ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

جموں وکشمیر: 'امن، ترقی، خوشحالی اور عوام پہلے' حال اور نئے مستقبل کے چار منتر: منوج سنہا

لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے 'آئی آئی ٹی 2020 مستقبل اب ہے' کے گلو بل سمٹ میں ہفتے کو کلیدی خطبہ پیش کرتے ہوئے کہا کہ حال اور نئے مستقبل کے لئے میرے پاس چار منتر یعنی 'امن، ترقی، خوشحالی اور عوام پہلے' ہیں۔ جموں وکشمیر کے لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے 'امن، رقی، خوشحالی اور عوام پہلے' حال اور نئے مستقبل کو چار منتر قرار دیا۔

  • UNI
  • Last Updated: Dec 06, 2020 01:20 AM IST
  • Share this:
جموں وکشمیر: 'امن، ترقی، خوشحالی اور عوام پہلے' حال اور نئے مستقبل کے چار منتر: منوج سنہا
'امن، ترقی، خوشحالی اور عوام پہلے' حال اور نئے مستقبل کے چار منتر: منوج سنہا

جموں: جموں وکشمیر کے لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے 'آئی آئی ٹی 2020 مستقبل اب ہے' کے گلو بل سمٹ میں ہفتے کو کلیدی خطبہ پیش کرتے ہوئے کہا کہ حال اور نئے مستقبل کے لئے میرے پاس چار منتر یعنی 'امن، ترقی، خوشحالی اور عوام پہلے' ہیں۔ سمٹ کا انعقاد پین آئی آئی ٹی یو ایس اے نے کیا ہے۔ سمٹ کا مقصد دلی لانے والوں اختراع کار اور مفکرین کو ساتھ لا کر انسانیت کے مستقبل ایک نئی شکل دینے کی جانب راغب کرنا ہے۔ اپنے خطبے میں لیفٹیننٹ گورنر نے پین آئی آئی ٹی یو ایس اے کو عالمی معیشت، نئی ٹیکنالوجی کی دریافت، صحت اور مسکن کا تحفظ اور آفاقی تعلیم جیسے مسائل پر گلوبل سمٹ کے ذریعے توجہ مرکوز کرنے پر سراہا۔ عالمی تجارتی ماحول پر اپنی رائے کا اظہار کرتے ہوئے لیفٹیننٹ گورنر نے کہا کہ ہم نئے راستے، نئی پالیسیاں اور نئے تکنیکی آلات بنا رہے ہیں تاکہ وبا کے بعد کی دنیا کے لئے اپنے تجارتی ماحول کو مستحکم بنا رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ حال اور نئے مستقبل کے لئے میرے پاس چار منتر یعنی 'امن، ترقی، خوشحالی اور عوام پہلے' ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ ایک سول انجینئر طالب علم ہونے کے سبب مجھے اس بات کا احساس ہے کہ پائیدار ترقی کے لئے ہماری پالیسیاں عوام دوست ا ور ہر طبقے کا ملحوظ رکھ کر بنائی جانی چاہیے۔ گھریلو سرمایہ کاری اور کھپت پر توجہ مرکوز کرنے کے ساتھ ساتھ عالمی بازار میں بڑے اداروں کے ساتھ مقابلہ آرائی کے لئے بھی تیاری کرنی ہوگی۔ آئی آئی ٹی سے فارغ التحصیل افراد کے انمول خدمات کو سراہتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ان کی وجہ سے تجارتی ماحول پنپ سکا ہے۔

انہوں نے کہا کہ بھارتی کافی باصلاحیت ہیں اگرچہ عالمی سطح پر ہماری صلاحیت کا نخلستان ایک قطرہ جیسا دیکھے گا تاہم یہ تکنیکی دریافتوں کے ایک بڑے دریا کی ندی نالے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ آئی آئی ٹیز سے فارغ التحصیل ہوئے پیشہ واروں نے ایک بار پھر اپنی صلاحیتوں کا مظاہر کر کے کووڈ کی روکتھام کے لئے اختراعی حل نکالے ہیں۔

جموں و کشمیر میں تجارتی مواقع کا ذکر کرتے ہوئے لیفٹیننٹ گورنر نے کہا کہ اختراعی خیالات سے لیس ایک نوجوان آبادی صنعت کاری کے خوابوں کی تعبیر کے لئے تیار ہے اور آتما نربھر جموں و کشمیر کی خدمت پر کمر بستہ ہے۔ موافق ماحول اور ایک فعال جمہوری نظام ہے باصلاحیت مردو خواتین نئی تجارتوں اور خدمات قائم کرنے کے لئے تیار ہے۔ لیفٹیننٹ گورنر نے ابھرتے صنعت کاروں کو فروغ دینے کے لئے اٹھائے گئے اقدامات کو اجاگر کرتے ہوئے کہا کہ یوٹی حکومت نے 4290 پنچایتوں سے دو نوجوان مردو خواتین کو اپنے صنعتی یونٹ قائم کرنے کے لئے مدد فراہم کی ہے اور اب تک زائد از8600 نوجوان صنعت کاروں کو حکومت مدد فراہم کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم ایک ریموٹ معاشرہ بن رہے ہیں جس میں ورچیول ایک عام بات ہے اور علم و دانش کے اداروں اور صنعتوں کے مابین قریبی تال میل وقت کا تقاضا اور مانگ ہے۔

Published by: Nisar Ahmad
First published: Dec 05, 2020 11:58 PM IST