உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    جموں وکشمیر: امت شاہ نے بارہمولہ ریلی میں کہا- ’کچھ لوگ کہتے ہیں کہ پاکستان سے بات کرو، لیکن میں کہتا ہوں...‘

    مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ نے بارہمولہ میں ریلی کو خطاب کرتے ہوئے دہشت گردی کی وجہ سے پاکستان کی تنقید کی ہے۔ twitter@Amit Shah)

    مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ نے بارہمولہ میں ریلی کو خطاب کرتے ہوئے دہشت گردی کی وجہ سے پاکستان کی تنقید کی ہے۔ twitter@Amit Shah)

    مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ نے بدھ کو جموں وکشمیر کے بارہمولہ میں ریلی کو خطاب کرتے ہوئے پاکستان کو دہشت گردی پر گھیرتے ہوئے اس کے ساتھ کسی بھی طرح کی بات چیت سے انکار کیا۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Baramula, India
    • Share this:
      بارہمولہ: مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ نے بدھ کو جموں وکشمیر کے بارہمولہ میں ریلی کو خطاب کرتے ہوئے پاکستان کو دہشت گردی پر گھیرتے ہوئے اس کے ساتھ کسی بھی طرح کی بات چیت سے انکار کیا۔ اس کے ساتھ ہی انہوں نے کہا کہ نریندر مودی حکومت جموں وکشمیر سے دہشت گردی کا خاتمہ کرے گی اور اسے ملک کا سب سے پُرامن مقام بنائے گی۔

      امت شاہ نے ریلی میں موجود لوگوں کو مخاطب کرتے ہوئے سوال کیا کہ کیا دہشت گردی نے کبھی کسی کو فائدہ پہنچایا ہے اور 1990 کے بعد سے جموں وکشمیر میں دہشت گردی نے 42,000 لوگوں کی جان لی ہے۔ انہوں نے جموں وکشمیر میں مبینہ طور پر ترقی نہیں ہونے کے لئے عبداللہ (نیشنل کانفرنس)، مفتی (پی ڈی پی) اور نہرو-گاندھی (کانگریس) فیملی کو ذمہ دار ٹھہرایا کیونکہ 1947 میں ملک کی آزادی کے بعد سے ان تینوں جماعتوں نے ہی زیادہ تر وقت اس وقت کی ریاستی حکومت میں اقتدار کیا تھا۔

      مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ نے کہا کہ مودی حکومت پاکستان سے بات نہیں کرے گی۔ (فائل فوٹو)
      مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ نے کہا کہ مودی حکومت پاکستان سے بات نہیں کرے گی۔ (فائل فوٹو)


      امت شاہ نے پوچھا- ’ہمیں پاکستان سے بات کیوں کرنی چاہئے‘

      مرکزی ویزر داخلہ نے کہا، ’کچھ لوگ کہتے ہیں کہ ہمیں پاکستان سے بات کرنی چاہئے۔ ہمیں پاکستان سے بات کیوں کرنی چاہئے؟ ہمیں پاکستان سے بات کیوں کرنی چاہئے؟ ہم کوئی بات چیت نہیں کریں گے۔ ہم بارہمولہ کے لوگوں سے بات کریں گے، ہم کشمیر کے لوگوں سے بات کریں گے‘۔ انہوں نے کہا کہ مودی حکومت دہشت گردی کو برداشت نہیں کرتی ہے اور وہ اس کا خاتمہ اور صفایا کرنا چاہتی ہے۔

      امت شاہ نے کہا، ’ہم جموں وکشمیر کو ملک کی سب سے پُرامن جگہ بنانا چاہتے ہیں‘۔ وزیر داخلہ نے کہا کہ کچھ لوگ اکثر پاکستان کے بارے میں بات کرتے ہیں، لیکن وہ جاننا چاہتے ہیں کہ پاکستان مقبوضہ کشمیر (پی او کے) کے کتنے گاوں میں بجلی کنکشن ہیں۔ انہوں نے کہا، ’ہم نے گزشتہ تین سالوں میں یقینی بنایا ہے کہ کشمیر کے سبھی گاوں میں بجلی کنکشن ہے‘َ

      تین سیاسی فیملی کا نام لے کر ان پر برستے ہوئے وزیر داخلہ نے الزام لگایا کہ ان کی مدت کار بدانتظامی اور بدعنوانی سے بھری ہوئی تھی اور انہوں نے ترقی نہیں کی۔ انہوں نے الزام لگایا، ’مفتی اینڈ کمپنی، عبداللہ اور بیٹوں اور کانگریس نے جموں وکشمیر کے لوگوں کی فلاح وبہبود کے لئے کچھ نہیں کیا‘۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: