ہوم » نیوز » جموں وکشمیر

مسئلہ کشمیر پر پاکستانی وزیر اعظم عمران خان نے کہا- ہندوستان ایک قدم آگے بڑھائے، ہم دو قدم بڑھائیں گے

پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان (Imran Khan) نے ہندوستان سے مسئلہ کشمیر کے حل کے لئے ماحول بنانے کو کہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگر ہندوستان کشمیر موضوع (Kashmir Issue) کا انصاف پر مبنی حل کے لئے سنجیدگی دکھائے تو ہم امن کے لئے دو قدم آگے بڑھنے کو تیار ہیں۔

  • Share this:
مسئلہ کشمیر پر پاکستانی وزیر اعظم عمران خان نے کہا- ہندوستان ایک قدم آگے بڑھائے، ہم دو قدم بڑھائیں گے
مسئلہ کشمیر پر پاکستانی وزیر اعظم عمران خان نے کہا- ہندوستان ایک قدم آگے بڑھائے، ہم دو قدم بڑھائیں گے۔ فائل فوٹو

اسلام آباد: پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان (Imran Khan) نے جمعہ کو کشمیر یوم یکجہتی (Kashmir solidarity day) مناتے ہوئے الزام لگایا کہ ہندوستان (India) کشمیریوں پر ظلم کر رہا ہے۔ عمران خان نے ٹوئٹ کرکے کہا کہ پاکستان برصغیر میں ہمیشہ سے ہی امن کے لئے کھڑا رہا ہے، لیکن اس کے لئے ماحول بنانے کی ذمہ داری ہندوستان کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگر ہندوستان اقوام متحدہ کی تجاویز کے مطابق, کشمیر موضوع کے انصاف پر مبنی حل کے لئے سنجیدگی دکھائے تو ہم امن کے لئے دو قدم آگے بڑھنے کو تیار ہیں۔




عمران خان نے کہا کہ کشمیر کے استحکام کے لئے پاکستان کی امن کی خواہش کو کمزوری نہیں سمجھا جانا چاہئے۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ یہ ایک ملک کے طور پر ہماری طاقت اور خود اعتمادی ہے، جو ہم دو قدم آگے بڑھنے کو تیار ہیں تاکہ کشمیری لوگوں کے قانونی عزائم کو پورا کیا جاسکے۔ اس سے پہلے پاکستانی وزارت خارجہ کے ترجمان نے بھی کہا تھا کہ رشتوں کو سازگار بنانے اور معنی خیز بات چیت کے لئے ماحول بنانے کی ذمہ داری ہندوستان کی ہے۔

 







جنرل باجوا نے بھی کی تھی امن کی بات

پاکستانی وزیر اعظم عمران خان کا یہ بیان پاکستانی فوج کے سربراہ باجوا کے بیان کے بعد آیا ہے۔ پاکستان کے فوجی سربراہ جنرل باجوا نے منگل کو کہا تھا کہ پاکستان اور ہندوستان کو کشمیر موضوع کو باوقار اور پُر امن طریقے سے حل کرنا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان اور ہندوستان کو جموں وکشمیر کے موضوع کو جموں وکشمیر کے لوگوں کی امیدوں کے مطابق، باوقار اور پُرامن طریقے سے حل کرنا چاہئے۔

امن کے لئے ہاتھ بڑھانے کا وقت

پاکستانی فوج کے سربراہ جنرل باجوا نے کہا کہ پاکستان ایک پُرامن ملک ہے، جس نے علاقائی اور عالمی امن وامان بنانے کے لئے بہت بڑی قربانیاں دی ہیں۔ انہوں نے کہا، ’ہم مکمل احترام اور پُرامن بقائے باہمی کے راستے پر چلنے کو لے کر پابند عہد ہیں۔ اب تمام جانب امن کا ہاتھ بڑھانے کا وقت ہے’۔ ساتھ ہی انہوں نے یہ بھی کہا کہ امن کی خواہش کو کوئی کمزوری نہ سمجھے۔ پاکستان کی فوج کسی بھی خطرے کو ختم کرنے کی صلاحیت رکھتی ہے اور تیار ہے۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Feb 06, 2021 02:58 AM IST