உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    دہشت گردوں کے اڑیں گے ہوش! 248 کروڑ روپئے کے جدید ترین ہتھیاروں سے لیس ہوگی جموں وکشمیر پولیس

    جموں وکشمیر پولیس 248 کروڑ روپئے کے جدید ترین ہتھیاروں سے لیس ہوگی۔

    جموں وکشمیر پولیس 248 کروڑ روپئے کے جدید ترین ہتھیاروں سے لیس ہوگی۔

    Jammu Kashmir: جموں وکشمیر میں سرحد پار سے دہشت گردوں کی دراندازی کی کوشش مسلسل جاری ہے۔ اس کے ساتھ ہی ریاست میں سرگرم دہشت گردوں کے پاس بھی چین اور پاکستان میں بنائے گئے جدید ہتھیار فراہم کئے جا رہے ہیں۔ ایسے میں ان دہشت گردوں سے لڑ رہی جموں وکشمیر پولیس کو بھی اب جدید ہتھیار ملنے جا رہے ہیں۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Jammu, India
    • Share this:
      جموں: جموں وکشمیر میں سرحد پار سے دہشت گردوں کی دراندازی کی کوشش مسلسل جاری ہے۔ اس کے ساتھ ہی ریاست میں سرگرم دہشت گردوں کے پاس بھی چین اور پاکستان میں بنائے گئے جدید ہتھیار فراہم کئے جا رہے ہیں۔ ایسے میں ان دہشت گردوں سے لڑ رہی جموں وکشمیر پولیس کو بھی اب جدید ہتھیار ملنے جا رہے ہیں۔ اس کے لئے 248 کروڑ روپئے کا بجٹ پاس ہونے کی خبر ہے۔ مانا جا رہا ہے کہ ان ہتھیاروں سے پولیس کے جوانوں کو دہشت گردوں سے لڑںے میں کافی مدد ملے گی۔

      واضح رہے کہ جموں وکشمیر پولیس نے کچھ وقت پہلے جدید ہتھیاروں کو لے کر وزارت داخلہ کو ایک تجویز بھیجی تھی۔ وہیں اب 19 ستمبر کو وزارت داخلہ کی ایک اہم میٹنگ ہونے جارہی ہے، جس میں جموں وکشمیر پولیس کے جنرل ڈائریکٹر دلباغ سنگھ اور وزارت داخلہ کے افسر شامل ہوں گے۔ اس میٹنگ میں جموں وکشمیر پولیس کو تقریباً 248 کروڑ روپئے کے نئے ہتھیار خریدنے کی منظوری مل سکتی ہے۔

      جموں وکشمیر پولیس نے کچھ وقت پہلے جدید ہتھیاروں کو لے کر وزارت داخلہ کو ایک تجویز بھیجی تھی۔
      جموں وکشمیر پولیس نے کچھ وقت پہلے جدید ہتھیاروں کو لے کر وزارت داخلہ کو ایک تجویز بھیجی تھی۔


      مرکز کے زیرانتظام ریاست جموں وکشمیر میں دہشت گردی سے جموں وکشمیر پولیس اپنے کئی ونگ کے ساتھ اس سے مقابلہ کر رہی ہے، لیکن کہیں نہ کہیں ہتھیاروں اور دیگر آلات کی کمی ضرور تھی، جسے اب پورا کرنے کے لئے پوری تیاری کی جارہی ہے۔

      یہ بھی پڑھیں۔

      جموں وکشمیر: قبائلی برادری کے لوگوں کے مویشیوں کے لئے ایک ہزار شیڈ تعمیر کرے گی انتظامیہ

      یہ بھی پڑھیں۔
      غلام نبی آزاد کی کانگریس پر تنقید، کہا- اندرا گاندھی کے وقت اسٹار رہا، اب پارٹی نے دو سال بٹھائے رکھا

      واضح رہے کہ کشمیر وادی میں گزشتہ ایک سال میں کئی دہشت گردوں کو مار گرایا گیا ہے، جس میں دہشت گردوں کے ٹاپ کمانڈر بھی شامل تھے۔ وہیں ایل او سی پر دراندازی کی کوشش کرنے کے دوران مارے گئے دہشت گردوں سے برآمد ہتھیاروں کو دیکھ کر ایسا لگتا ہے کہ چین اور پاکستان میں تیار ہتھیا ان دہشت گردوں کے پاس پہنچ رہے ہیں۔ پولیس کو ان سے مقابلہ کرنے کے لئے بھی جدید ہتھیاروں کی ضرورت تھی۔

      ایسے میں خبر ہے کہ سال 2020-2021 میں بھیجی گئی تجویز پر اب مہر لگنے جارہی ہے اور نئی سیریز کے ہتھیاروں کے ساتھ اب جوان دہشت گردوں سے مقابلہ کرنے میں پوری طرح کے اہل ہوں گے۔ کشمیر سمیت جموں صوبہ کے سرحدی علاقوں میں سرحد پار دراندازی کو روکنے کے لئے ہتھیاروں کے ساتھ ساتھ ڈرون، اینٹی ڈرون گن، اینٹی انفلٹیریشن گرڈ کے لئے سامان اور بلیٹ پروف گاڑی کی ضرورت ہے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: