உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    J&K News: پاکستان ہمارے نوجوانوں کو منصوبہ بند سازش کے تحت منشیات کی طرف دھکیل رہا: منوج سنہا

    J&K News: پاکستان ہمارے نوجوانوں کو منصوبہ بند سازش کے تحت منشیات کی طرف دھکیل رہا: منوج سنہا

    J&K News: پاکستان ہمارے نوجوانوں کو منصوبہ بند سازش کے تحت منشیات کی طرف دھکیل رہا: منوج سنہا

    Jammu and Kashmir : منوج سنہا نے کہا کہ پڑوسی ملک ایک منصوبہ بندی کے تحت جموں و کشمیر میں منشیات اسمگل کرنے کی ہر ممکن کوشش کر رہا ہے۔ تاہم انہوں نے کہا کہ سیکیورٹی ایجنسیاں پاکستان کے ناپاک عزائم کو ناکام بنانے میں کامیاب رہی ہیں اور حالیہ عرصے میں سیکورٹی فورسز نے بڑی مقدار میں منشیات پکڑی ہیں۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Jammu and Kashmir | Jammu | Srinagar
    • Share this:
    جموں : جموں و کشمیر میں منشیات کی بڑھتی ہوئی لت کو روکنے کی کوشش میں آج جموں میں ایک مہم "نشا مکت جے اینڈ کے" شروع کی گئی۔ اس مہم کا آغاز جموں وکشمیر کے ایل جی منوج سنہا نے کیا۔ خطاب کرتے ہوئے منوج سنہا نے کہا کہ یوٹی  انتظامیہ جموں و کشمیر کو منشیات سے پاک بنانے کے لیے پرعزم ہے۔ منوج سنہا نے کہا کہ پڑوسی ملک ایک منصوبہ بندی کے تحت جموں و کشمیر میں منشیات اسمگل کرنے کی ہر ممکن کوشش کر رہا ہے۔ تاہم انہوں نے کہا کہ سیکیورٹی ایجنسیاں پاکستان کے ناپاک عزائم کو ناکام بنانے میں کامیاب رہی ہیں اور حالیہ عرصے میں سیکورٹی فورسز نے بڑی مقدار میں منشیات پکڑی ہیں۔

    انہوں نے کہا کہ 2019 سے منشیات کی اسمگلنگ کے خلاف کارروائی میں تیزی آئی ہے ۔ ایل جی نے کہا کہ پڑوسی ممالک کے لوگ جان بوجھ کر ہمارے نوجوانوں کے خلاف ایک سوچی سمجھی سازش کے تحت جموں و کشمیر میں منشیات کی اسمگلنگ کرتے ہیں۔ یہ ہمارے لیے ایک سنگین تشویش ہے۔ حالانکہ یہ حقیقت ہے کہ سب کو معلوم تھا کہ بین الاقوامی سرحد اور ایل او سی کے قریب علاقہ ہونے کی وجہ سے پڑوسی ملک ہماری سرزمین میں منشیات اسمگل کرنے کی کوشش کر رہا ہے۔ تاہم اس ماضی میں اسے روکنے کے لئے کوئی خاص قدم نہیں اٹھایا گیا ، مگر 2019 کے بعد اس لعنت کو روکنے کے لیے مؤثر اقدامات کئے گئے ، جن سے اچھے نتائج برآمد ہوئے ہیں ۔

     

    یہ بھی پڑھئے: غلام نبی آزاد'پھوٹ ڈالو اور حکومت کرو'پالیسی کو ہمیشہ اپناتے آئے ہیں: جی اے میر


    منوج سنہا نے کہا کہ سیکورٹی ایجنسیوں کے علاوہ پنچایتی راج اداروں کے نمائندے اور سول سوسائٹی کو حکومت کے ساتھ تعاون کرنے کی ضرورت ہے۔ اس سماجی برائی پر قابو پانے کے لیےانہوں نے کہا کہ محلہ اور پنچایت کی سطح پر مقامی کمیٹیاں بنانے کی ضرورت ہے، جو "نشہ مکت جموں و کشمیر" بنانے میں مدد کریں گی۔ آپ محلہ اور پنچایت سطح پر کمیٹیاں تشکیل دیں اور اپنے اپنے علاقوں کو منشیات سے پاک بنانے کے لیے کام کریں۔ منشیات سے پاک ہونے والے محلوں اور پنچایت کی ترقی کے لیے اضافی مراعات کی منظوری دی جائے گی۔ جو لوگ ان مہمات کی قیادت کریں گے انہیں یوم آزادی اور یوم جمہوریہ کی تقریبات کے موقع پر اعزاز سے نوازا جائے گا۔

     

    یہ بھی پڑھئے: کشمیر میں کمل ڈنڈی کی ریکارڈ پیداوار سے کسان خوش، سیاحوں کے کھلے چہرے


    منوج سنہا نے کہا کہ حکومت منشیات فروشوں کے خلاف سخت کارروائی کرنے کی پابند ہے اور اب تک کافی تعداد میں منشیات فروشوں کو گرفتار کیا گیا ہے۔ تاہم انہوں نے کہا کہ انتظامیہ ان تمام افراد کی مدد کرے گی جو نشہ چھوڑنا چاہتے ہیں اور معمول کی زندگی گزارنا چاہتے ہیں۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے چیف سکریٹری ڈاکٹر اے کے مہتا نے سماج سے منشیات کی لعنت کو ختم کرنے کے لیے تمام سرکاری محکموں کی شمولیت کی ضرورت پر زور دیا۔ انہوں نے کہا کہ حکومت ہر ضلع میں ایک ماہ کے اندر منشیات کے عادی افراد کی مدد کے لیے ایک ڈرگ ڈی ایڈیشن سنٹر قائم کرے گی۔

    اس تقریب میں ماہرین کے علاوہ این سی سی کیڈٹس اور طلبہ کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔ اس موقع پر موجود لوگوں نے اس بات کا عہد کیا کہ وہ کس بھی طرح منشیات کا استعمال نہیں کریں گے اور نہ ہی کرنے دیں گے۔ ایک اعداد و شمار کے مطابق یوٹی میں تقریباً 8 لاکھ لوگ بالواسطہ یا بالواسطہ طور پر اس لعنت سے متاثر ہیں جو کہ حکومت اور معاشرے دونوں کے لیے ایک سنگین تشویش ہے ۔
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: