ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں وکشمیر میں لیفٹیننٹ گورنر نے اٹھایا بڑا قدم، کووڈ ٹاسک فورس کی تشکیل

جموں وکشمیر میں کووڈ صورتحال سے نمٹنے کے لئے ایل جی انتظامیہ متحرک ہوگئی ہے۔ ایل جی نے ڈی سیز، ایس پیز کی ایک اعلی سطعی ٹاسک فورس ہر ضلع میں قائم کیا ہے یہ ٹاسک فورس پنچائت سطح پر کووڈ صورتحال سے نمٹنے میں اہم کردار ادا کریں گے۔

  • Share this:
جموں وکشمیر میں لیفٹیننٹ گورنر نے اٹھایا بڑا قدم، کووڈ ٹاسک فورس کی تشکیل
جموں وکشمیر میں لیفٹیننٹ گورنر نے اٹھایا بڑا قدم، کووڈ ٹاسک فورس کی تشکیل

جموں: جموں وکشمیر میں کووڈ صورتحال سے نمٹنے کے لئے ایل جی انتظامیہ متحرک ہوگئی ہے۔ ایل جی نے ڈی سیز، ایس پیز کی ایک اعلی سطعی ٹاسک فورس ہر ضلع میں قائم کیا ہے یہ ٹاسک فورس پنچائت سطح پر کووڈ صورتحال سے نمٹنے میں اہم کردار ادا کریں گے۔ گھنے علاقوں میں ہجوم کو روکنے کے جدید طریقے دریافت، مذہبی مقامات، مارکیٹ اور عوامی مقامات پر زیادہ توجہ دیں گے۔


کووڈ مناسب طرز عمل پرپابندیوں کے نفاذ، سیاحتی مقامات پر رہنما اصولوں کو یقینی بنایا جائے۔ لوگوں کو تیسری لہر کے خطرے کے بارے میں تعلیم دینی ہوگی، وہی 13 اضلاع نے 45 اور اسے زیادہ عمرکے گروپوں میں 100 فیصد ویکسینشن دی گئی ہے۔ کالجوں اور یونیورسٹیوں میں بھی ترجیح بنیادوں پر ویکسین دیئے جائیں گے۔ لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے سینئر عہدیداروں ایسپیز، ڈپٹی کمشنرس سے صورتحال پر تبادلہ خیال کیا۔


 کووڈ ٹاسک فورس کے اجلاس کے دوران، لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے صحت کے انفراسٹرکچر، آکسیجن پلانٹس اور کورونا وائرس کے پھیلاؤ پر قابو پانے کے اقدامات کے بارے میں بھی جائزہ لیا۔

کووڈ ٹاسک فورس کے اجلاس کے دوران، لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے صحت کے انفراسٹرکچر، آکسیجن پلانٹس اور کورونا وائرس کے پھیلاؤ پر قابو پانے کے اقدامات کے بارے میں بھی جائزہ لیا۔


کووڈ ٹاسک فورس کے اجلاس کے دوران، لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے صحت کے انفراسٹرکچر، آکسیجن پلانٹس اور کورونا وائرس کے پھیلاؤ پر قابو پانے کے اقدامات کے بارے میں بھی جائزہ لیا۔ لیفٹیننٹ گورنر نے عہدیداروں کو ہدایت کی کہ وہ کورونا وائرس کی ممکنہ تیسری لہر یا مستقبل میں ہونے والی کسی بھی صحت کی ہنگامی صورتحال سے نمٹنے کے لئے پہلے ہی تیار رہیں۔ آکسیجن جنریشن پلانٹوں کی فعالیت کا جائزہ لیتے ہوئے، لیفٹیننٹ گورنر نے ڈسٹرکٹ اسپتالوں میں آئی سی یو کے موثر انداز میں کام کرنے کے لئے دستیاب آکسیجن صلاحیت سے استفادہ کرنے کا مشورہ دیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ اس سے جی ایم سی میں مریضوں کا دباو بھی کم ہوجائے گا۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Jul 19, 2021 05:41 PM IST