உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    کشمیری طلبہ کو بیچی پاکستان میں MBBS سیٹیں، رقم خرچ کی دہشت گردی پر، اب کیس درج

    جموں کشمیر پولیس نے پہلی چارج شیٹ اس معاملے میں داخل کی ہے۔ (علامتی تصویر)

    جموں کشمیر پولیس نے پہلی چارج شیٹ اس معاملے میں داخل کی ہے۔ (علامتی تصویر)

    ذرائع نے پولیس کو جانکاری دیتے ہوئے کہا تھاکہ حریت کے کچھ لیڈر اور دیگر لوگوں نے کچھ ایجوکیشنل کنسلٹینٹس کے ساتھ مل کر پاکستان میں MBBS سیٹوں اور کالجوں و یونیورسٹیوں میں سیٹوں کو بیچ کر رقم وصول کی ہے۔

    • Share this:
      سرینگر: جموں کشمیر (Jammu Kashmir) پولیس کی خصوصی جانچ ایجنسی (SIA) نے کشمیری طلبہ کو پاکستان (Pakistan) میں MBBS کی سیٹوں کو بیچنے اور اس سے وصول کی گئی رقم کو دہش گردی پر خرچ کرنے کے ملزمین پر پہلی چارج شیٹ داخل کی ہے۔ پولیس نے بتایا ہے کہ ان میں ایک حریت لیڈر سمیت نو لوگ شامل ہیں۔ اس بارے میں پولیس عہدیداروں نے کہا کہ یہ کیس پچھلے سال جولائی میں سامنے آیا تھا۔ اس کی گہرائی سے جانچ کرنے اور ثبوت تلاش کرنے کے بعد یہ کارروائی کی گئی۔

      ذرائع نے پولیس کو جانکاری دیتے ہوئے کہا تھاکہ حریت کے کچھ لیڈر اور دیگر لوگوں نے کچھ ایجوکیشنل کنسلٹینٹس کے ساتھ مل کر پاکستان میں MBBS سیٹوں اور کالجوں و یونیورسٹیوں میں سیٹوں کو بیچ کر رقم وصول کی ہے۔ یہ کیس پہلے پولیس کی کرائم انوسٹی گیشن ڈپارٹمنٹ (CID) کی ایک برانچ، کاونٹر انٹلیجنس کشمیر (CIK) کے پاس آیا تھا۔ یہ برانچ اب ایس آئی اے ہوگئی ہے۔

      چارج شیٹ میں کئی مشہور نام
      ایس آئی اے نے حریت کانفرنس کے گروپ سالویشن موومنٹ کے صدر محمد اکبر بھٹ عرف ظفر اکبر بھٹ کے خلاف عدالت میں چارج شیٹ داخل کی ہے۔ اس میں دیگر لوگوں کے نام عبدالجبار، فاطمہ شاہ، الطاف احمد بھٹ قاضی یاسر، محمد عبداللہ شاہ، سبزار احمد شیخ، منظور احمد شاہ، سید خالد گیلانی اور محاذ آزادی فرنٹ کے محمد اقبال میر کے نام شامل ہیں۔ پولیس عہدیدار نے کہا کہ جانچ کے دوران زبانی، دستاویزی اور تکنیکی شواہد اکٹھے کیے گئے ہیں۔

      برہان وانی کو ڈھیر کرنے کے بعد بدامنی پھیلانے میں رقم کا استعمال
      جانچ میں پتہ چلا ہے کہ ایم بی بی ایس اور دیگر پیشہ ور ڈگریوں سے متعلق سیٹیں اُن طلبہ کو دی جاتی تھیں جو مارے گئے دہشت گردوں کے قریبی رشتہ دار ہوتے تھے۔ یہ سبھی ثبوت پیش کیے گئے کہ وصول کی گئی رقم کو اُن سرگرمیوں میں لگایا گیا جو دہشت گردی اور علیحدگی پسندوں سے متعلق پروگراموں کی حمایت کرتے تھے۔ ممنوعہ دہشت گرد تنظیم حزب المجاہدین کے دہشت گرد برہان وانی کو مار گرائے جانے کے بعد بدامنی پھیلانے کے لئے بھی رقم کا استعمال ہوا تھا۔

      قومی، بین الاقوامی اور جموں وکشمیر کی تازہ ترین خبروں کےعلاوہ تعلیم و روزگار اور بزنس کی خبروں کے لیے نیوز18 اردو کو ٹویٹر اور فیس بک پر فالو کریں ۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: