உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    J&K News: کشمیر میں پرسکون ماحول دیکھ کر بے چین ہوگیا ہے پاکستان: رویندر رینا

    J&K News: کشمیر میں پرسکون ماحول دیکھ کر بے چین ہوگیا ہے پاکستان: رویندر رینا

    J&K News: کشمیر میں پرسکون ماحول دیکھ کر بے چین ہوگیا ہے پاکستان: رویندر رینا

    Jammu and Kashmir : جموں کشمیر کے بی جے پی چیف رویندر رینا نے کہا کہ "ہمیں پاکستان کے مذموم عزائم کو ناکام بنانے کے لیے ایک ساتھ کھڑا ہونا ہوگا، پاکستان نے اپنے بھیجے ہوئے دہشت گردوں کو ہدایت دے رکھی ہے کہ وہ کشمیر کی زمین کو لہولہان کرے۔ پاکستان کا مقصد ہے کہ وہ کشمیر میں کشمیری پنڈتوں کو پھر سے ہجرت کرنے پر مجبور کر دیں۔ لیکن ہم اس کا جواب دے رہے ہیں۔ “

    • Share this:
    جموں : ایک طرف جہاں مہاجر کشمیری پنڈت اور ڈوگرہ ملازمین حکومت سے ٹارگٹ کلنگ کے پیش نظر انہیں وادی سے باہر منتقل کرنے کا مطالبہ کر رہے ہیں تو وہیں دوسری طرف بی جے پی نے ان سے حوصلہ رکھنے کی اپیل کی ہے اور کہا کہ حکومت "پاکستانی سازش" کو شکست دینے کے لیے پرعزم ہے۔ جموں و کشمیر کو ملک کا تاج کہتے ہوئے جموں کشمیر کے بی جے پی چیف رویندر رینا نے کہا کہ "ہمیں پاکستان کے مذموم عزائم کو ناکام بنانے کے لیے ایک ساتھ کھڑا ہونا ہوگا، پاکستان نے اپنے بھیجے ہوئے دہشت گردوں کو ہدایت دے رکھی ہے کہ وہ کشمیر کی زمین کو لہولہان کرے۔ پاکستان کا مقصد ہے کہ وہ کشمیر میں کشمیری پنڈتوں کو پھر سے ہجرت کرنے پر مجبور کر دیں۔ لیکن ہم اس کا جواب دے رہے ہیں۔ “

     

    یہ بھی پڑھئے : کشمیر میں لگاتار ٹارگٹ کلنگ سے کشمیری پنڈتوں کی گھر واپسی کا خواب پھر چکنا چور


    رینا نے کہا کہ "ہم گزشتہ 32 سالوں سے پاکستان سے بھیجے ہوئے دہشت گردوں کو اور پاکستان کو منہ توڑ جواب دے رہے ہیں۔ ہماری فوج، پولیس اور نیم فوجی دستوں نے ہمسایہ ملک کے ناپاک عزائم کو ناکام بنانے کے لیے لگاتار ہزاروں دہشت گردوں کو ختم کر کے مناسب جواب دیا ہے"۔ رینا پارٹی ہیڈکوارٹر میں کشمیری پنڈتوں کے ایک اجتماع سے خطاب کر رہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ جب 1990 کی دہائی کے اوائل میں وادی میں دہشت گردی شروع ہوئی تو پاکستان کا منصوبہ "قوم پرست قوتوں" کو باہر نکالنا تھا اور اس لیے اس نے بی جے پی میں کشمیری پنڈتوں اور قوم پرست مسلمانوں کو نشانہ بنایا۔ ۔

    انہون نے مزید کہا کہ ہمارے لوگوں نے بہادری سے مقابلہ کیا… وزیر اعظم نریندر مودی کی قیادت والی حکومت نے فوج، پولیس اور نیم فوجی دستوں کو کھلی چھوٹ دے دی ہے اور وادی میں سیکورٹی کی صورتحال تسلی بخش طور پر بہتر ہوئی ہے، جو اس حقیقت سے ظاہر ہے کہ اب وادی میں کوئی بھی حریت کا بھیجا ہوا پتھر باز نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ جیسے ہی پاکستان نے وادی میں امن کی بحالی کو دیکھا، اس نے دہشت گرد گروپوں کے ساتھ مل کر کشمیر میں دوبارہ خون بہانے کی سازش کی اور خوف پیدا کرنے اور  نقل مکانی پر مجبور کرنے کے لیے ٹارگٹ کلنگ کی حکمت عملی تیار کی۔

     

    یہ بھی پڑھئے :  اودھمپور دھماکہ کیس حل، سرغنہ اور اس کے دو دیگر ساتھیوں کو پولیس نے کیا گرفتار


    انہوں نے کہا کہ "ہم تمام قوم پرستوں بشمول پنڈتوں، ڈوگروں اور ملک کے مختلف حصوں سے آنے والوں سے اپیل کرتے ہیں کہ وہ وہیں رہیں کیونکہ ہم سب نے دشمنوں کی سازشوں کو ناکام بنانے کے لیے کندھے سے کندھا ملا کر سامنا کرنا ہے۔"

    ادھر بڑھتی ہوئی ٹارگٹ کلنگ کے تناظر میں، حکومت نے کئی سو کشمیری پنڈتوں کے تبادلے کے احکامات جاری کیے اور فہرست کو مختلف سرکاری ویب سائٹس پر اپ لوڈ کیا۔  یہ احکامات سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئے جس سے لوگوں میں شدید ناراضگی پیدا ہوگئی اور کچھ سیاسی رہنماؤں نے حکومت کے طرز عمل پر سخت اعتراض کیا۔ سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والے ویب سائٹ پر آرڈرز ڈالنے کو سنجیدگی سے لیتے ہوئے کشمیری پنڈت کارکنوں اور بی جے پی سمیت کچھ سیاسی جماعتوں کے رہنماؤں نے اس کے خلاف سخت احتجاج کیا۔
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: