ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

نگروٹا انکاونٹر : سیکورٹی فورسیز کو سامبا سیکٹر میں ملی سرنگ ، سیکورٹی فورسیز کو ہے یہ بڑا شک

سیکورٹی فورسیز کو تلاشی مہم کے دوران ملی سرنگ تیس چالیس میٹر طویل ہے ۔ آئی جی جاموال نے بتایا کہ ایسا لگتا ہے کہ نگروٹا انکاونٹر میں شامل دہشت گردوں نے اس تیس چالیس میٹر کی سرنگ کا استعمال کیا تھا ۔

  • Share this:
نگروٹا انکاونٹر : سیکورٹی فورسیز کو سامبا سیکٹر میں ملی سرنگ ، سیکورٹی فورسیز کو ہے یہ بڑا شک
نگروٹا انکاونٹر : سیکورٹی فورسیز کو سامبا سیکٹر میں ملی سرنگ ، سیکورٹی فورسیز کو ہے یہ شک ۔ تصویر : ANI/Twitter

نگروٹا انکاونٹر کے بعد سیکورٹی فورسیز کے ذریعہ سرنگوں کا پتہ لگانے کیلئے مسلسل مہم چلائی جارہی ہے ۔ اسی دوران جموں و کشمیر پولیس اور بی ایس ایف کے جوانوں نے تلاشی مہم کے دوران بین الاقوامی سرحد پر سامبا سیکٹر میں ایک سرنگ کا پتہ لگایا ہے ۔ جموں بی ایس ایف کے آئی جی این ایس جاموال نے نگروٹا انکاونٹر میں شامل دہشت گردوں کے اسی سرنگ کے استعمال کا شک ظاہر کیا ہے ۔ خاص بات ہے کہ 19 نومبر کو ہوئے اس انکاونٹر میں سیکورٹی فورسیز نے چار دہشت گردوں کو مار گرایا تھا ۔


سیکورٹی فورسیز کو تلاشی مہم کے دوران ملی سرنگ تیس چالیس میٹر طویل ہے ۔ آئی جی جاموال نے بتایا کہ ایسا لگتا ہے کہ نگروٹا انکاونٹر میں شامل دہشت گردوں نے اس تیس چالیس میٹر کی سرنگ کا استعمال کیا تھا ۔ انہوں نے بتایا کہ یہ سرنگ ابھی نئی ہے ۔ آئی جی کا کہنا ہے کہ ہمارا ماننا ہے کہ ان کے پاس ایک گائیڈ تھا ، جو انہیں ہائی وے تک لے کر گیا تھا ۔


یہ چاروں دہشت گرد ایک ٹرک میں چھپ کر کشمیر آنے کی کوشش میں تھے ، جس کو جموں ۔ سری نگر قومی شاہراہ پر ایک ٹول پلازہ پر روکا گیا اور سیکورٹی فورسیز کے ساتھ انکاونٹر میں چاروں مارے گئے ۔ مارے گئے دہشت گردوں کے پاس سے ہتھیار اور گولہ بارود کا بڑا ذخیرہ پکڑا گیا ، جس میں گیارہ اے کے رائفل ، تین پستول ، 29 گرینیڈ اور چھ یو بی جی ایل گرینیڈ تھے ۔


پولیس کے مطابق یہ دہشت گرد 28 نومبر سے آٹھ مرحلوں میں ہونے والے ڈی ڈی سی الیکشن میں خلل ڈالنے کی بڑی سازش کو انجام دینے آئے تھے ۔ افسران نے کہا کہ مارے گئے دہشت گردوں کے پاس سے ضبط اشیا کی بنیاد پر شک ہے کہ وہ سامبا ضلع میں کسی زیر زمین سرنگ کے راستے پاکستان سے اس جانب داخل ہوگئے تھے ۔

انہوں نے کہا کہ سیکورٹی فورسیز سرنگ کا پتہ لگانے کی مہم چلا رہی ہے ۔  افسران نے بتایا کہ مہم جاری ہے ، جس میں فوج اور پولیس بھی شامل ہیں ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Nov 22, 2020 09:47 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading