உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    جموں و کشمیر : کولگام ضلع میں ڈرگس کا استعمال کرنے والے متاثرہ نوجوانوں کی تعداد میں اضافہ

    جموں و کشمیر : کولگام ضلع میں ڈرگس کا استمعال کرنے والے متاثرہ نوجوانوں کی تعداد میں اضافہ

    جموں و کشمیر : کولگام ضلع میں ڈرگس کا استمعال کرنے والے متاثرہ نوجوانوں کی تعداد میں اضافہ

    Jammu and Kashmir : جموں و کشمیر میں نشہ آور چیزوں کے بے تحاشہ استمعال سے کافی نوجوان متاثر ہورہے ہیں ۔ ضلع کولگام ATF کے مطابق سرفہرست ہے جبکہ ڈرگ ڈی ایڈکشن سینٹروں میں علاج جاری ہے ۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Jammu and Kashmir | Kulgam | Jammu | Srinagar
    • Share this:
    کولگام :  جموں و کشمیر میں نشہ آور چیزوں کے بے تحاشہ استمعال سے کافی نوجوان متاثر ہورہے ہیں ۔ ضلع کولگام ATF کے مطابق سرفہرست ہے جبکہ ڈرگ ڈی ایڈکشن سینٹروں میں علاج جاری ہے ۔ ڈرگس کے استمعال اور اس کی لت نے کئی نوجوانوں کو اپنی لپیٹ میں لیا ہے ۔ ضلع اسپتال کولگام میں قایم Addiction treatment facility center  میں روزانہ درجنوں نوجوان لڑکے لڑکیاں اپنا رجسٹریشن کرارہے ہیں۔ ATF کے اعداد و شمار کے مطابق ریاست گوا کے بعد ضلع کولگام رجسٹریشن کے معاملے میں دوسرے نمبر پر ہے جو کہ ایک سنگین نوعیت اختیار کررہا ہے ۔

     

    یہ بھی پڑھئے: مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ تین روزہ دورے پر آج پہنچیں گے جموں، لااینڈ آرڈر کا لیں گے جائزہ


    متاثرہ۔ نوجوانوں کے مطابق انہیں نشے کی لت میں دھکیلا جارہا ہے اور وہ اس کے عادی ہورہے ہیں ۔ تاہم ATF جیسے سینٹروں کی مدد سے وہ ٹھیک ہورہے ہیں۔ متاثرہ نوجوان کے مطابق انہیں کئی طرح کی نشہ آور چیزیں پہلے مفت میں فراہم کی جاتی ہیں ۔ جبکہ عادی ہونے کے بعد ان سے منہ مانگی رقم وصول کرکے انہیں اس لعنت میں دھکیلا جاتا ہے ۔ ہیروئن ، براون شوگر ، شراب ، چرس اور فکی کا زیادہ تر استمعال ہوتا ہے۔

     

    یہ بھی پڑھئے: سریکلچر سے وابستہ کسانوں کی حالت بہتر بنانے کیلئے سرکار مختلف اقدامات کر رہی ہے: منوج سنہا


    ادھر ATF میں تعینات ڈاکٹر امن کوچھے کے مطابق ضلع کولگام کے ساتھ ساتھ پیر پنچال اور چناب ویلی سے بھی متاثرہ نوجوانوں کی تعداد میں اضافہ دیکھنے کو مل رہا ہے، جو کہ کافی تشویشناک ہے ۔ ماہرین کے مطابق نوجوانوں پر نظر رکھنے ، پوچھ تاچھ اور کونسلنگ کی ضرورت ہے۔

    ضلع اسپتال کولگام کی میڈیکل اسپرانڈنٹ ڈاکٹر افسانہ کا کہنا ہے کہ اسپتال میں تمام تر سہولیات فراہم کرائی جارہی ہیں ۔ تاکہ متاثرہ نوجوانوں کا مناسب علاج کیا جاسکے۔
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: