உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    جموں وکشمیر: سی سی ٹی این ایس پروجیکٹ کے نفاذ کے لئے ڈی جی پی دلباغ سنگھ کی قیادت میں میٹنگ

    مرکزکے زیر انتظام جموں وکشمیر میں کرائم اینڈکریمنل ٹریکنگ نیٹ ورک سسٹم (سی سی ٹی این ایس) پروجیکٹ کے نفاذ کے لئے 27ویں با اختیارکمیٹی کی میٹنگ ڈائریکٹرجنرل آف پولیس، جموں و کشمیر دلباغ سنگھ کی صدارت میں منعقد ہوئی۔

    مرکزکے زیر انتظام جموں وکشمیر میں کرائم اینڈکریمنل ٹریکنگ نیٹ ورک سسٹم (سی سی ٹی این ایس) پروجیکٹ کے نفاذ کے لئے 27ویں با اختیارکمیٹی کی میٹنگ ڈائریکٹرجنرل آف پولیس، جموں و کشمیر دلباغ سنگھ کی صدارت میں منعقد ہوئی۔

    مرکزکے زیر انتظام جموں وکشمیر میں کرائم اینڈکریمنل ٹریکنگ نیٹ ورک سسٹم (سی سی ٹی این ایس) پروجیکٹ کے نفاذ کے لئے 27ویں با اختیارکمیٹی کی میٹنگ ڈائریکٹرجنرل آف پولیس، جموں و کشمیر دلباغ سنگھ کی صدارت میں منعقد ہوئی۔

    • Share this:
    جموں کشمیر: مرکزکے زیر انتظام جموں وکشمیر میں کرائم اینڈکریمنل ٹریکنگ نیٹ ورک سسٹم (سی سی ٹی این ایس) پروجیکٹ کے نفاذ کے لئے 27ویں با اختیارکمیٹی کی میٹنگ ڈائریکٹرجنرل آف پولیس، جموں و کشمیر دلباغ سنگھ کی صدارت میں منعقد ہوئی۔ اس موقع پرکرائم گزٹ 2021 بھی جاری کیا گیا، جو کرائم ہیڈ کوارٹر جے اینڈکے اسپیشل ڈی جی پی کرائم جے اینڈ کے کی نگرانی میں تیارکیا گیا ہے۔

    ڈی جی پی جموں کشمیر نے سی سی ٹی این ایس کی 27ویں بااختیار کمیٹی میٹنگ کی صدارت کی۔ نئی سائٹس، ہارڈ ویئر کے لیے فنڈز کی منظوری، افسران کو خلاء کی نشاندہی کرنے اور نظام ک

    افسران سے خطاب کرتے ہوئے ڈی جی پی نے اس بات پر زور دیا کہ اس منصوبے کو مکمل طور پر نافذ کرنے کے لئے تمام ضروری اقدامات اٹھائے جائیں۔ انہوں نے کرائم ہیڈکوارٹرکے افسران کو ہدایت دی کہ وہ سی سی ٹی این ایس کے تحت آنے والے مختلف تھانوں کے کام کی تصدیق اور جانچ کریں۔

    انہوں نے ہدایت کی کہ تمام سپروائزر ضلعی افسران اپنے تھانوں کے سی سی ٹی این ایس کے کام کاج پر باقاعدگی سے نظر رکھیں اور وہ سی سی ٹی این ایس کے کام کے بارے میں فیڈ بیک مقررہ وقت میں کرائم ہیڈ کوارٹرز کو فراہم کریں تاکہ جو بھی خامیاں نظرآئیں ان کو دورکیا جا سکے۔  انہوں نے ہدایت کی کہ سسٹم کو مکمل طور پر تبدیل کرنے کے لئے تمام اقدامات پر عمل کیا جائے۔

    ڈی جی پی نے اس بات پر زور دیا کہ اس منصوبے کو مکمل طور پر نافذ کرنے کے لئے تمام ضروری اقدامات اٹھائے جائیں۔
    ڈی جی پی نے اس بات پر زور دیا کہ اس منصوبے کو مکمل طور پر نافذ کرنے کے لئے تمام ضروری اقدامات اٹھائے جائیں۔


    ڈی جی پی دلباغ سنگھ نے نئے پولیس اسٹیشنوں کے لئے سائٹ کی تیاریوں اور ہارڈ ویئر کے لئے ضروری فنڈ کی منظوری دی، جسے حکومت نے منظورکیا ہے۔ اس کے ساتھ کے تمام پولیس اسٹیشنوں کا احاطہ ممکن بنایا جا سکے گا۔ "جے کے پی ای کاپ" موبائل ایپ کو مقبول بنانے کے لئے ڈی جی پی نے افسروں پر ذور دیا  کہ وہ عام لوگوں اور خاص طور پر پولیس اہلکاروں کے ذریعہ اس کی ڈاؤن لوڈنگ کی تشہیر کریں اور اسے فروغ دیں۔
    ڈی جی پی نے تمام پولیس اسٹیشنوں کے لئے رول آؤٹ پر خوشی کا اظہار کیا اور سسٹم انٹیگریٹڈ کو ہدایت دی کہ جو بھی مشکلات/مسائل پیدا ہو سکتے ہیں، انہیں جلد ازجلد حل کیا جائے۔ انہوں نے آئی سی جے ایس اور ای کورٹس کے ساتھ سی سی ٹی این ایس کے انضمام پر بھی اپ ڈیٹ طلب کیا۔ انہوں نے استعداد کار میں اضافے پر بھی خوشی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اہلکاروں کے لئے ریفریشرکورسز اور تربیتی کورسیزکا انعقاد ضروری ہے۔ انہوں نے تمام اسٹیک ہولڈرز پر زور دیا کہ وہ خلاء کی نشاندہی کریں اور انہیں پُرکرنے کے لئے کام کریں تاکہ ڈیٹا کے اخراج اور تجزیہ کے لئے نظام کو مضبوط بنایا جا سکے۔ انہوں نے کہا کہ سائنسی اورتکنیکی نگرانی انتہائی اہمیت کی حامل ہے اور اس کو یقینی بنایا جانا چاہئے تاکہ نظام کے منافع کا فائدہ یوٹی کے لوگوں کو حاصل ہو۔

    یہ بھی پڑھیں۔
    Jammu and Kashmir: جموں خطے میں دہشت گردوں کے تین ماڈیولز کا پردہ فاش، سات دہشت گرد گرفتار 
    اسپیشل ڈی جی پی کرائم سی سی ٹی این ایس کے نوڈل آفیسر نے میٹنگ کی کارروائی چلائی۔ انہوں نے ڈی جی پی کو موجودہ صورتحال اور کامیابیوں سے آگاہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ این سی آر بی کی تجویزکردہ تمام لازمی شہری خدمات شہریوں کو سی سی ٹی این ایس سٹیزن پورٹل https://jkpoliceeservices.gov.in کے ذریعہ دستیاب کرائی گئی ہیں اور سی سی ٹی این ایس کا آئی سی جے ایس اور ای کورٹس کے ساتھ دو طرفہ انضمام مکمل ہو چکا ہے۔
    میٹنگ کے دوران میٹنگ کے ایجنڈا پوائنٹس کےحوالے سے بحث ہوئی، جس میں سی سی ٹی این ایس ڈیٹا سینٹرکی کلاؤڈ میں منتقلی، نئی سائٹس سمیت، پرانے/فرسودہ ہارڈویئر کی تبدیلی اور سسٹم انٹیگریٹرکےباہر نکلنے کے بعد سی سی ٹی این ایس پروجیکٹ کو ہینڈل کرنا شامل تھا۔ اس موقع پر ڈی جی پی نے 2021 کا کرائم گزٹ بھی جاری کیا۔ انہوں نے کرائم گزٹ 2021 کی اشاعت میں کرائم برانچ کی ٹیم کی کوششوں کی تعریف کی۔

    جموں وکشمیر کے جرائم کے اعدادوشمارکو مختلف پیرامیٹرز پراجاگرکیا گیا اور گزشتہ سال کے جرائم کے اعداد و شمار سے موازنہ کیا۔ کرائم گزٹ 2021 کے ایڈیشنز میں کچھ نئی خصوصیات شامل کی گئی ہیں جو کہ جموں و کشمیر پولیس کی پروفائل، کیس کے اندراج اور کیس کو نمٹانے میں تھانوں کی زون وار کارکردگی، سزا سنانے کی شرح کے لحاظ سے بہترین کارکردگی اور کم ترین کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والے 5 پولیس اضلاع، خواتین کی کارکردگی، 60 دنوں کے اندر اور اس کے بعد کیسوں کو نمٹانے کا ڈیٹا، ضلع وار دہشت گردی کے واقعات، نئے ذیلی یعنی حادثات کی قسم، زخمیوں کی قسم، گاڑی کی قسم، جائے حادثہ وغیرہ کو بھی شامل کیا گیا ہے۔ بہتر تجزیہ اور منصوبہ بندی کے لئے ٹریفک حادثات سر فہرست ہیں۔
    Published by:Nisar Ahmad
    First published: