உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    عمر عبداللہ کا بیان: The Kashmir Files میں دکھائے گئے ہیں طرح طرح کے جھوٹ،  ہدایتکار یہ بتائیں کہ یہ ایک کمرشیل فلم ہے یا ڈوکیومینٹری؟

    ریاست کے مسلمان اور سکھ بھی تشدد کے شکار بنے تاہم انہیں فلم میں نہیں دکھایا گیا ہے،  کشمیری پنڈتوں کے ساتھ ہوے سانحہ کی مزمت کرتے ہیں ، وہ ایک افسوس ناک واقعہ ہے۔ عمر کا بیان

    ریاست کے مسلمان اور سکھ بھی تشدد کے شکار بنے تاہم انہیں فلم میں نہیں دکھایا گیا ہے،  کشمیری پنڈتوں کے ساتھ ہوے سانحہ کی مزمت کرتے ہیں ، وہ ایک افسوس ناک واقعہ ہے۔ عمر کا بیان

    ریاست کے مسلمان اور سکھ بھی تشدد کے شکار بنے تاہم انہیں فلم میں نہیں دکھایا گیا ہے،  کشمیری پنڈتوں کے ساتھ ہوے سانحہ کی مزمت کرتے ہیں ، وہ ایک افسوس ناک واقعہ ہے۔ عمر کا بیان

    • Share this:
    کولگام: نیشنل کانفرنس کے نائب صدر عمر عبداللہ نے کہا ہے کہ کشمیر فائلز The Kashmir Files  نامی فلم طرح طرح کے جھوٹ پر مبنی ہے جبکہ وہ ی فلم کم اور ڈاکیومینٹری زیادہ لگ رہی ہے اور ڈاکٹر فاروق عبداللہ کو جان بوجھ کر نشانہ بنانے کی کوشش کی گئ ہے۔ انہوں نے کہا کہ اُس وقت مرکز میں وی پی سنگھ کی قیادت والی حکومت تھی جس کی حمایت بی جے پی کر رہی تھی، انہوں نے کہا کہ کشمیری پنڈتوں کے ساتھ جو سانحہ پیش آیا وہ قابل مذمت ہے اور اس کا سبھی کو بے حد افسوس ہے تاہم اس وقت یہاں کے مسلمان،  سکھ بھی تشدد کا شکار بنے جس کو فلم میں نہیں دکھایا گیا ہے ۔

    عمر عبداللہ نے آج دمحال ہانجی پورہ کولگام میں پارٹی کے مرحوم لیڈر ولی محمد ایتو کی برسی کے موقعہ پر ورکروں سے خطاب کیا ، سینر لیڈر سکینہ ایتو کے والد کو خراج عقیدت پیش کرنے کی غرض سے سینر لیڈران علی محمد ساگر،  ناصر اسلم وانی ، الطاف کلو،  عبدالمجید لارمی، تنویر صادق ، عمران نبی ڈار ، ڈاکر بشیر ویری کے علاوہ دیگر موجود رہے۔ عمر عبداللہ نے بی جے پی لیڈر شپ کے جموں دورے کے حوالے سے کہا کہ لیڈران کو عوام سے جانکاری حاصل کرنی چاہیے تاکہ حقیقت سے آگاہ ہو انہوں نے بتایا کہ پارٹی دورے پر نگاہ رکھے ہوئے ہے۔

    عمر عبداللہ نے بتیا کہ انتخابات کے حوالے سے انکی پارٹی پہلے سے ہی کام۔کر رہی ہے اور پارٹی کو مضبوط بنانے پر زور دیا جا رہا ہے ، عمر نے کہا کہ حد بندی کے حوالے پیش کردہ رپورٹ کا مفصل جایزہ نہیں لیا گیا ہے اور بیشتر حلقوں کی حد بندی آنکھ بند کر کے کی گئ ہے جس کی وجہ سے کئ حلقوں کو نمائندگی نہیں مل سکتی۔
    Published by:Sana Naeem
    First published: