ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں وکمشیر: بڈگام میں لاک ڈاون کی اڑائی گئیں دھجیاں، بازاروں میں لوگوں کا جم غفیر

وسطی کشمیر کے ضلع بڈگام میں لاک ڈاون کی دھجیاں اڑائی گئیں۔ ضلع بڈگام میں کورونا وائرس کے بڑھتے معاملات کو دیکھتے ہوئے ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ بڈگام نے گزشتہ روز ایک حکم نامہ جاری کیا، جس میں لاک ڈاون کو 31 جولائی سے 4 اگست تک بڑھا دیا گیا۔

  • Share this:
جموں وکمشیر: بڈگام میں لاک ڈاون کی اڑائی گئیں دھجیاں، بازاروں میں لوگوں کا جم غفیر
جموں وکمشیر :ضلع بڈگام میں  لاک ڈاون کی اڑائی گئی دھجیاں, بازاروں میں لوگوں کا جم غفیر

بڈگام: وسطی کشمیر کے ضلع بڈگام میں لاک ڈاون کی دھجیاں اڑائی گئیں۔ ضلع بڈگام میں کورونا وائرس کے بڑھتے معاملات کو دیکھتے  ہوئے ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ بڈگام نے گزشتہ روز ایک حکم نامہ جاری کیا، جس میں لاک ڈاون کو 31 جولائی سے 4 اگست تک بڑھا دیا گیا۔ حکم نامہ میں کہا گیا کہ تمام ضلع میں لاک ڈاون سختی سے نافذ ہوگا۔ تاہم اس حکم نامے کی دھجیاں اڑائی گئیں۔ ماگام، بیروہ، نارہ بل اور دیگر مقامات پر اس حکم نامےکا کوئی اثر دیکھنے کونہیں ملا۔ سب سے بڑے بازار ماگام میں عید کی خریداری کرتے ہوئے لوگوں کاجم غفیر نظر آیا۔ اس دوران نہ ہی سماجی فاصلےکا خیال رکھا گیا نہ ہی پابندی سے ماسک کا استعمال کیا گیا۔


گلمرگ سرینگرہائی وے پرگاڑیوں کی اتنی بھیڑ رہی کہ گھنٹوں تک مختلف جگہوں پر ٹریفک جام رہا۔ اے ٹی ایم مشینوں پر لمبی لمبی قطاروں میں لوگ  پیسے نکالنے کےلئے انتظار کررہے تھے۔ اس دوران بھی سماجی فاصلے کا کوئی پاس و لحاظ  نہیں رکھا گیا۔ انتظامیہ بھی خواب غفلت میں نظر آئی۔ ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ بڈگام نے ایس ایس پی بڈگام اور سری نگر، متعلقہ ایس ڈی ایم، تحصیلداروں، نائب تحصیلداروں، ایگزیکٹیو مجسٹریٹ، ایس ڈی پی اوز، ایس ایچ اوز کو مطلع کیا تھا کہ وہ اپنے اپنے حدود میں سختی سے پابندیاں نافذ کریں۔ تاہم اس کا اثر کہیں دیکھنے کو نہیں ملا۔


سب سے بڑے بازار ماگام میں عید کی خریداری کرتے ہوئے لوگوں کاجم غفیر نظر آیا۔ اس دوران نہ ہی سماجی فاصلےکا خیال رکھا گیا نہ ہی پابندی سے ماسک کا استعمال کیا گیا۔
سب سے بڑے بازار ماگام میں عید کی خریداری کرتے ہوئے لوگوں کاجم غفیر نظر آیا۔ اس دوران نہ ہی سماجی فاصلےکا خیال رکھا گیا نہ ہی پابندی سے ماسک کا استعمال کیا گیا۔


نیوز 18 اردو کو کچھ سماجی کارکنوں نے  بتایا کہ لاک ڈاون کی خلاف ورزی کرنے سے صاف ظاہر ہوتا ہے کہ انتظامیہ کےحکم نامے صرف کاغذوں تک ہی محدود ہوتے ہیں۔ انہوں نے ان حکم ناموں کو صرف کاغذی گھوڑے دوڑانے کے مترادف قرار دیا۔ انہوں نے مزید بتایا کہ زمینی سطح پر ان حکم ناموں کا کوئی اثر دیکھنےکو  نہیں مل رہا ہے۔ وادی کشمیر میں ہر روز کورونا وائرس کے مثبت کیس بڑھنے جارہے ہیں، جس سے پریشانی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ بلکہ  اموات کا نہ تھمنے والاسلسلہ بھی جاری ہے۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Aug 01, 2020 12:00 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading