உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    دہشت گردی کو بڑھاوا دینے کی پاکستان کی کوشش ناکام ، ججر کوٹلی جموں میں سو کروڑ مالیت کی ہیروئن ضبط

    دہشت گردی کو بڑھاوا دینے کی پاکستان کی کوشش ناکام ، جموں میں سو کروڑ مالیت کی ہیروئن ضبط

    دہشت گردی کو بڑھاوا دینے کی پاکستان کی کوشش ناکام ، جموں میں سو کروڑ مالیت کی ہیروئن ضبط

    Jammu and Kashmir News : جموں و کشمیر پولیس کو آج اس وقت ایک بڑی کامیابی ہاتھ لگی جب جموں سرینگر قومی شاہراہ پر مستعد پولیس جوانوں نے ججر کوٹلی کے مقام پر باون کلو گرام ہیروئن ضبط کی ۔ ضبط کی گئی ہیروئن کی قیمت بین الاقوامی بازار میں سو کروڑ روپے بتائی جارہی ہے ۔

    • Share this:
    جموں و کشمیر پولیس کو آج اس وقت ایک بڑی کامیابی ہاتھ لگی جب جموں سرینگر قومی شاہراہ پر مستعد پولیس جوانوں نے ججر کوٹلی کے مقام پر باون کلو گرام ہیروئن ضبط کی ۔ ضبط کی گئی ہیروئن کی قیمت بین الاقوامی بازار میں سو کروڑ روپے بتائی جارہی ہے ۔ تفصیلات کے مطابق ایک خصوصی اطلاع ملنے پر جموں و کشمیر پولیس کی خصوصی ٹیم نے ججر کوٹلی کے مقام پر ناکہ قائم کرکے گاڑیوں کی تلاشی شروع کردی ۔ اس دوران کشمیر سے آرہے ایک ٹرک کی تلاشی کے دوران کچھ پاکیٹ برآمد کئے گئے۔ پولیس کے مطابق کشمیر سے جموں اور پھر پنجاب کی جانب اس ٹریک میں لادے گئے سامان کی تلاشی کے دوران مشتبہ تھیلے دیکھے گئے اور یہ معلوم ہوا کہ اس میں منشیات ہوسکتے ہیں۔

    پولیس کے مطابق ٹرک کا ڈرائیور موقع سے فرار ہونے میں کامیاب ہوا تاہم اس کے ساتھی ڈرائیور بھت ساہی کو گرفتار کیا گیا۔ منشیات کی کھیپ کو ضبط کرنے کی تفصیلات دیتے ہوئے جموں و کشمیر کے ڈائریکٹر جنرل پولیس دلباغ سنگھ نے کہا کہ پاکستان سرحد اور کنٹرول لائن کے پار سے کشمیر اور جموں میں منشیات کی اسمگلنگ کرنے میں مصروف ہے ۔ تاکہ جموں وکشمیر میں دہشت گردی کو ہوا دی جاسکے۔ صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے دلباغ سنگھ نے کہا کہ پاکستان ماضی قریب میں ڈرون کے ذریعے بھی منشیات کو کنٹرول لائن کے اس پار پہنچانے کی ناپاک حرکتوں میں مصروف رہا ہے ۔ تاہم جموں و کشمیر پولیس اور دیگر حفاظتی عملے کی چوکسی سے ماضی میں بھی بھاری مقدار میں منشیات ضبط کی گئی ہیں ۔ جس سے پاکستان کے ناپاک عزائم ناکام ہوئے ہیں ۔

    انہوں نے کہا کہ پاکستان اور اس کی خفیہ ایجنسی آئی ایس آئی جموں وکشمیر میں منشیات اسمگل کرکے یہاں امن و قانون کی صورتحال میں بگاڑ پیدا کرنا چاہتا ہے اور اس کی یہ کوشش ہر حال میں ناکام بنائی جائے گی ۔ ڈائریکٹر جنرل پولیس نے کہا کہ پاکستان جموں وکشمیر میں دہشت گردوں کی پشت پناہی کررہا ہے ۔ تاہم پولیس نے دہشت گردوں کے خلاف کامیاب آپریشن انجام دئے ہیں اور گزشتہ ایک ماہ میں بیس مطلوبہ دہشت گردوں کو ہلاک کردیا گیا ہے اور یہ آپریشن تب تک جاری رہیں گے جب تک جموں وکشمیر میں آہستہ آہستہ دم توڑ رہی ملی ٹینسی ماضی کا حصہ بنے گی۔

    رام باغ سرینگر میں تین ملی ٹینٹوں کے مارے جانے کے بارے میں ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے ڈی جی پی دلباغ سنگھ نے کہا کہ ان تین دہشت گردوں کا سرغنہ مہران تھا۔ انہوں نے کہا کہ اس کے دوسرے ساتھی پلوامہ ضلعے کے باشندے تھے اور یہ تینوں اسپندر کور، دیپک چند، پولیس سب انسپکٹر ارشد اور بربر شاہ سرینگر کے مہران علی کے قتل میں ملوث تھے۔ کسی سیاستدان کا نام لئے بغیر ڈی جی پی دلباغ سنگھ نے کہا کہ کچھ لوگ بد قسمتی سے میڈیا میں عجیب طرح کے بے بنیاد بیان جاری کرکے انہیں معصوم اور بے گناہ ثابت کرنے کی کوشش میں جٹ گئے ہیں میری رائے ہے کہ ایسے لوگ دوغلا پن چھوڑ کر اور کالے چشمے اتار کر حقیقت کو دیکھنے کی کوشش کریں اور قاتلوں کو بے گناہ کہنے کی حماقت نہ کریں ۔

    دلباغ سنگھ نے کہا کہ جموں وکشمیر پولیس عوام کی حفاظت کو یقینی بنانے کی وعدہ بند ہے اور پولیس ہر حال میں لوگوں کی حفاظت کو یقینی بنائے گی ۔
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: