وہیں رائے پور دومانا و گاندھی نگر سیٹ کا وجود ختم ہوگیا ہے ۔ ریاسی میں ماتا ویشنو دیوی اور جموں میں راجا باہولوچن کے نام پر باہو سیٹ ہوگی ۔ باہو کا علاقہ پہلے گاندھی نگر کے نام سے تھا ۔ راجوری میں کالاکوٹ سیٹ اب کالاکوٹ ۔ سندربنی کے نام سے جانی جائے گی ۔

       

      یہ بھی پڑھئے : کشمیر کی پہلی خاتون سائنسداں، جنہیں ملی SERB-POWER فیلوشپ


      سری نگر میں ہبہ کدل کو بحال کردیا گیا ہے جبکہ معاون اراکین ( ممبران پارلیمنٹ) کو سونپی گئی رپورٹ میں مجوزہ ضلع کی دیگر سیٹوں کے نام میں کوئی تبدیلی نہیں کی گئی ہے ۔ شوپیاں میں جیناپورہ نام سے نئی سیٹ بنی ہے ۔ شوپیاں و گاندربل میں صرف دو ہی سیٹیں ہوں گی ۔

      جموں میں چھ اور کشمیر میں ایک سیٹ کا اضافہ

      حد بندی کے مطابق ریاست کی اسمبلی میں سات سیٹیں بڑھائی گئی ہیں ۔ اس میں جموں میں چھ و کشمیر میں ایک سیٹ بڑھی ہے ۔ سات سیٹیں بڑھنے کے ساتھ ہی اسمبلی 90 اراکین پر مشتمل ہوگئی ہے ۔ پہلے 83 سیٹیں تھی ۔ پہلی مرتبہ ایس ٹی کو ریزرویشن دیا گیا ہے ۔

      کل سیٹیں : 90

      جموں ڈویزن : 43

      کشمیر ڈویزن: 47
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: