உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    محبوبہ مفتی نے پاکستانی وزیراعظم شہباز شریف کے مسئلہ کشمیر سے متعلق بیان کا کیا خیر مقدم، دونوں ممالک کے درمیان مذاکرات کی وکالت

    محبوبہ مفتی نے پاکستانی وزیراعظم شہباز شریف کے مسئلہ کشمیر سے متعلق بیان کا کیا خیر مقدم

    محبوبہ مفتی نے پاکستانی وزیراعظم شہباز شریف کے مسئلہ کشمیر سے متعلق بیان کا کیا خیر مقدم

    ی ڈی پی صدر اور سابق وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی نے پاکستانی وزیراعظم شہباز شریف کے اقوام متحدہ جنرل اسمبلی میں دیئے گئے اس بیان کا خیرمقدم کیا ہے، جس میں انہوں نے پھر ایک بارکشمیر کا موضوع اٹھایا۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Jammu and Kashmir, India
    • Share this:
    سری نگر: پیپلز ڈیموکریٹک پارٹی (پی ڈی پی) کی صدر اور سابق وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی نے پاکستانی وزیراعظم شہباز شریف کے اقوام متحدہ جنرل اسمبلی میں دیئے گئے اس بیان کا خیرمقدم کیا ہے، جس میں انہوں نے پھر ایک بارکشمیر کا موضوع اٹھایا۔ بجبہاڑہ اننت ناگ میں دورے کے دوران محبوبہ مفتی نے کہا کہ مسئلہ کشمیر سے متعلق مذاکرات کا عمل ہندو پاک ممالک کے لئے سود مند ثابت ہو سکتا ہے۔ کیونکہ دونوں ممالک اس وقت سیاسی بحران کا شکار ہیں۔

    محبوبہ مفتی نے کہا کہ کشمیر کی موجودہ صورتحال سے نمٹنے کے لئے بھی دونوں ممالک کے مابین بات چیت ضروری ہے۔ اس موقع پر محبوبہ مفتی نے روبیہ سعید کے ہمراہ اپنے والد مفتی محمد سعید کے مقبرے پر بھی حاضری دی اور فاتح خوانی کی۔ انہوں نے کہا کہ جموں وکشمیر کے نوجوان اس وقت تذبذب اور عدم تحفظ کے شکار ہو گئے ہیں اورکشمیر جیسے یہاں کے لوگوں کے لئے ایک جیل سا بن گیا ہے۔

    محبوبہ مفتی نے پاکستانی وزیراعظم شہباز شریف کے اقوام متحدہ جنرل اسمبلی میں دیئے گئے اس بیان کا خیر مقدم کیا ہے۔
    محبوبہ مفتی نے پاکستانی وزیراعظم شہباز شریف کے اقوام متحدہ جنرل اسمبلی میں دیئے گئے اس بیان کا خیر مقدم کیا ہے۔


    محبوبہ مفتی نے کہا کہ دوسری جانب ہندوستان اور پاکستان کے ممالک جس طرح بڑی رقومات فوج اور ہتھیاروں پرصرف کر رہی ہیں، اس کا براہ راست اثر ان دونوں ممالک کی معشیت پر نمایاں ہو رہا ہے کیونکہ یہی روپیہ دونوں ممالک تعمیر و ترقی میں صرف کر سکتے تھے۔ سابق وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی نے کہا کہ ہندوستان کا جی ڈی پی  مسلسل نیچے آرہا ہے اور اس وقت ہندوستان بنگلہ دیش کی برابری بھی نہیں کر سکتا ہے۔ جبکہ ملک میں غربت کی شرح میں بھی کافی اضافہ ہو گیا ہے، ایسے میں پاکستان کے حالات بھی ٹھیک نہیں ہیں اور اس لئے دونوں ممالک کو ایک دوسرے کے ساتھ رشتوں میں بہتری لانی چاہئے جو کہ وقت کی ایک اہم ضرورت ہے۔

    محبوبہ مفتی نے کہا کہ کشمیری نوجوان نہ صرف جموں وکشمیر بلکہ باہر کے جیلوں میں بند ہیں اور قتل و غارت کا سلسلہ بھی جاری ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگر پاکستان کے وزیراعظم شہباز شریف نے ہندوستان کے ساتھ رشتوں کو بہتر بنانے کی حامی بھری ہے تو وہ اس کا خیر مقدم کرتی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ دونوں ملکوں کے مابین بہتر تعلقات نہ صرف جموں کشمیر، ہندوستان یا پھر پاکستان کے لئے خوش آیند ثابت ہوگا بلکہ یہ اقدام پورے براعظم کے لئے مفید ہوگا۔
    Published by:Nisar Ahmad
    First published: