ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

محبوبہ مفتی نے کہا- جموں وکشمیر میں چل رہا ہے غنڈہ راج

پیپلز ڈیموکریٹک پارٹی (پی ڈی پی) کا کہنا ہے کہ پارٹی کے دو سینئر لیڈروں کو پیر کے روز ڈی ڈی سی انتخابات کی ووٹ شماری سے ایک روز قبل ہی نظر بند کر دیا گیا۔

  • Share this:
محبوبہ مفتی نے کہا- جموں وکشمیر میں چل رہا ہے غنڈہ راج
محبوبہ مفتی نے کہا- جموں وکشمیر میں چل رہا ہے غنڈہ راج

سری نگر: پیپلز ڈیموکریٹک پارٹی (پی ڈی پی) کا کہنا ہے کہ پارٹی کے دو سینئر لیڈروں کو پیر کے روز ڈی ڈی سی انتخابات کی ووٹ شماری سے ایک روز قبل ہی نظر بند کر دیا گیا۔ پارٹی صدر محبوبہ مفتی نے پارٹی کے دو سینئر لیڈروں کی نظر بندی کو غیر قانونی قرار دیتے ہوئے کہا کہ جموں و کشمیر میں غنڈہ راج چل رہا ہے۔ انہوں نے اپنے ایک ٹویٹ میں رد عمل ظاہر کرتے ہوئے کہا: ’پی ڈی پی کے سرتاج مدنی اور منصور حسین کو غیر قانونی طور پر آج ڈی ڈی سی انتخابات کی ووٹ شماری کے موقع پر نظر بند کردیا گیا، یہاں ہر سینئر پولیس افسران اس سے بے خبر ہیں، کیونکہ یہ ’اوپر سے آرڈر‘ ہے۔ جموں وکشمیر میں قانون کی بالادستی نہیں ہے بلکہ غنڈا راج چل رہا ہے‘۔ بعض میڈیا رپورٹس کے مطابق پی ڈی پی کے مذکورہ دو لیڈروں سے پیر کے روز ایک قومی تحقیقاتی ایجنسی نے جنوبی کشمیر کے ضلع اننت ناگ میں پوچھ گچھ کی۔




ایک روز قبل سابق وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی نے الزام لگایا تھا کہ الیکشن کمیشن آف انڈیا کی طرف سے جنوبی کشمیر کے ضلع شوپیاں کے ایک انتخابی حلقے میں دوبارہ پولنگ کرانے کا فیصلہ بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) حامی جماعتوں کو مدد کرنے کا ایک وسیلہ ہے۔ انہوں نے الیکشن کمیشن کے اس فیصلے پر رد عمل ظاہر کرتے ہوئے اپنے ایک ٹویٹ میں کہا: ’ایسا لگتا ہے کہ الیکشن کمیشن پارٹیوں کو مد نظر رکھتے ہوئے مختلف معیارات اپنا رہا ہے۔ شوپیاں کے بال پورہ انتخابی حلقے میں ووٹنگ کی زیادہ شرح درج ہونے کی بنا پر وہاں دوبارہ پولنگ کرانے کا الیکشن کمیشن کا فیصلہ بی جے پی کی حامی جماعتوں کو مدد کرنے کا ایک طریقہ ہے‘۔ واضح رہے کہ جموں و کشمیر میں پہلی بار منعقد ہونے والے 8 مرحلوں پر محیط ڈی ڈی سی انتخابات کی پولنگ ہفتہ کے روز اختتام پذیر ہوئی اور ووٹ شماری ماہ رواں کی 22 تاریخ یعنی کل ہوگی۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Dec 21, 2020 05:56 PM IST