உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ہیرانگر روٹ سے بسنت گڑھ پہنچے اسٹیکی بم، تین سابق دہشت گردوں نے کرائے اودھم پور بم دھماکے

    ہیرانگر روٹ سے بسنت گڑھ پہنچے اسٹیکی بم، تین سابق دہشت گردوں نے کرائے اودھم پور بم دھماکے تصویر : ANI

    ہیرانگر روٹ سے بسنت گڑھ پہنچے اسٹیکی بم، تین سابق دہشت گردوں نے کرائے اودھم پور بم دھماکے تصویر : ANI

    پولیس رام نگر، بسنت گڑھ اور اودھم پور میں 25 سے زیادہ لوگوں کو حراست میں لے کر پوچھ تاچھ کررہی ہے۔ کچھ لوگوں کو بسنت گڑھ، کچھ کو رام نگر اور کچھ کو اودھم پور پولیس اسٹیشن میں رکھا گیا ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Udhampur, India
    • Share this:
      اودھم پور میں ایک کے بعد ایک دو بسوں میں ہوئے دھماکوں کی گتھی کو پولیس نے قریب قریب حل کرلیا ہے۔ پولیس نے ضلع کے بسنت گڑھ علاقے سے تین سابق دہشت گردوں کو حراست میں لیا ہے، جن سے پوچھ تاچھ میں حیرت انگیز انکشاف ہوئے ہیں۔ پولیس ذرائع نے بتایا کہ ڈوڈا میں سرگرم سابق دہشت گرد نے بسنت گڑھ میں ماڈیول تیار کیا، جسے پاکستان سے ہیرانگر کے راستے بسنت گڑھ تک اسٹکی بم پہنچائے گئے۔ طئے سازش کے تحت رام نگر میں ٹائمر سیٹ کر کے اسٹیکی بم بسوں پر رکھے گئے، جن سے بعد میں دھماکے ہوئے۔

      ذرائع نے بتایا کہ ڈوڈا میں سرگرم ایک دہشت گرد نے بسنت گڑھ میں ماڈیول تیار کر کےو اردات کو انجام دیا۔ اس کے لئے بسنت گڑھ سے پکڑے گئے ایک سابق دہشت گرد کے اکاونٹ میں لاکھوں روپے بھی ٹرانسفر کیے گئے۔ پولیس نے دس سے زیادہ لوگوں کو بھی حراست میں لیا ہے جن سے پوچھ تاچھ کی جارہی ہے۔ اودھم پور سے بھی کچھ لوگوں کو حراست میں لیا گیا۔ ذرائع کے مطابق پولیس نے اپنی جانچ میں بسنت گڑھ سے پکڑے تین لوگوں کو اس سازش میں مرکزی طور پرشامل پایا ہے۔ آنے والے دنوں میں پولیس پریس کانفرنس کر کے اس کا پوری طرح سے انکشاف کرسکتی ہے۔ حالانکہ ابھی تک کسی پولیس عہدیدار نے اس کی آفیشل طور پر تصدیق نہیں کی ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      گریز سیکٹر میں سات اے کے47 رائفل سمیت ہتھیاروں کا ذخیرہ برآمد، ایل او سی پرتلاشی مہم جاری

      یہ بھی پڑھیں:
      امت شاہ کے دورہ جموں و کشمیر کی کیا ہے اہمیت، جانئے کہا کہتے ہیں سیاسی ماہرین

      رام نگر، بسنت گڑھ اور اودھم پور سے بھی لوگوں کو لیا گیا حراست میں
      پولیس رام نگر، بسنت گڑھ اور اودھم پور میں 25 سے زیادہ لوگوں کو حراست میں لے کر پوچھ تاچھ کررہی ہے۔ کچھ لوگوں کو بسنت گڑھ، کچھ کو رام نگر اور کچھ کو اودھم پور پولیس اسٹیشن میں رکھا گیا ہے۔ پہلے حراست میں لیے گئے لوگوں سے پوچھ تاچھ کی بنیاد پر ہی ان لوگوں کو بھی حراست میں لیا گیا۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: