ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

میر واعظ اور حریت کانفرنس کے چیئرمین مولوی محمد عمر فاروق مسلسل نظر بند، متحدہ مجلس علما نے کی رہائی کی اپیل

متحدہ مجلس علماء جموں کشمیر نے کشمیر کے میر واعظ اور حریت کانفرنس کے چیئرمین ڈاکٹر مولوی محمد عمر فاروق کی لگاتار نظر بندی کو بلا جواز اور قرار دیتے ہوئے جلد سے جلد رہا کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ م

  • Share this:
میر واعظ اور حریت کانفرنس کے چیئرمین مولوی محمد عمر فاروق  مسلسل نظر بند، متحدہ مجلس علما نے کی رہائی کی اپیل
متحدہ مجلس علماء جموں کشمیر نے کشمیر کے میر واعظ اور حریت کانفرنس کے چیئرمین ڈاکٹر مولوی محمد عمر فاروق کی لگاتار نظر بندی کو بلا جواز اور قرار دیتے ہوئے جلد سے جلد رہا کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ م

متحدہ مجلس علماء جموں کشمیر نے کشمیر کے میر واعظ اور حریت کانفرنس کے چیئرمین ڈاکٹر مولوی محمد عمر فاروق کی لگاتار نظر بندی کو بلا جواز اور قرار دیتے ہوئے جلد سے جلد رہا کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ میر واعظ منزل سرینگر میں آج ایک پریس کانفرنس کے دوران مجلس علماء کے اراکین نے کہا کہ میر واعظ کی نظر بندی نہ صرف غیر قانونی ہے بلکہ مذہبی معاملات میں مداخلت کے مترادف ہئے۔پریس کانفرنس میں مختلف طبقہ فکر اور مسالک کے علماء و مشائخ نے شرکت کی۔


اس موقع پر ممتاز عالم دین مولوی رحمت اللہ نے بتایا کہ ماہ رمضان کے مدنظر میر واعظ کشمیر کو سماجی ذمہ داریوں کے ساتھ ساتھ دینی خدمات بھی انجام دینی ہیں ۔انھوں نے کہا کہ چار اگست 2019 سے میر واعظ کو نظر بند رکھنا قابل تشویش اور باعث اضطراب ہئے۔ اس موقعہ پر کووڈ قواعد و ضوابط کے بارے میں ایک سوال کے جواب میں مولوی رحمت اللہ نے عوام سے اپیل کی کہ وہ اس وبا سے بچنے کے لئے احتیاط سے کام لیں ۔




انھوں نے جموں کشمیر انتظامیہ پر الزام لگایا کہ وہ ایک طرف دینی و سماجی پروگراموں پر کووڈ گائیڈ لاینز نافذ کرتے ہیں لیکن خود دوسری طرف باغوں اور پارکوں میں بڑے بڑے اجتماع جمع کرکے کووڈ ضوابط کی دھجیاں اڑا رہئے ہیں۔متحدہ مجلس علماء کے اراکین نے رمضان کے دوران مساجد میں کووڈ ضوابط کی پاسداری کی بات کہی۔ پچھلے مہینے جموں کشمیر حکومت نے کہا تھا کہ میر واعظ عمر فاروق آزاد ہیں لیکن بعد میں اُنھیں گھر سے باہر جانے کی اجازت نہیں دی گئی۔
Published by: Sana Naeem
First published: Apr 08, 2021 03:33 PM IST