ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

بانہال: ضلع رامبن میں کیلا موڑ کے مقام  شاہراہ کے منہدم حصے کی بحالی کا کام شروع

جموں سرینگر شاہراہ پر رامبن سے سرینگر کی طرف انے کے دوران رامبن سے چار کلومیٹر دور کیلا موڑ پُل کے پاس اتوار کی شام ساڑھے چھ بجے سڑک کا سولہ میٹر کا ایک بڑا حصہ ایک اونچی دیوار سمیت اچانک ڈھ گیا تھا اور واقع کے وقت وہاں نہ صرف فورلین شاہراہ کے تعمیراتی ورکر کام پر تھے بلکہ دھنستی سڑک پر اسوقت کئی گاڑیاں اور پیدل چل رہے کئی مقامی افراد بھی معجزاتی طور بچ نکلے تھے ۔

  • Share this:
بانہال: ضلع رامبن میں کیلا موڑ کے مقام  شاہراہ کے منہدم حصے کی بحالی کا کام شروع
جموں سرینگر شاہراہ

بانہال: رامبن کے کیلاموڑ پُل کے پاس جموں سرینگر قومی شاہراہ پر ایک بڑی دیوار سمیت سڑک کا ایک بڑا حصہ نکل کے بعد شاہراہ کی بحالی کا کام نیشنل ہائے وے اتھارٹی آف انڈیا نے فورلین شاہراہ کی تعمیراتی کمپنی سی پی پی پی ایل کی مدد سے اگرچہ ہنگامی بنیادوں پر اتوار کی رات سے ہی شروع کر رکھا ہے لیکن ڈھ جانے کی وجہ سے تباہ ہوئی سڑک کو تعمیر کرکے اسے قابل امدورفت بنانے میں کم از کم چار پانچ روز کا مزید وقت لگ سکتا ہے ۔ جموں سرینگر شاہراہ پر رامبن سے سرینگر کی طرف انے کے دوران رامبن سے چار کلومیٹر دور کیلا موڑ پُل کے پاس اتوار کی شام ساڑھے چھ بجے سڑک کا سولہ میٹر کا ایک بڑا حصہ ایک اونچی دیوار سمیت اچانک ڈھ گیا تھا اور واقع کے وقت وہاں نہ صرف فورلین شاہراہ کے تعمیراتی ورکر کام پر تھے بلکہ دھنستی سڑک پر اس وقت کئی گاڑیاں اور پیدل چل رہے کئی مقامی افراد بھی معجزاتی طور بچ نکلے تھے ۔


ضلع رامبن کے علاقوں میں کئی روز کی بارشوں اور برفباری کی وجہ سے شاہراہ چھ روز تک بند رہنے کے بعد ہفتے کو ہی بحال کی گئی تھی اور وادی کشمیر سے جموں کی طرف پچھلے دس روز سے مسافر بردار ٹریفک کو ابھی تک بحال ہی نہیں کیا جاسکا ہے۔ پیر کیلئے شاہراہ پر معمول کے مسافر بردار ٹریفک کو وادی کشمیر سے جموں کی طرف آنے کی اجازت تھی لیکن شاہراہ کے بند ہونے کے بعد اس ٹریفک کو بحال نہیں کیا جا سکا ۔ ہفتے کی شام کئی درجن مسافروں کو بانہال کے مسافر خانے یا مسافر راحت مراکز میں منتقیل کیا گیا تھا ۔


شاہراہ کی صورتحال کے حوالے سے بات کرنے پر ایس ایس پی ٹریفک نیشنل ہائے وے جتندر سنگھ جوہر نے نیوز 18 اردو کو فون پر بات کرتے ہوئے کہا کہ نیشنل ہائے وے اتھارٹی اف انڈیا نے تعمیراتی کمپنی کی مدد سے کیلاموڑ پُل کے پاس نکل گئی سڑک کی دیوار بنانے کا کام شروع کیا ہے اور شاہراہ کی بحالی میں کم از کم پانچ روز کا وقت درکار ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ سولہ میٹر اونچی اور اتنی ہی چوڑی دیوار کو بنانے اور اس کی بھرائی کرکے اسے قابل امدورفت بنانے میں نیشنل ہائے وے اتھارٹی اف انڈیا کو کم از کم پانچ روز لگیں گے اور اس دوران ایمرجنسی نوعیت کے مسافروں، سرکاری ملازموں اور مریضوں کو لانے لیجانے کیلئے متاثرہ مقام تک گاڑیوں کی ٹرانسشپمنٹ کو یقینی بنایا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ سب ڈویژن رامسو اور سب ڈویژن بانہال سے قاضیگنڈ تک اور جموں سے رامبن اور ڈوڈہ کشتواڑ تک معمول کا ٹریفک متاثر ہوئے بغیر چل رہا ہے ۔

انہوں نے کہا کہ اتوار کی شام سڑک کے دھنس جانے سے پہلے تک شاہراہ پرجموں سے وادی کشمیر کی طرف چھوڑا گیا تقریبا تمام ٹریفک اپنی اپنی منزلوں کو پہنچ چکا تھا اور چند درجن ٹرکوں اور مقامی مسافر گاڑیوں کو چھوڑ کر شاہراہ پر کسی بھی قسم کا ٹریفک درماندہ نہیں ہے ۔
Published by: Sana Naeem
First published: Jan 12, 2021 04:24 PM IST