ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں وکشمیر کے مایہ ناز مزاحیہ اداکار نے دنیا کو کہہ دیا الوداع، شادی لال کول کے انتقال سے ادبی اور ثقافتی حلقوں میں رنج وغم

جموں وکشمیر کے مایہ ناز مزاحیہ اداکار شادی لال کول کا آج صبح جموں میں اپنی رہایش گاہ پر انتقال ہوگیا۔ کئی دنوں سے کینسر کی بیماری میں مبتلا تھے۔

  • Share this:
جموں وکشمیر کے مایہ ناز مزاحیہ اداکار  نے دنیا کو کہہ دیا الوداع، شادی لال کول کے انتقال سے ادبی اور ثقافتی حلقوں میں رنج وغم
جموں وکشمیر کے مایہ ناز مزاحیہ اداکار شادی لال کول کا انتقال

جموں: جموں وکشمیر کے مایہ ناز مزاحیہ اداکار شادی لال کول کا آج صبح جموں میں اپنی رہایش گاہ پر انتقال ہوگیا۔ کئی دنوں سے کینسر کی بیماری میں مبتلا تھے۔ شادی لال کول کے انتقال کی خبر پھیلتے ہی ادبی، ثقافتی اور دیگر تمام حلقوں میں رنج و غم کی لہر دوڈ گئی ہے اور فنکاروں کے ساتھ ساتھ زندگی کے دیگر شعبوں سے تعلق رکھنے والے لوگوں نے ان کے انتقال پر گہرے رنج کا اظہار کرتے ہوئے لواحقین سے اظہار تعزیت کی ہے۔ واضح رہے کہ ہمہ جہت شخصیت کے مالک شادی لال کول کا اداکاری کا سفر کئی دہائیوں پر محیط ہے اور انہوں نے اپنی اداکاری سے لوگوں کے دلوں پر راج کرکے مزاحیہ اداکاری میں اولین مقام حاصل کیا تھا۔


شادی لال کول کی پیدائش سری نگر میں ہوئی۔ شادی لال کول  نے اداکاری کا آغاز1973 میں کالی داس تھیٹر سے کیا۔ 1974 ٹیلی ویژن پر جاری کردہ سیریل میں اپنی اداکاری کے جادو بھکیر نا شروع کیا تھا۔ ٹیلی ویژن پر ایک سو سے زائد اداکاری کے پروگرام پیش کئے۔ ان کے مشہور پروگرام شب رنگ، آدم زاد، بو ونا پوز، انتقام، غلام بیگم بادشاہ، رستم گوتا، زینہ کاک وغیرہ قابل ذکر ہیں۔ آرٹ کے میدان غیر معمولی خدمات انجام دینے پر شادی لال کول کو 2007 میں صادق میموریل ایوارڈ سے سرفراز کیا گیا۔ آرٹ کی دنیا میں شادی لال کول نے مختلف قسم کے رول اسٹیج کئے۔ وہ کردار نگاری میں اپنی مثال آپ تھے۔


جموں وکشمیر میں بچے سے لیکر بوڑھے تک شادی لال کول کی اداکاری سے مسرت سے سرشار ہوتے ہیں۔ ٹیلی ویژن پر شوق سے ان کی اداکاری کو دیکھا جاتا ہے۔ شادی لال کول کو نہ صرف کشمیری زبان سے بے حد لگاؤ تھا بلکہ اس مادری زبان یعنی کشمیری زبان کی ترویج اور فروغ کے لیے اپنی پوری زندگی صرف کی۔ مختلف سیریلوں میں جس انداز  اور جس زبان سے شادی لال کو نے اپنی اداکاری پیش کی اس کی نظیر نہیں ملتی۔ وادی کشمیر میں خاص طور پر نوجوان نسل جو مزاحیہ اداکاری میں اپنا نام کما رہے ہیں وہ شادی لال کول کی اداکاری سے بے حد متاثر ہیں۔ وادی کے ایک نوجوان ادکار نے نیوز 18 اردو کو بتایا کہ انہوں نے شادی لال کول کی مزاحیہ اداکاری سے متاثر ہوکر ہی اس میدان میں قدم رکھا۔ انہوں نے کہا کہ شادی لال کول کے انتقال سے وہ ایک عظیم انسان کی شفقت سے محروم ہوگئے۔  ان کے انتقال سے مزاحیہ اداکاری کے میدان میں جو خلا پیدا ہوا وہ پر کرنا بہت ہی مشکل ہے۔ شادی لال کول کی اداکاری بہت دیر تک یاد کی جائے گی۔

Published by: Nisar Ahmad
First published: Jul 12, 2020 08:59 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading