உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    کشمیر کبھی بھی پاکستان کا حصہ نہیں بنے گا : فاروق عبداللہ

    کشمیر کبھی بھی پاکستان کا حصہ نہیں بنے گا : فاروق عبداللہ

    کشمیر کبھی بھی پاکستان کا حصہ نہیں بنے گا : فاروق عبداللہ

    Jammu and Kashmir News : نیشنل کانفرنس کے صدر و رکن پارلیمنٹ ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے کہا کہ کشمیر کبھی بھی پاکستان کا حصہ نہیں بنے گا ۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      سری نگر : نیشنل کانفرنس کے صدر و رکن پارلیمنٹ ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے کہا کہ کشمیر کبھی بھی پاکستان کا حصہ نہیں بنے گا ۔ انہوں نے یہ بات بدھ کو گردوارہ شہید بنگا صاحب باغات برزلہ میں مقتول اسکول پرنسپل سپندر کور کے انتم ارداس کے موقع پر خطاب کرتے ہوئے کہی ۔ فاروق عبداللہ نے سپندر کور کی ہلاکت کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے ان درندوں کا مقابلہ کرنا ہے۔ کشمیر کبھی پاکستان کا حصہ نہیں بنے گا۔ یہ بات آپ یاد رکھیں ۔ کشمیر ہندوستان کا حصہ ہے اور حصہ رہے گا چاہے کچھ بھی ہو جائے۔ کیوں نہ مجھے بھی گولی ماری جائے ۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ ہم نے حوصلہ رکھنا ہے ۔ ان کا مقابلہ کرنا ہے۔ صرف آپ نے نہیں بلکہ ہم سب کو کرنا ہے۔ جب سب بھاگ گئے تو ایک قوم تھی جو یہیں رہی وہ آپ کی تھی ۔ ہمیں یہاں رہنا ہے اور یہیں مرنا ہے۔ مجھے آپ پر فخر ہے۔ آپ نے تب مجھے حوصلہ دیا اس وقت ۔

      بعد ازاں فاروق عبداللہ نے نامہ نگاروں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ مسلمانوں، ہندووں ، سکھوں اور عیسائیوں کو مضبوطی کے ساتھ کھڑا رہنا ہوگا ۔ یہی ہماری کامیابی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ملک میں ایک طوفان بپا ہے ، جس میں لوگوں کو مذہب کے نام پر تقسیم کیا جا رہا ہے ۔ اگر اس طوفان کو نہیں روکا گیا تو ہندوستان تباہ ہو جائے گا۔ فاروق عبداللہ نے کہا کہ سارے ہندوستان میں ایک طوفان بپا ہے اور مسلمانوں، ہندووں، سکھوں کو بانٹا جا رہا ہے ۔ بانٹنے کی اس سیاست کو بند کرنا ہوگا اگر اس کو بند نہیں کیا گیا تو ہندوستان بھی نہیں بچے گا ہم سب کو اکٹھے ہو کر رہنا ہے ۔

      کشمیر میں ہونے والی شہری ہلاکتوں کے بارے میں ان کا کہنا تھا کہ ہمیں ان کا مقابلہ کرنا ہے، ہمت نہیں ہارنی ہے ان سے ڈرنا نہیں ہے، یہ لوگ کبھی بھی کامیاب نہیں ہوں گے ۔ دیویندر سنگھ رانا اور سرجیت سنگھ سلاتھیا کے پارٹی سے مستعفی ہونے کے بارے میں پوچھے جانے پر ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے کہا کہ جماعت میں لوگ آتے جاتے رہتے ہیں یہ کوئی بڑی بات نہیں ہے ۔

      بتا دیں کہ 7 اکتوبر کی صبح بائز ہائر سیکنڈری سکول عید گاہ سری نگر کے احاطے میں نامعلوم اسلحہ برداروں نے اسکول پرنسپل سپندر کور ساکن آلوچی باغ سری نگر اور ان کے ایک ساتھی دیپک چند ساکن جموں کو گولیاں بر سا کر ابدی نیند سلا دیا تھا۔

      نیشنل کانفرنس کے ایک ترجمان نے بتایا کہ ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے گردوارہ شہید بنگا صاحب باغات برزلہ کے دورے کے دوران لواحقین کی ڈھارس بندھائی۔ ان کے ہمراہ پارٹی کے صوبائی صدر ناصر اسلم وانی، ٹریجرر سردار شمی اوبرائے، اقلیتی سیل کے کنوینر جگدیش سنگھ آزاد اور تنویر صادق بھی تھے ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: