உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Jammu and Kashmir: کشمیر میں آپریشن آل آوٹ: فوج نے اس سال ہلاک کئے 134 دہشت گرد، 135 گرفتار، کئی نوجوانوں نے ڈالے ہتھیار

    Jammu-kashmir: جموں وکشمیر میں دہشت گردوں کے خلاف چلائے جا رہے آپریشن آل آوٹ میں سیکورٹی اہلکاروں نے اس سال 134 دہشت گردوں کو مار گرایا اور 135 دہشت گرد اور ان کے حامیوں کو گرفتار کیا ہے۔ وادی میں کئی ٹاپ دہشت گرد کمانڈرس کو ہلاک کیا گیا ہے، جس میں 5 خونخوار دہشت گرد بھی شامل ہیں۔ وہیں دہشت گردوں کے معاونین کا ایک بڑا نیٹ ورک تباہ کیا گیا ہے۔

    Jammu-kashmir: جموں وکشمیر میں دہشت گردوں کے خلاف چلائے جا رہے آپریشن آل آوٹ میں سیکورٹی اہلکاروں نے اس سال 134 دہشت گردوں کو مار گرایا اور 135 دہشت گرد اور ان کے حامیوں کو گرفتار کیا ہے۔ وادی میں کئی ٹاپ دہشت گرد کمانڈرس کو ہلاک کیا گیا ہے، جس میں 5 خونخوار دہشت گرد بھی شامل ہیں۔ وہیں دہشت گردوں کے معاونین کا ایک بڑا نیٹ ورک تباہ کیا گیا ہے۔

    Jammu-kashmir: جموں وکشمیر میں دہشت گردوں کے خلاف چلائے جا رہے آپریشن آل آوٹ میں سیکورٹی اہلکاروں نے اس سال 134 دہشت گردوں کو مار گرایا اور 135 دہشت گرد اور ان کے حامیوں کو گرفتار کیا ہے۔ وادی میں کئی ٹاپ دہشت گرد کمانڈرس کو ہلاک کیا گیا ہے، جس میں 5 خونخوار دہشت گرد بھی شامل ہیں۔ وہیں دہشت گردوں کے معاونین کا ایک بڑا نیٹ ورک تباہ کیا گیا ہے۔

    • Share this:
      سری نگر: جموں وکشمیر میں سیکورٹی اہلکاروں کو اس سال ابھی تک دہشت گردوں کے خلاف چلائے گئے آپریشن آل آوٹ میں بڑی کامیابی ہاتھ لگی ہے۔ وادی میں کئی ٹاپ دہشت گرد کمانڈرس کو ہلاک کیا گیا ہے، جس میں 5 خونخوار دہشت گرد بھی شامل ہیں۔ وہیں دہشت گردوں کے مددگاروں کا ایک بڑا نیٹ ورک بھی تباہ کیا گیا ہے۔

      جموں وکشمیر پولیس کے جنرل ڈائریکٹر دلباغ سنگھ نے نیوز 18 کو بتایا ہے کہ سرحد پار سے جموں وکشمیر میں مداخلت کرنے والے اور خون خرابہ کرنے کے لئے نئی نئی سازشیں کی جارہی ہیں۔ سرحد پار سے دراندازی کی کوششیں ہوئیں، لیکن ہم نے انہیں ناکام کیا ہے۔ کشمیر میں ٹارگیٹ کلنگ میں شامل کئی دہشت گردوں کو ہم نے مار گرایا ہے۔

      ڈی جی پی دلباغ سنگھ نے بتایا کہ سرحد پار سے جموں وکشمیر میں مداخلت کرنے والے اور خون خرابہ کرنے کے لئے نئی نئی سازشیں کی جارہی ہیں۔
      ڈی جی پی دلباغ سنگھ نے بتایا کہ سرحد پار سے جموں وکشمیر میں مداخلت کرنے والے اور خون خرابہ کرنے کے لئے نئی نئی سازشیں کی جارہی ہیں۔


      ذرائع کے حوالے سے ملی جانکاری کے مطابق، اس سال اب تک نہ صرف جموں وکشمیر میں دہشت گردانہ تنظیموں میں شامل ہونے والے نوجوانوں کی تعداد میں گراوٹ آئی ہے بلکہ گزشتہ سالوں کے مقابلے اس سال سیکورٹی اہلکاروں نے ریکارڈ تعداد میں دہشت گردوں کا خاتمہ بھی کیا ہے۔

      ذرائع سے ملی اطلاع کے مطابق، پاکستان مقبوضہ کشمیر میں دہشت گردوں کے لانچنگ پیڈ میں تقریباً 250-200 دہشت گرد ہیں اور دراندازی کرنے کی کوشش میں مصروف ہیں۔ حالانکہ اس سال مارچ 2020 کے بعد ایل او سی پر کوئی بھی سیز فائر کی خلاف ورزی کا معاملہ نہیں دیکھا گیا ہے جبکہ جنوری 2021 میں 336 اور فروری میں 256 بار سیز فائر توڑا گیا تھا۔

      یہ بھی پڑھیں۔

      جموں وکشمیر: ’یٰسین ملک نے کیا تھا میرا اغوا‘: عدالت میں مفتی محمد سعید کی بیٹی روبیہ سعید نے کی شناخت 

      وہیں کشمیر میں دہشت گردوں نے اس سال کئی ٹارگیٹ کلنگ کی ہے، جس میں پولیس سویلین اور سیاسی جماعتوں سے وابستہ افراد کو نشانہ بنایا۔ وادی میں دہشت گرد تنظیموں میں شامل ہونے والے نوجوانوں کی تعداد میں گراوٹ آئی ہے۔

      برف باری بڑھنے سے پہلے دہشت گرد مسلسل دراندازی کی کوشش کر رہے تھے، لیکن ہندوستانی فوج پاکستان کی ہر ایک ناپاک سازش کو لائن آف کنٹرول پر ناکام کیا۔ اس سال ایل او سی پر دراندازی کی 5 کوششیں کی گئیں، جسے ناکام کرتے ہوئے تقریباً 6 دہشت گردوں کو بھی مارا گیا۔ یہ سبھی دہشت گرد لشکر طیبہ اور جیش محمد سے وابستہ بتائے گئے تھے، جنہیں پاکستان کی فوج کی مدد سے پاکستانی خفیہ ایجنسی دراندازی کروانے کی کوشش میں تھی۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: